وزیراعظم کو صاف کہہ دیا وفاق صوبے میں مداخلت نہ کرے، وزیراعلیٰ سندھ

وزیراعظم کو صاف کہہ دیا وفاق صوبے میں مداخلت نہ کرے، وزیراعلیٰ سندھ
وزیراعظم کو صاف کہہ دیا وفاق صوبے میں مداخلت نہ کرے، وزیراعلیٰ سندھ

  


کراچی (ویب ڈیسک) وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ میں نے وزیراعظم اور گورنر سندھ کو صاف صاف کہہ دیا ہے کہ ہمارا آئین صوبے اور وفاق کی حدود کا تعین کرتاہےاگر وفاق یا صوبے ایک دوسرے کی حدوں میں مداخلت نہ کریں تو ہم بہت اچھے طریقے سے کام کرسکتے ہیں، مجھے پاکستان پیپلز پارٹی اور سندھ کے عوام کا اعتماد حاصل ہے ، مجھے نیب کی جانب سے طلبی کا کوئی نوٹس نہیں ملا، میڈیا بھی شاید اصل چیزوں پر دھیان نہیں دے رہا۔

جمعے کو نجی مال میں سندھ رورل سپورٹ آرگنائیزیشن (سرسو) کے پروگرام میں شرکت کے موقع پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت نے غربت کے خاتمے کے لیے اس پروگرام کو تشکیل دیا ہے جو کہ سندھ رورل سپورٹ آرگنائزیشن کے تحت 2006 سے جاری ہے،اس پروگرام کی کامیابی دیکھتے ہوئے یورپین اکنامک کمیٹی بھی ہمیں فنڈنگ کر رہی ہے اور سندھ حکومت نے اس کا دائرہ کار بڑھا کر صوبے کے تمام اضلاع میں اس پر وگرا م کو وسعت دی اور صوبہ سندھ کے ہر ضلع میں یہ پروگرام کامیابی سے چل رہا ہے۔

نیب میں طلبی سے متعلق ایک سوال کے جواب میں وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے کہا کہ مجھے اس سلسلے میں آج کیلئے کوئی نوٹس نہیں ملا جس کی وزیراعلیٰ ہاﺅس سے بروقت تردیدبھی کی جا چکی ہے۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ آئین کے مطابق مجھے اختیار ات حاصل ہیں، 2016میں وزیرا علیٰ بنا اور تب سے میں نے کوئی زمین الاٹ نہیں کی،ہم سپریم کورٹ کے احکامات کے پابند ہیں۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ جے آئی ٹی پر تبصرہ کرنے سے چیف جسٹس آف پاکستان نے خاص طورپر منع کیا ہے۔

مزید : علاقائی /سندھ /کراچی


loading...