سعودی حکومت عمرہ زائرین پر عائد عمر کی شرط ختم کرے، حافظ شفیق کاشف

سعودی حکومت عمرہ زائرین پر عائد عمر کی شرط ختم کرے، حافظ شفیق کاشف

  

لاہور(ڈویلپمنٹ سیل)سعودی حکومت کی طرف سے پروازوں کی اجازت دینے کے فیصلے کا خیر مقدم کرتے ہیں سعودی حکومت عمرہ زائرین پر عائد عمر کی شرط بھی ختم کرے تاکہ مسلمانوں کو عمرہ کی سعادت میں مزید سہولت میسر آسکے کورونا وائرس ٹیسٹ منفی آنے کے بعد عمر کی شرط عائد کرنے کا کوئی جواز نہیں ہے سعودی حکومت پاکستان اور سعودی عرب کے تباہ حال نجی شعبے پر رحم کریں اور یہ پابندی فوری ختم کی جائے حج آرگنائزرز ایسوسی ایشن پاکستان کے مرکزی راہنما اور ہوپ پنجاب ایگزیکٹو ممبر حافظ شفیق کاشف کی روزنامہ ”پاکستان“سے خصوصی گفتگو، انہوں نے کہا ہے سعودی حکومت عمرہ زائرین پر 18سے50 عائد عمر کی شرط بھی ختم کرے تاکہ مسلمانوں کو عمرہ کی سعادت میں مزید سہولت میسر آسکے۔ انہوں نے کہاکہ کورونا ٹیسٹ منفی آنے کے بعد عمر کی شرط عائد کرنے کا کوئی جواز نہیں ہے۔ سعودی حکومت پاکستان اور سعودی عرب کے تباہ حال نجی شعبے پر رحم کریں اور یہ پابندی فوری ختم کی جائے۔ حافظ شفیق کاشف نے کہا ہے کہ لاکھوں افراد کو روزگار اور حکومت کو اربوں روپے ٹیکس دینے والی ’ٹریول ٹریڈ انڈسٹری‘تباہی کے دہانے پر پہنچ چکی ہے۔ سرکاری سطح پراس صورتحال سے نمٹنے کے لئے فوری معاونت فراہم نہ کی گئی تواس شعبہ اور اس سے وابستہ لاکھوں افراد کی معاشی اوربحالی میں کئی برس درکار ہوں گے اور ملک کو ریونیو کی فراہمی میں بھی نقصان ہوگا جو ملک کے لئے اچھی بات نہیں۔ انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس سے دنیا بھر میں سیاحت کا شعبہ سب سے ذیادہ متاثر ہوا ہے اور اس سے منسلک دیگرتمام شعبوں میں گزشتہ ایک سال سے کام بند ہے۔ انہوں نے کہاکہ 18 سال سے کم اور 50 سال سے زائد عمر کے افراد اب بھی عمرہ کی سعادت حاصل نہیں کر سکتے جس کی وجہ سے عمرہ انڈسٹری تباہ ہو گئی ہے۔ پاکستان اور سعودی عرب کی حکومتوں سے استدعا ہے کہ وہ اس صورتحال کا نوٹس لے کر خصوصی اقدامات کریں۔ 

حافظ شفیق کاشف

مزید :

صفحہ آخر -