آرمی ایکٹ ترمیمی بل،پی ٹی آئی،(ن) لیگ پارلیمانی قواعد نظر انداز کرنا چاہتی تھیں:بلاول

آرمی ایکٹ ترمیمی بل،پی ٹی آئی،(ن) لیگ پارلیمانی قواعد نظر انداز کرنا چاہتی ...

  



اسلام آباد (این این آئی)پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ جب میں اسلام آباد پہنچا تو ن لیگ اور پی ٹی آئی آرمی ایکٹ کی غیرمشروط حمایت کرکے ایوانوں سے منظوری کا فیصلہ کرچکی تھیں۔ انہوں نے کہاکہ پی ٹی آئی اور ن لیگ فیصلہ کرچکی تھیں کہ پارلیمانی قواعد و ضوابط کو نظرانداز کردیا جائے گا۔ انہوں نے کہاکہ پی ٹی آئی اور ن لیگ یہ بھی فیصلہ کرچکی تھیں کہ بل کو نہ تو تمام ارکان اسمبلی کو دیا جائے گا اور نہ ہی اسے کمیٹی کو دیکھنے کیلئے بھیجا جائیگا۔ انہوں نے کہاکہ میں خوش ہوں کہ تمام پارٹیاں بل کو واپس قومی اسمبلی کی کمیٹی میں بھیجنے پر متفق ہوئیں۔انہوں نے کہاکہ دونوں ایوانوں کے قواعد و ضوابط کی پاسداری کے ساتھ یہ بل سینیٹ کی قائمہ کمیٹی میں بھی نظرثانی کے لئے جائیگا۔ انہوں نے کہاکہ یہ مثبت ہے کہ ایک سال سے زائد عرصہ غیرفعال رکھی جانے والی پارلیمان قانون سازی کے لئے تیار ہے۔ انہوں نے کہاکہ پارلیمان سے اختیارات لینے والے تمام ادارے پارلیمانی بالادستی کو قبول کرکے ہم سے قانون سازی کا کہہ رہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ یہ ان کیلئے اہم کامیابیاں ہیں کہ جو پارلیمانی بالادستی اور جمہوریت کیلئے ہمیشہ جدوجہد کرتے رہے ہیں۔دوسری طرف بلاول نے سلمان تاثیر کو ان کی نویں برسی پر خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ انتہا پسندی کے خطرات کے آگے اور کمزور طبقات کے حقوق و تحفظ کیلئے آہنی دیوار بن کر کھڑے رہے،پیپلز پارٹی ملک میں رنگ، نسل یا عقیدے کی بنیاد پر کسی قانون کو غلط استعمال کرنے کی اجازت نہیں دے گی،ہم بڑی قربانیوں کے بعد ملنے والے حقوق پر کسی مصلحت کا شکار نہیں ہوں گے۔ 

بلاول بھٹو

مزید : صفحہ اول


loading...