گیس صارفین کو اضافی بلوں کی رقم واپس کرنے کا فیصلہ،پولیس کو سیاست سے پاک کریں گے:عمران خان

گیس صارفین کو اضافی بلوں کی رقم واپس کرنے کا فیصلہ،پولیس کو سیاست سے پاک ...

  



اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک،نیوز ایجنسیاں) حکومت نے اضافی گیس بلوں کی مد میں صارفین سے وصول رقم واپس کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔وزیراعظم عمران خان کو ان علاقوں کی رپورٹ پیش کی گئی جہاں کم گیس پریشر کے باوجود اضافی بل بھیجے گئے تھے۔رپورٹ میں بتایا کہ صارفین کو دستیاب گیس پریشر اور موصول ہونے والے بلوں کا عملی طور پر معائنہ کیا گیا، مختلف جگہوں پر ترسیلی گیس پریشر پر صارفین کو بھاری بھر کم بلز بھیجے گئے۔وزیراعظم نے گیس صارفین پر اضافی بوجھ ڈالنے پر شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے اضافی بلوں کی مد میں صارفین سے وصول رقم واپس کرنے کا حکم دیا۔ انہوں نے مختلف علاقوں میں طلب و رسد کی صورتحال پر بھی مسلسل نظر رکھنے اور آئندہ گیس بل حقیقی گیس پریشرکی بنیاد پرجاری کرنے کی ہدایت کی۔رپورٹ کے مطابق سوئی ناردرن صارفین سے وصول کئے گئے 513 ملین روپے کی رقم واپس کرے گی۔ 

