سپورٹس

سپورٹس

  



پی ایس ایل فائیو۔۔۔۔۔۔۔۔ اب پاکستان میں میدان سہے گا

پاکستان کرکٹ بورڈنے پاکستان سپر لیگ فائیو 2020 کے شیڈول کا اعلان کردیا۔افتتاحی میچ20فروری کو کوئٹہ گلیڈی ایٹرز اور اسلام آباد یونائیٹڈ کے مابین نیشنل اسٹیڈیم کراچی میں کھیلا جائیگا،ایونٹ کا واحد کوالیفائر نیشنل اسٹیڈیم کراچی میں کھیلا جائیگا جبکہ دونوں ایلیمنٹرز اورفائنل کی میزبانی قذافی اسٹیڈیم لاہور کے سپرد کی گئی ہے۔34 میچوں پر مشتمل ایونٹ کے 14 میچز قذافی اسٹیڈیم لاہور، 9 نیشنل اسٹیڈیم کراچی، 8 پنڈی کرکٹ اسٹیڈیم راولپنڈی اور 3 ملتان کرکٹ اسٹیڈیم میں کھیلے جائیں گے۔ پی ایس ایل 2020کے ٹکٹوں کی فروخت 20 جنوری سے شروع ہوگی،ایونٹ میں 22 ممالک کے 425 کھلاڑیوں نے رجسٹریشن کروائی۔پہلے میچ دوپہر 2 بجے شروع ہوا کریگا جبکہ دوسرا میچ شام7بجے شروع ہو ا کرے گا۔20 فروری سے 22 مارچ تک جاری رہنے والیٹورنامنٹ کے تمام میچز پاکستان میں کھیلے جائیں گے۔ ایونٹ میں شامل 34 میچز ملک بھر کے 4 مختلف مقامات پر کھیلے جائیں گے۔ایچ بی ایل پی ایس ایل 2020 کے آغاز میں 50 روز باقی رہ جانے پر پی سی بی کی جانب سے ایونٹ کے مکمل شیڈول کا اعلان کردیا گیا ہے۔ پاکستان کرکٹ بورڈ نے اس دن کی مناسبت سے قومی کرکٹ کے گڑھ، قذافی اسٹیڈیم لاہور کے داخلی دروازے کے باہر ایک کاؤنٹ ڈاؤن کلاک بھی لگایا ہے۔ایچ بی ایل پی ایس ایل 2020 کا افتتاحی میچ دفاعی چیمپئن کوئٹہ گلیڈی ایٹرز اور دو مرتبہ کی چیمپئن اسلام آباد یونائیٹڈ کی ٹیموں کے درمیان نیشنل اسٹیڈیم کراچی میں کھیلا جائے گا۔ لیگ کے پانچویں ایڈیشن کا فائنل 22 مارچ کو قذافی اسٹیڈیم لاہور میں ہوگا۔ایونٹ کا واحد کوالیفائر نیشنل اسٹیڈیم کراچی میں کھیلا جائے گا جبکہ دونوں ایلیمنٹرز اورفائنل کی میزبانی قذافی اسٹیڈیم لاہور کے سپرد کی گئی ہے۔شیڈول کے مطابق دفاعی چیمپئن کوئٹہ گلیڈی ایٹرز اپنے 4 میچز کراچی، 3 لاہور 2 راولپنڈی اور 1 ملتان میں کھیلے گی۔پشاور زلمی آئندہ ایڈیشن میں اپنے 5 میچز راولپنڈی،3 کراچی جبکہ 1،1 لاہور اور ملتان میں کھیلے گی۔ایچ بی ایل پی ایس ایل 2020میں اسلام آباد یونائیٹڈ اپنے 5 میچز راولپنڈی، 3 لاہور اور 2 کراچی میں کھیلے گی۔ کراچی کنگز اپنے 5 میچز کراچی، 2،2 لاہور اور راولپنڈی جبکہ ایک ملتان میں کھیلے گی۔ ملتان سلطانز اپنے 5 میچز لاہور، 3 ملتان جبکہ 1،1 راولپنڈی اور کراچی میں کھیلے گی۔ لاہور قلندرز اپنے 8 میچز لاہور جبکہ 1،1 کراچی اور راولپنڈی میں کھیلے گی۔