نواز شریف کی ضمانت میں توسیع کا معاملہ،نئی میڈیکل رپورٹس طلب

نواز شریف کی ضمانت میں توسیع کا معاملہ،نئی میڈیکل رپورٹس طلب

  



لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک)محکمہ صحت پنجاب کے میڈیکل بورڈ نے سابق وزیراعظم نوازشریف کی بیرون ملک قیام میں توسیع کی درخواست کیساتھ منسلک میڈیکل رپورٹس پرانی قرار دیدیں۔سابق وزیراعظم نواز شریف 19 نومبر 2019 ء سے علاج کی غرض سے لندن میں مقیم ہیں جہاں ان کے مسلسل ٹیسٹ اور طبی معائنہ کیا جارہا ہے۔گزشتہ دنوں نوازشریف کے وکیل خواجہ حارث نے ان کی صحت کے حوالے سے رپورٹس لاہور ہائیکورٹ میں جمع کرائی تھیں اور ساتھ ہی انہوں نے پنجاب حکومت کو بھی خط لکھا اور رپورٹس ارسال کی تھیں۔ذرائع کے مطا بق میڈیکل بورڈ نے سفارشات محکمہ داخلہ پنجاب کو ارسال کردی ہیں جس میں کہا گیا ہے نوازشریف کی میڈیکل رپورٹس پرانی ہیں لہٰذا ان کی 2 جنوری تک کی میڈیکل رپورٹس دی جائیں۔ میڈیکل بورڈ کا کہنا ہے کہ نئی میڈیکل رپورٹس کی فراہمی پر طبی رپورٹ جاری کرسکتے ہیں۔میڈیکل بورڈ کی سفارشات کے بعد نواز شریف کی نئی میڈیکل رپورٹس کے لیے محکمہ داخلہ پنجاب مراسلہ لکھے گا۔ 

نوازشریف 

لندن(آن لائن) نواز شریف کا امراض قلب کے علاج کے لئے لندن پرومٹن ہسپتال داخل ہونے کا امکان۔ ڈاکٹرز کے مطابق امراض قلب کے علاج کے لئے نواز شریف کا ہسپتال داخل ہونا ضروری ہے اور انہیں  بغیر کسی تاخیر کے جلد ہسپتال میں داخل ہونے کی تجویز  بھی دیدی تا کہ علاج شروع کیا جا سکے  ہسپتال ذرائع سے معلوم ہوا کہ اس بات کا اندازہ تقریباً ایک ہفتے میں لگا لیا جائے گا کہ نواز شریف کو آیا ہارٹ آپریشن‘ بائی پاس یا سٹینٹ کی ضرورت ہے۔ 

نواز شریف

مزید : صفحہ اول