پبلک اکاؤنٹس سمیت دیگر قائمنہ کمیٹیوں کا معاملہ ، پنجاب حکومت اور اپوزیشن میں بیک ڈور رابطے

پبلک اکاؤنٹس سمیت دیگر قائمنہ کمیٹیوں کا معاملہ ، پنجاب حکومت اور اپوزیشن ...

لاہور(آئی این پی) پنجاب اسمبلی میں پبلک اکاونٹس کمیٹی اور قائمہ کمیٹیوں کا معاملہ،پنجاب حکومت اور اپوزیشن کے درمیان مذاکرات سے قبل بیک ڈور رابطوں کا انکشاف ۔ذرائع کے مطابق پنجاب اسمبلی کی کارروائی افہام و تفہیم کے ساتھ چلانے پر اتفاق کیلئے اپوزیشن اور حکومت نے کوششیں شروع کردیں ہیں، اپوزیشن نے حکومت کو پیشکش کی ہے کہ 2پبلک اکاؤنٹس کمیٹیوں میں سے ایک حکومت اور ایک اپوزیشن کے پاس ہو، حکومت کی جانب سے پبلک اکاؤنٹس کمیٹی ون کی سربراہی اپوزیشن لیڈر کو دی جائے جبکہ پبلک اکاؤنٹس کمیٹی 2کی سربراہی حکومت اپنے پاس رکھے۔ ذرائع کے مطابق اپوزیشن نے حکومت سے قائمہ کمیٹیوں کی تقسیم کا فارمولا بھی واضح کرنے کو کہا ہے کہ 36 قائمہ کمیٹیوں میں سے کس کس کی سربراہی اپوزیشن کو دی جائے گی پنجاب اسمبلی کی کل 36 قائمہ کمیٹیوں میں سے 19 حکومت کو جبکہ 17اپوزیشن کو ملیں گی۔

بیک ڈور رابطے

لاہور(مانیٹرنگ دیسک) وزیر اعظم کے مشیر عبدالرزاق داؤد کی کمپنی کو مہمند ڈیم کا ٹھیکہ دینے کیخلاف مسلم لیگ(ن) نے پنجاب اسمبلی میں قرارداد جمع کرا دی۔قرارداد مسلم لیگ ن کی رکن اسمبلی حنا پرویز بٹ نے جمع کرائی ہے، جس کے متن میں کہا گیا کہ مہمند ڈیم کی تعمیر کا ٹھیکہ وزیر اعظم کے مشیر عبدالرزاق داؤد کی کمپنی کو دے کر میرٹ کی دھجیاں اڑادی ہیں۔ حکومتی مشیر کو ڈیم کی تعمیر کیلئے 309 ارب روپے کا ٹھیکہ ملنا تشویش ناک ہے۔متن میں کہا گیا کہ مخصوص کمپنی کو ٹھیکہ نوازنے کیلئے دوسری کمپنیوں کی پیشکش کو مسترد کیا گیا۔ کیا دوسری کمپنیوں کی ڈس کوالیفکیشن کے بعد دوبارہ بولی ضروری نہیں تھی ؟۔ صرف ایک بولی کے بعد ہی مخصوص کمپنی کو ٹھیکہ دینا قوانین کی کھلی خلاف ورزی ہے۔ یہ ایوان حکومت سے مطالبہ کرتا ہے کہ مہمند ڈیم کی تعمیر کا ٹھیکہ منسوخ کیا جائے اوروزیر اعظم کے مشیر عبدالرزاق داؤد کو اس کی وضاحت دینی چاہیے۔

پنجاب اسمبلی / قرارداد

مزید : صفحہ اول


loading...