خواجہ محمد یونس کی مشیر تجارت عبدالرزاق داؤد سے ملاقات

  خواجہ محمد یونس کی مشیر تجارت عبدالرزاق داؤد سے ملاقات

  

ملتان(نیوز رپورٹر) جنوبی پنجاب میں تجارت اورسرمایہ کاری کے فروغ کے لئے مشیرتجارت عبدالزاق داؤدنے ملتان میں 50 ایکڑرقبہ پرایکسپوسنٹرکے قیام کاوعدہ کیاہے۔آل پاکستان بیڈشیٹس اینڈاپ ہولسٹری مینو فیکچررز ایسوسی ایشن ایپبیوما APBUMA کے چیئرمین خواجہ محمد یونس نے اپنے وفد کے ہمراہ اسلام آباد میں مشیرتجارت عبدالرزاق(بقیہ نمبر8صفحہ5پر)

 داؤد سے ملاقات کے بعدملتان میں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہاکہ مشیرتجارت نے ایپبیوماکے وفد کی مختلف تجاویزسے اتفاق کرتے ہوئے کہاکہ ملکی ضروریات کو پوراکرنے کے لئے حکومت نے یارن کی درآمدپرریگولیٹری ڈیوٹی میں کمی کردی ہے لیکن یہ ایک عارضی انتظام ہے۔انہوں نے بتایاکہ تاجکستان سے روئی درآمدکرنے کے لئے وہاں سے ایک وفد پاکستان آیاتھااب جلد ہی پاکستانی وفد تاجکستان جاکرروئی درآمدکرنے کامعاہدہ کرکے آئے گا۔تاہم حکومت پاکستان روئی کی ملکی ضروریات پوراکرنے اوراس میں خودکفالت کے لئے بہت سے ٹھوس اقدامات بھی اٹھارہی ہے۔بڑی امید ہے کے پائیدارشرح نمو کے حصول کے لئے پاکستانی ٹیکسٹائل سیکٹرحکومت پاکستان سے ملک کرکام کرے گاہم وزیراعظم پاکستان کے ویژن کے مطابق برآمدی صنعتوں کوزیادہ سے زیادہ سہولیات کی فراہمی جاری رکھیں گے۔خواجہ یونس نے بتایاکہ مشیرتجارت سے ملاقات کے موقع پران کو ٹیکسٹائل پالیسی 2020/25کے مسودہ کی تیاری اوروزیراعظم سے اس کی منظوری کے لئے کی گئی کوششوں کوسراہتے ہوئے تمام وزارتوں کی طرف سے باہمی تعاون کومربوط بنانے پرزوردیاگیا۔انہوں نے کہاکہ کورونا کی وجہ سے ٹیکسٹائل اورایس ایم ایز سیکٹربھی متاثرہواہے حکومت اورسٹیٹ بینک کی طرف سے اچھی پالیسیوں کے جاری ہونے کے بعد ابھی بھی ایس ایم ایز سیکٹرکومزیدسہارادینے کی ضرورت ہے۔اس سیکٹرکوتمام پالیسی ساز فورمز پرنمائندگی دی جانی چاہیے۔حکومت NO Tex-No Refundکی پالیسی اختیارکرکے ایکسپورٹرزکوسہولت فراہم کرے۔اس موقع پرکلیمز کی عدم ادائیگی،شپنگ اخراجات میں اضافہ اوردیگرامورپربھی تفصیلی تبادلہ خیال بھی کیاگیا ہے۔

ملاقات

مزید :

ملتان صفحہ آخر -