چیئرمین پی سی بی احسان مانی کا کہنا ہے کہ ملک میں ٹیسٹ کرکٹ کی میزبانی کے بعد ایچ بی ایل پی ایس ایل کے تمام میچز کا پاکستان میں انعقاد پاکستان کرکٹ بورڈ کی بڑی کامیابی ہے۔انہوں نے کہا کہ یہ لیگ کی پاکستان ہے اور اس کے تمام میچز ہوم گراؤنڈز پر ہی کھیلے جانے چاہیے۔ احسان مانی نے کہا کہ گذشتہ ایڈیشن کے اختتام پر انہوں نے پاکستانی عوام سے وعدہ کیا تھا کہ ایچ بی ایل پی ایس ایل 2020 کے تمام میچز پاکستان میں ہوں گے اور آج وہ وعدہ وفا ہورہا ہے۔چیئرمین پی سی بی احسان مانی نے کہا کہ ایچ بی ایل پی ایس ایل 2020 میں 36 غیرملکی کھلاڑی شرکت کررہے ہیں، لیگ کے پانچویں ایڈیشن کے لیے 425 غیرملکی کھلاڑیوں نے رجسٹریشن کروائی تھی جس میں بنگلہ دیش کے 23، افغانستان کے 39، انگلینڈ کے 109، آسٹریلیا کے 12، جنوبی افریقہ کے 27، سری لنکا کے 39، نیوزی لینڈ کے 11، ویسٹ انڈیز کے 82، زمباوے کے9، امریکہ کے 6، متحدہ عرب امارات کے 9، سنگاپور کے 4، سکاٹ لینڈ کے 5، اومان کے 9، نیدرلینڈز کے 7نیپال کے 8، آئرلینڈ کے 6، کینیڈا کے 10، ہانگ کانگ کے 7 جبکہ برمودا، کینیا اور نمبیا کا ایک ایک کھلاڑی شامل ہیں۔ انہوں نے کہا کہ غیرملکی کھلاڑیوں کی اس تعداد میں رجسٹریشن کروانے سے دنیا بھر میں یہ مثبت پیغام گیا ہے کہ پاکستان ایک پرامن اور محفوظ ملک ہے۔چیئرمین پی سی بی نے مزید کہا کہ اس ایونٹ کے انعقاد سے معیشت اور سیاحت کو فروغ ملے گا جو ملک کی مجموعی ترقی میں معاون ثابت ہوگا۔احسان مانی نے کہا کہ لیگ کے پانچویں ایڈیشن کا انعقاد ملک میں موجود کرکٹ کے مداحوں کو ایک طویل انتظار کے بعد اپنے پسندیدہ کرکٹرز کو ایکشن میں دیکھنے کا موقع فراہم کرے گا۔وہ پرامید ہیں کہ گذشتہ سال کی طرح رواں سال بھی ہر پاکستانی اس ایونٹ کے انعقاد کو کامیاب بنانے میں اپنا کردار ادا کریں گا اوراس دوران شائقینِ کرکٹ کی ایک بڑی تعداد اسٹیڈیمز کا رخ کرے گی۔چیئرمین پی سی بی احسان مانی نے کہا کہ شیڈول کے اعلان کے ساتھ ہی پاکستان کرکٹ بورڈ بھی کھلاڑیوں، کمرشل پارٹنرز، میڈیا اورمداحوں سمیت تمام اسٹیک ہولڈرز کو بہترین سہولیات فراہم کرنے کے لیے پرعزم ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ مقامی انتظامیہ اور سیکورٹی ایجنسیز کے تعاون کے مشکور ہیں جنہوں نے ایچ بی ایل پاکستان سپر لیگ کو مکمل طور پر پاکستان لانے میں پاکستان کرکٹ بورڈ کی بھرپور مدد کی۔ترجمان پی سی بی کے مطابق پہلے میچ دوپہر 2 بجے شروع ہوا کریگا جبکہ دوسرا میچ شام7بجے شروع ہو ا کرے گا۔