میانوالی،جہلم،گوجرانوالہ جھنگ(نمائند گان پاکستان  بیورورپورٹس،مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) وزیراعظم عمران  خان نے کہا ہے کہ دہشت گردی کی وجہ سے عوام کا اعتماد پولیس پر سے اٹھ گیا تھا مگر اب یہ بحال ہو رہا ہے تبدیلی کے عمل میں سب سے پہلے سوچ تبدیل ہوتی ہے ملک بھر میں تبدیلیاں لا رہے ہیں ہم نے پنجاب پولیس کو ماڈل پولیس بنانا ہے عوام کو پنجاب پولیس میں اب تبدیلی نظر آنی ہی چاہیئے پولیس کلچر کو تبدیل کرنے کی کوشش کر رہے ہیں ماضی میں سیاستدان سیاسی مقاصد کے لیئے پولیس افسران لگواتے تھے اور پولیس و کچہری پر  ان کا ہولڈ رہتا تھا اب ایسا ناممکن ہے پنجاب بھر میں ماڈل پولیس سٹیشن بنیں گے اور ان میں بھرپور اصلاحات بھی ہو رہی ہیں جوکہ تیس سال سے نہیں ہوئیں  یہ ماڈل پولیس سٹیشن عوام کے لیئے رول ماڈل بنیں گے  آئی جی پنجاب کے ساتھ پولیس اصلاحات کے لیئے مکمل تعاون کریں گے ہم نے خیبر پختوخواہ پولیس کو سیاست سے پاک کیا ہے پولیس اچھا کام کرتی ہے تو ملک کی تقدیر بدل جاتی ہے تھانہ کچہری کی سیاست نے ملک کو نقصان پہنچایا ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے   میانوالی میں ماڈل پولیس سٹیشن کے افتتاح کے موقع پر گفتگو کر رہے تھے۔ اس موقع پر آئی جی پنجاب بھی ان کے ہمراہ تھے انہوں نے وزیراعظم کو بریفنگ دی۔وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ پختونخواہ پولیس کو سیاسی کلچر سے پاک کیا اب ملک بھر میں ایسا کریں گے حکومت پنجاب پولیس کے ساتھ کھڑی ہے ہر قسم کی سہولیات اسلحہ اور جدید گاڑیاں دیں گے اور تمام مسائل کا خاتمہ کرین گے کے پی میں میرٹ پہ بھرتیاں ہوئیں تمام صوبوں میں میرٹ ہی لاگو کرین گے عوام مسائل کے حل کے لیئے بے دھڑک آئین ان تھانوں کو حقیقی دارلامن بنائیں گے۔انہوں نے کہاکہ پولیس ایک بہترین ادارہ ہے جس میں تمام افسران اور ملازمین کو عوام کو عزت دینا ہوگی تبھی جرائم کا ملک سے خاتمہ ہوسکتا ہے۔۔دریں  اثناء  نمل کالج موسی'خیل میں خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم عمران خان نے  کہا کہ موجودہ دور آئی ٹی کا ہے طلباء  تعلیم کے ساتھ ساتھ آء ٹی کی بھی ضرور تعلیم حاصل کرین کیونکہ اب موجودہ دور میں کمپیوٹر کے بغیر ترقی ہی ناممکن ہے ملک بھر کے سکولوں کالجوں میں مزید کمپیوٹر لیبس بنائیں گے سرکاری دفاتر میں مینوئل سسٹم اب ختم ہو چکا تمام دفاتر میں انفارمیشن ٹیکنالوجی ہی استعمال ہو رہی ہے اور کمپیوٹر ہی سے کام ہو رہا ہے یہ سسٹم بہت مفید ہے نمل کالج سے فارغ آء ٹی اور دیگر شعبوں کے طلباء  ملک اور بیرون میں نوکریاں کر رہے ہیں بعد ازاں وزیراعظم نے نمل کالج میں آئی ٹی لیب کا افتتاح کیا قبل اذیں میانوالی پولیس کی طرف سے وزیراعظم کو گارڈ آف آنرز پیش کیا گیا اور انہیں ڈی سی میانوالی و دیگر حکام نے ضلع میں جاری ترقیاتی سکیموں بارے بریفنگ دی ۔ اوزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ بھارت میں مسلمانوں کا منظم انداز میں قتل عام جاری ہے۔وزیراعظم عمران خان نے بھارتی میڈیا کی ایک خبر ٹویٹ کی جس میں بتایا گیا ہے کہ اترپردیش کی پولیس نے 6 سال قبل انتقال کرجانے والے مسلمان شخص اور 93 سالہ بزرگ شہری کا نام بھی امن و امان میں خلل ڈالنے والے افراد کی فہرست میں شامل کردیا۔وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ بھارتی پولیس اپنی پستی کی حدوں کو چھو رہی ہے اور ظلم و بربریت کی نئی مثالیں قائم کررہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ سفاک مودی سرکار کے مسلم کش ایجنڈے کے تحت ہندوستان میں مسلمانوں کا قتل عام جاری ہے۔بھارت میں مودی حکومت نے متنازع قانون منظور کیا ہے جس کے تحت مسلمانوں کے سوا دیگر مذاہب کے تارکین وطن کو شہریت دی جائے گی۔ اس قانون کے خلاف ملک بھر میں شہریوں کی بڑی تعداد سراپا احتجاج ہے۔ مودی حکومت نے احتجاج کو کچلنے کے لیے سختی سے کام لیا اور سیکڑوں مظاہرین کو قتل اور زخمی کردیا ہے جن میں زیادہ تعداد مسلمانوں کی ہے۔ وزیراعظم پاکستان عمران خان نے آن لائن سسٹم کے تحت جھنگ میں تھانہ کوتوالی کا بطور ماڈل پولیس اسٹیشن افتتاح کر دیا۔ تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم عمران خان کے ویثرن کے مطابق پنجاب بھر کے 24 شہروں کے29 تھانہ جات کو ماڈل پولیس اسٹیشنز بنایا گیا ہے۔ وزیر اعظم عمران خان نے وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کے ہمراہ میانوالی میں ماڈل پولیس اسٹیشن کا اففتاح کیا، اس موقع پر انہوں نے آن لائن سسٹم کے تحت پنجاب بھر کے 29 ماڈل پولیس اسٹیشنز کا افتتاح بھی کیا۔وزیر اعظم پاکستان عمران خان نے آئی جی پی سپیشل انی شیٹوپروجیکٹ کا پنجاب بھر میں آن لائن افتتاح کر دیا گیا۔ اس پروجیکٹ میں ڈسٹرکٹ گوجرانوالہ کے تین تھانہ جات جن میں تھانہ صدر کامونکی، تھانہ گکھڑمنڈی اور تھانہ کینٹ شامل ہیں۔آن لائن افتتاحی تقریب کے دوران تھانہ کینٹ میں ریجنل پولیس آفیسر طارق عباس قریشی اورسٹی پولیس آفیسر گوہر مشتاق بھٹہ کی طرف سے میانوالی میں منعقدہ تقریب کو تینوں تھانہ جات میں براہِ راست دکھایا گیا۔گوجرانوالہ کے تینوں تھانہ جات کی آن لائن افتتاحی تقریب میں معزز شہریوں اور سیاسی و سماجی شخصیات کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔سپیشل انی شیٹوپولیس اسٹیشنز میں پہلی مرتبہ آن لائن نظام متعارف کرواتے ہوئے روائتی پولیسنگ سے دور رکھا گیا ہے۔ ان تینوں تھانہ جات میں فرنٹ ڈیسکس تھانہ میں داخلہ کے مقام پر بنائے گئے ہیں۔سائلین کی سہولیات کو مدِ نظر رکھتے ہوئے انٹری کا نظام بھی متعارف کروایا گیا ہے۔ جہاں پر پولیس آفیسر ز تعینات کیے گئے ہیں جوتھانہ میں آنے والے ہر سائل کی رہنمائی کریں گے اور اس کی مطلوبہ سہولت کی فراہمی تک اس کی مدد کریں گے۔

عمران خان

مزید : صفحہ اول


loading...