وکلاء کی جانب سے ڈی جی ہیلتھ کے دفاتر پر قبضے کی کوشش ناکام، دیوار تعمیر کروادی

وکلاء کی جانب سے ڈی جی ہیلتھ کے دفاتر پر قبضے کی کوشش ناکام، دیوار تعمیر ...

  



پشاور(سٹی رپورٹر) لوئر کورٹ کے وکلاء کی جانب سے ڈائریکٹر جنرل ہیلتھ کے دفاتر پر قبضے کی کوشش ناکام بناتے ہوئے ضلعی انتظامیہ نے ڈپٹی کمشنر کے حکم پر عمارت کو محفوظ بنانے کیلئے دیوار تعمیر کروادی، ڈپٹی کمشنر پشاور محمد علی اصغر کو اطلاع ملی کہ محکمہ صحت کے دفاتر کے ریکارڈ کو ورسک روڈ دفاتر منتقل کیا جا رہا ہے جبکہ وکلاء نے محکمہ صحت کے دفاتر میں زبردستی داخل ہو کر قبضہ کر لیا ہے اور کمروں پر وکلاء کے نام لکھ دیے۔ حالات کی سنگینی کو دیکھتے ہوئے صوبائی حکومت نے ڈپٹی کمشنر پشاور کو فوری طور پر معاملہ حل کر نے کی ہدایت کی جس پر ڈپٹی کمشنر پشاور نے پولیس کی مدد سے عمارت کو وکلاء کے قبضے سے خالی کرکے پولیس کی بھاری نفری کو تعینات کر لیا۔ جبکہ عمارت کی پچھلی سائیڈ پر کسی بھی حادثے کو روکنے کے لیے دیوار تعمیر کروادی گئی دوسری جانب ڈائریکٹر جنرل ہیلتھ کے ملازمین نے وکلاء کی جانب سے قبضہ کرنے جیسے اقدام پر چیف جسٹس سپریم کورٹ، ہائی کورٹ اور صوبائی حکومت سے وکلاء کے خلاف سخت کاروائی کی اپیل کی ہے انہوں نے کہا کہ وکلاء کے اس اقدام سے سرکاری ملازمین میں شدید غصہ پایا جاتا ہے زبردستی قبضہ اور قانون ہاتھ میں لینے کی کوشش کی گئی تو حالات خراب ہونے کی ساری زمہ داری وکلاء پر عائد ہو گی

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...