ہر اسکواڈ میں کم از کم 16 اور زیادہ سے زیادہ 18 کھلاڑی شامل ہوں گے،16 رکنی اسکواڈ میں 11 مقامی اور 5 غیرملکی کھلاڑیوں کی شمولیت لازمی ہوگی تاہم 18 رکنی اسکواڈ میں کھلاڑیوں کی ترتیب 2 آرڈر میں کی جاسکتی ہے۔اسکواڈ میں یا تو 12 مقامی اور 6 غیرملکی کھلاڑی ہوں گے یا پھر 13 مقامی اور 5 غیرملکی کھلاڑی شامل ہوں گے۔پلاٹینم کیٹیگری میں شامل کھلاڑیوں کو 23 ملین سے 34 ملین پاکستانی روپے،ڈائمنڈکیٹیگری میں شامل کھلاڑیوں کو 11.5ملین سے 16 ملین پاکستانی روپے،گولڈکیٹیگری میں شامل کھلاڑیوں کو 6.9ملین سے 8.9ملین پاکستانی روپے،سلورکیٹیگری میں شامل کھلاڑیوں کو 2.4 ملین سے 5.4ملین پاکستانی روپے،ایمرجنگکیٹیگری میں شامل کھلاڑیوں کو 1ملین سے 1.5ملین پاکستان روپے ملیں گئے۔جبکہ دوسری جانب پاکستان کی جانب سے 2019کے دوران مجموعی طور پر 11کرکٹرز نے مختلف فارمیٹ میں پاکستان کی سبز کیپ حاصل کی، کچھ کھلاڑیوں نے بین الاقوامی کرکٹ میں قدم رکھتے ہی اپنی صلاحیتوں کا لوہا منوایا۔پاکستان کرکٹ ٹیم نے 2019میں تینوں فارمیٹ میں کھلاڑیوں کو آزمایا، عابدعلی کیلئے یہ سال سب سے زیادہ یادگار رہا۔ انہیں ون ڈے اورٹیسٹ میں ڈیبیو کرنے کا موقع ملا اوردونوں فارمیٹ میں انہوں نے پہلے ہی میچ میں سنچری کرنے کا منفرد ریکارڈ اپنے نام کیا۔پاکستان کے نوجوان تیزرفتار گیند باز نسیم شاہ کو سولہ سال کی عمر میں دورہ آسٹریلیا کے دوران ٹیسٹ کرکٹ کھیلنے کا موقع ملا، کراچی ٹیسٹ میں ایک اننگز میں پانچ وکٹیں لے کر وہ دنیا کے کم عمرترین تیزرفتار گیندباز بن گئے۔ایک اور نوجوان فاسٹ بالر محمد موسی نے 2019 میں پاکستان کی سبز کیپ حاصل کی۔ انہوں نے دورہ آسٹریلیا میں ٹیسٹ اور ٹی ٹوئنٹی فارمیٹ میں کیرئیر کا آغاز کیا۔فاسٹ بالرعثمان شنواری نے اسی سال سری لنکا کے خلاف راولپنڈی میں ٹیسٹ کیرئیر کا آغاز کیا اور ڈیبیو ٹیسٹ میں ایک وکٹ حاصل کی۔ عثمان شنواری ون ڈے اور ٹی ٹوئنٹی فارمیٹ میں پہلے ہی پاکستان کی نمائندگی کر چکے ہیں۔پاکستان سپرلیگ میں شاندار کارکردگی دکھانے کے بعد سیلیکٹرز کی نظروں میں آنے والے فاسٹ بالر محمد حسنین نے 2019 میں ون ڈے اور ٹی ٹوئنٹی میں پاکستان کی نمائندگی کا اعزاز حاصل کیا۔ڈومیسٹک کرکٹ میں عمدہ کارکردگی دکھانے پر خوشدل شاہ کو پاکستان ٹی ٹوئنٹی ٹیم میں شمولیت کی خوشی نصیب ہوئی، انہوں نے دورہ آسٹریلیا میں ٹی ٹوئنٹی کیرئیر کا آغاز کیا۔اوپننگ بلے باز امام الحق کو 2019 میں ٹی ٹوئنٹی کرکٹ میں بھی ملک کی نمائندگی کرنے کا موقع ملا، امام الحق نے دورہ انگلینڈ میں پہلا ٹی ٹوئنٹی میچ کھیلا۔پاکستان سپرلیگ میں شاندار کارکردگی دکھا کر ٹی ٹوئنٹی ٹیم میں جگہ بنانے والے حسین طلعت نے 2019 میں ون ڈے کیرئیر کا بھی آغاز کیا، انہیں دورہ جنوبی افریقہ میں کھیلنے کا موقع ملا۔ٹیسٹ کرکٹ میں عمدہ کارکردگی دکھانے والے شان مسعود 2019 میں ون ڈے فارمیٹ میں بھی پاکستان کے لیے کھیلنے میں کامیاب ہوئے۔ انہوں نے آسٹریلیا کے خلاف سیریز میں ڈیبیو کیا۔اسی سیریز میں سعدعلی نے ون ڈے میں ڈیبیو کیا، جبکہ ٹیسٹ فاسٹ بالر محمدعباس کو بھی اسی سیریز میں آسٹریلیا کے خلاف ون ڈے میں ڈیبیو کرنے کا موقع ملا۔جبکہ2019کی آخری ٹیسٹ رینکنگ میں بھارت پہلی پوزیشن پرفائز ہے,نیوزی لینڈ کا دوسرا نمبر ہے۔ جنوبی افریقہ، انگلینڈ اور آسٹریلیا یکساں پوائنٹس کے ساتھ تیسرے سے پانچویں نمبر پرموجود ہیں۔ سری لنکا چھٹی اور پاکستان کی ساتویں پوزیشن ہے۔ ویرات کوہلی بیٹنگ اور پیٹ کمنز بولنگ میں نمبر ون ہیں۔ پاکستان کے بابر اعظم بیٹنگ میں چھٹے نمبر پرموجود ہیں۔2019 کی آئی سی سی اختتامی ٹیسٹ رینکنگ میں بھارت ایک سوبیس پوائنٹس کے ساتھ پہلی پوزیشن پر فائز ہے۔ نیوزی لینڈ نے آخری سیریز ہارنے کے باوجود ایک سوبارہ پوائنٹس کے ساتھ دوسری پوزیشن پرقبضہ کرلیا۔ جنوبی افریقہ، انگلینڈ اور آسٹریلیا یکساں ایک سو دو پوائنٹس کے ساتھ تیسرے، چوتھے اور پانچویں نمبر پر ہیں۔ سری لنکا بانوے اور پاکستان پچیاسی پوائنٹس لے کرچھٹے اور ساتویں نمبر پر ہیں۔ ویسٹ انڈیز، بنگلہ دیش اور افغانستان آخری تین نمبروں پرہیں۔بھارتی کپتان ویرات کوہلی دنیاکے نمبرایک بیٹسمین ہیں۔آسٹریلیاکے اسٹیواسمتھ دوسرے،کیویز کپتان کین ولیمسن تیسرے نمبر پر ہیں۔آسٹریلیاکے مارنوس لبوشان نے مسلسل تین سنچریز بنا کر چوتھی پوزیشن حاصل کر لی۔ پاکستان کے بابراعظم چھٹے نمبر پرموجود ہیں۔ بابراعظم بیٹنگ اور بولنگ کے ٹاپ ٹین میں واحد پاکستانی کھلاڑی ہیں۔بولنگ میں آسٹریلیاکے پیٹ کمنز نمبر ون بولرہیں۔ نیل ویگنرنے دوسری پوزیشن حاصل کرلی۔ کیگیسوربادہ، جیسن ہولڈر اور ورنن فلینڈر ٹاپ فائیو بولرز میں شامل ہیں۔ پاکستان کے محمد عباس چودھویں نمبر پرہیں۔ ویسٹ انڈین کپتان جیسن ہولڈر دنیاکے بہترین آل رانڈر ہیں۔ رویندر جڈیجا اور بین اسٹوکس آل رانڈرز میں دوسرے اور تیسرے نمبرپرفائز ہیں۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

لاہور کا سرد موسم کبڈی ورلڈکپ میں رکاوٹ بن گیا

 لاہور کا سرد موسم کبڈی ورلڈکپ میں رکاوٹ بن گیا اور شیڈول میں ردوبدل کا امکان ہے تاہم حتمی فیصلہ ایک دو دن میں ہوگا۔ذرائع کے مطابق  براڈ کاسٹر ادارے نے 12جنوری سے شروع ہونے والے کبڈی ورلڈکپ کی تاریخوں میں تبدیلی کا مشورہ دیا ہے۔ جس پر پاکستان کبڈی فیڈریشن حکام نے مشاورت کے لیے وقت مانگا ہے۔ کبڈی کے اس عالمی میں بھارت سمیت دس غیر ملکی ٹیموں کی شرکت کا اعلان کیا گیا ہے۔براڈ کاسٹ کرنے والی کمپنی کا کہنا ہے کہ سرد موسم میں لوگ زیادہ تعداد میں ان مقابلوں کو دیکھنے کے لیے نہیں آئیں گے، مناسب ہوگا کہ چند دن بعد اس ایونٹ کا آغاز کیا جائے۔دوسری جانب فیڈریشن حکام پہلے سے اعلان کردہ شیڈول کے مطابق ہی یہ ایونٹ کرانے کے حق میں ہیں، منتظمین کا موقف ہے کہ بھارت سمیت تمام ٹیموں نے شرکت کی تصدیق کررکھی ہے۔ ایسے میں شیڈول تبدیلی سے ایونٹ متاثر ہوسکتا ہے۔

پاکستان ہاکی فیڈریشن کا رواں برس ہاکی لیگ کروانے کا اعلان

 پاکستان ہاکی فیڈریشن نے  رواں برس ہاکی لیگ کروانے کا اعلان کر دیا۔سیکرٹری پی ایچ ایف آصف باجوہ  نے کہا ہے کہ لیگ 2020میں ہی ہو گی، نئے سال کا سورج پاکستان ہاکی کے لیے نوید کی کرن ہوگا، رواں سال ہاکی کے لیے اہم اقدامات ہوں گے،جون میں جونیئر ایشیا کپ ڈھاکا میں ہوگا، 12جنوری سے 54کھلاڑیوں کا کیمپ لاہور میں لگے گا۔ قوم کو لیگ کی تفصیلات کے بارے میں  میڈیا کے ذریعے جلد آگاہ کیا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ نئے سال کا سورج پاکستان ہاکی کے لیے بہتر ہوگا، گزشتہ سال کے برعکس 2020ہاکی کے لئے بہترین ہوگا، جونئیر چمپئن شپ کرانے کامقصد نوجوان کھلاڑیوں کو موقع دینا تھا، پہلے ادوار میں ایسے ٹورنامنٹ کو اگنور کیا۔آصف باجوہ کا مزید کہنا تھا کہ جونئیر اشیا کپ کے لیے ٹریننگ کیمپ کیلئے 54لڑکوں کو مدعو کررہے ہیں،دو ہفتوں پر مشتمل ٹریننگ کیمپ لاہور میں منعقد ہوگا، دانش کلیم کیمپ کی نگرانی کریں گے جب کہ محمد عمران،  مدثر علی خان رانا ظہیر بابر معاون کوچز کے فرائض انجام دیں گے،ہر دورہ پر ٹیم مینجر الگ الگ ہونگے، آصف باجوہ نے کہا کہ تمام کوچز کوالیفائڈ ہے، جو کوچز دستیاب  ہیں ان میں دانش کلیم سے بہتر کوئی نہیں۔انہوں نے کہا کہ دانش کلیم ہیڈ کوچ، محمد عمران، مدثر خان اور رانا ظہیر معاون کوچز ہوں گے۔آصف باجوہ کا مزید کہنا تھا کہ عابد امین ٹیم کے فزیو اور نیوٹریشنسٹ ہوں گے، جونیئر ایشیا کپ جونیئر ورلڈ کپ کا کوالیفائنگ رانڈ بھی ہوگا، نئے سال پاکستان ہاکی کے لیے مثبت ثابت ہوگا، اہم اقدمات کیے جائیں گے۔

 ورلڈ ڈارٹنگ چیمپئن شپ، مائیکل وین گروئن ٹائٹل جیتنے میں سرخرو

برطانوی دارالحکومت لندن میں اسکاٹ لینڈ کے پیٹر رائٹ نے ورلڈ ڈارٹنگ چیمپئن شپ کے فائنل میں حریف مائیکل وین گروئن کو ہرا کر 6 سال بعد شکست کا بدلہ لے لیا، زبردست نشانہ بازی نے تماشائیوں کو بھی جوشیلا کر دیا۔غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق الیگزینڈرا پیلس میں ڈارٹنگ ورلڈ چیمپئن شپ کا پہلا مقابلہ ہوا، فائنل میں روایتی حریف پیٹر رائٹ اور دفاعی چیمپئن مائیکل وین گروئن آمنے سامنے آئے۔ چھوٹے سیٹ کا بڑا مقابلہ ہوا، نشانہ بازی اور پوائنٹ سکورنگ نے ماحول گرمایا، انچاس سالہ اسکاٹش ڈارٹ سٹار اسی حریف سے 2014 کا فائنل ہارے تھے، نئے سال کے فاتحانہ آغاز کو یادگار بنا لیا۔گیارہ میں سے دس فائنل ہارنے والے پیٹر رائٹ کے لیے سال دوہزار بیس مبارک ثابت ہوا، پہلی بڑی کامیابی اپنے نام کر لی۔وِنر ٹرافی کو دیکھ کر تماشائی ہی نہیں خود فاتح عالم بننے والے ڈارٹر پرجوش نظر آئے اور خوب خوشی منائی۔

جذبہ ایمان، مسلم خاتون باڈی بلڈر نے مختصر لباس ٹھکرا دیا، فاتح قرار

بنگلادیش میں ہونے والی خواتین کی باڈی بلڈنگ چیمپئن شپ مکمل لباس پہن کر مسلز کی نمائش کرنے والی 19 سالہ مسلمان لڑکی نے جیت لی۔تفصیلات کے مطابق بنگلادیش میں پہلی وویمن باڈی بلڈنگ چیمپئن شپ میں ملک بھر کی 29 لڑکیوں نے حصہ لیا۔ ابتدائی طور پر باڈی بلڈنگ چیمپئن شپ انتظامیہ نے حصہ لینے والی لڑکیوں کے لیے خصوصی ڈریس کوڈ کا اعلان کیا تھا، تاہم بعد ازاں ڈریس کوڈ کے ضابطے کو معطل کیا گیا۔مسلم اکثریتی ملک ہونے کی وجہ سے باڈی بلڈنگ چیمپئن شپ میں حصہ لینے والی لڑکیوں کو اپنی پسند کا لباس پہننے کی اجازت دی گئی جبکہ حصہ لینے والی لڑکیوں کے مختصر لباس کی شرط بھی ختم کی گئی تھی جس کے بعد زیادہ تر حصہ لینے والی لڑکیاں مکمل لباس پہن کر شریک ہوئیں۔مقابلے میں حصہ لینے والی زیادہ تر خواتین مسلمان تھیں تاہم دیگر مذاہب سے تعلق رکھنے والی لڑکیوں نے بھی مقابلے میں حصہ لیا۔ چیمپئن شپ کی فاتح 19 سالہ مسلمان لڑکی اہونا رحمان کو دیا گیا جنہوں نے مکمل لباس میں شرکت کی تھی۔اہونا رحمان نے پینٹ شرٹ پہن کر مقابلے میں حصہ لیا تھا اور انہوں نے سب کے سامنے اپنے مسلز کی نمائش کی جس کے بعد انہیں فاتح قرار دیا گیا۔ اہونا رحمان نے اپنی جیت پر خوشی کا اظہار کیا اور ساتھ ہی انتظامیہ کی جانب سے لباس کے معاملے میں دی گئی رعایت کو بھی سراہا۔کا کہنا تھا کہ مکمل لباس پہن کر شرکت کرنے کی وجہ سے اب زیادہ لڑکیاں اس چیمپئن میں حصہ لیں گی اور وہ اعتماد کے ساتھ آگے بڑھیں گی۔

 ماریہ شراپوا نے کندھے کی انجری سے نجات پا لی

روسی ٹینس اسٹار ماریہ شراپوا نے سال 2019 جاتے ہی کندھے کی انجری سے نجات پا لی، رواں ماہ برسبن انٹرنیشنل کھیلنے کا اعلان بھی کر دیا جہاں انہیں وائلڈ انٹری مل گئی ہے۔سابق عالمی نمبر ایک ماریہ شراپوا پھر اِن ایکشن، سال 2019 جاتے ہی مکمل فِٹ ہو گئیں، کندھے کی انجری کی شکار روسی ٹینس اسٹار کی طویل انجری کا سفر ختم، رواں ماہ بریسبین انٹرنیشنل کھیلیں گی۔پانچ بار کی گرینڈ سلیم چیمپئن ماریہ شراپوا وائلڈ کارڈ انٹری سے ایونٹ میں شرکت کریں گی، گذشتہ سال روسی کھلاڑی نے صرف 15 میچ کھیلے، یو ایس اوپن میں آخری بڑی نمائندگی تھی۔ماریہ شراپوا کے دوبارہ کورٹ میں آنے سے ٹینس شائقین و ماہرین میں خوشی کی لہر دوڑ گئی۔

رونالڈو نے معذور مداح سے ملاقات کرکے اس کی خواہش پوری کردی

معروف فٹ بالر کرسٹیانو رونالڈو نے معذور مداح سے ملاقات کرکے اس کی خواہش پوری کردی۔گزشتہ روز پرتگال سے تعلق رکھنے والے معروف فٹ بالر کرسٹیانو رونالڈو نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ انسٹاگرام پر ایک ویڈیو شیئر کی جس میں وہ ایک معذور بچے کے ساتھ فٹ بال کھیل رہے ہیں، علی عامر نامی یہ معذور بچہ کرسٹیانو رونالڈو کا ایک خاص مداح ہے۔رونالڈو نے اپنے اس خاص مداح کی خواہش پر اس سے ملاقات کی اور پھر  فٹ بال بھی کھیلی، رونالڈو نے ویڈیو شیئر کرتے ہوئے کیپشن میں لکھا کہ آپ سے ملاقات کرکے خوشی ہوئی، آپ نے مجھے بہت متاثر کیا۔دوسری جانب علی عامر نے اپنے انسٹاگرام اکانٹ پر رونالڈو سے ملاقات کی تصاویر شیئر کیں اور ساتھ ہی ایک ویڈیو شیئر کی جس میں رونالڈو اپنے مداح کو فٹ بال پر آٹوگراف دے رہے ہیں۔علی عامر نے اِن تصاویر اور ویڈیو کو شیئر کرتے ہوئے کیپشن میں لکھا کہ ان کو یقین نہیں آرہا ہے کہ ان کی یہ خواہش پوری ہوگئی ہے۔علی عامر نے لکھا کہ میں اِس کے لیے سب سے پہلے اللہ تعالی کا شکر ادا کرتا ہوں کہ اس نے میری دعا قبول کی اور رونالڈو سے ملاقات کروانے کے لیے کچھ لوگوں کو وسیلہ بنایا۔

سعودی عرب میں پہلی مرتبہ ڈاکار کار ریلی  آج شروع ہوگی

ایشیا میں پہلی مرتبہ ڈاکار کار ریلیآج  سے سعودی عرب میں شروع ہوگی جس میں 62 ملکوں کے 550 سے زیادہ ریس ڈرائیور شرکت کریں گے۔ سپورٹس جنرل اتھارٹی کے چیئرمین شہزادہ عبدالعزیز بن ترکی کے مطابق ڈاکار ریلی 2020ء بارہ مرحلوں پر مشتمل ہوگی۔ سعودی صحرا کا 7500 کلو میٹر کا فاصلہ طے کیا جا ئے گا۔  انہوں نے کہا ہے کہ سعودی ڈاکار ریلی سے متعلق بین الاقوامی اشتہاری مہم کی وڈیو دنیا کے اہم شہروں پیرس، میلان اور میڈرڈ میں دکھائی جائے گی۔ نیویارک، لندن اور برج خلیفہ جیسے مشہور عالمی مقامات پر بھی وڈیو دکھانے کا اہتمام کیا جا ئے گا۔ ریلی کے پہلے مرحلے کا آغاز جدہ سے ہوگا جو کہ ملک کے مختلف علاقوں سے گزرے گی۔ ربع الخالی سے گزرتے ہوئے ریلی کی آخری منزل القدیہ ہوگی۔ ریلی میں شامل ڈرائیور ریت اور کنکریوں کے 676 کلو میٹر طویل علاقے سے گزریں گے۔ نیوم سے العلا تک کا سفر بہت مشکل ہو گا۔ القدیہ میں سعودی ڈاکار ریلی 2020ء کی اختتامی تقریب منعقد ہو گی۔ واضح رہے کہ ڈاکار کار ریلی کل اتوار سے شروع ہو کر 13 روز تک جاری رہنے کے بعد 17جنوری کو اختتام پذیر ہوگی۔

ڈبلیو ٹی اے شینزن اوپن ٹینس ٹورنامنٹ آج سے چین میں شروع ہوگا

انٹرنیشنل ٹینس فیڈریشن کے زیر اہتمام ڈبلیو ٹی اے شینزن اوپن ٹینس ٹورنامنٹ کا آٹھواں ایڈیشن آج سے چین کے شہر سینزن میں شروع ہوگا۔ ٹورنامنٹ انتظامیہ کے مطابق خواتین کھلاڑیوں کے ایونٹ میں دنیائے ٹینس کی نامور ٹینس کھلاڑی ٹائٹل کے حصول کے لئے ایکشن میں نظر آئیں گی۔ ایونٹ کے کامیاب انعقاد کے لئے تیاریاں عروج پر ہیں۔ یہ ٹورنامنٹ کا آٹھواں ایڈیشن ہوگا جس میں بیلاروس کی اریانا سابالینکا ویمنز سگلز میں اعزاز کا دفاع کرینگی جبکہ ویمنز ڈبلز میں میزبان شوائی پینگ اور انکی ہم وطن جوڑی دار ینگ ژوان ٹائٹل کے دفاع کے لئے میدان میں اتریں گی۔ ٹورنامنٹ ہارڈ کورٹ پر کھیلا جائے گا۔ ٹورنامنٹ کے لئے 7 لاکھ 50 ہزار امریکی ڈالر کی رقم مختص کی گئی ہے۔ 

مزید : ایڈیشن 1


loading...