قائداعظم ٹرافی کے فائنل میچ کا ناقابل یقین نتیجہ آ گیا، حسن علی نے ایسا کمال کر دکھایا کہ ہر پاکستانی حیرت زدہ رہ جائے

قائداعظم ٹرافی کے فائنل میچ کا ناقابل یقین نتیجہ آ گیا، حسن علی نے ایسا کمال ...
قائداعظم ٹرافی کے فائنل میچ کا ناقابل یقین نتیجہ آ گیا، حسن علی نے ایسا کمال کر دکھایا کہ ہر پاکستانی حیرت زدہ رہ جائے
سورس: Twitter

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) سینٹرل پنجاب کے حسن علی کی عمدہ سنچری کی بدولت قائداعظم ٹرافی کا فائنل میچ برابر ہونے پر دفاعی چیمپین سینٹرل پنجاب اور خیبرپختونخواہ کو مشترکہ فاتح قرار دیدیا گیا ہے۔ خیبرپختونخواہ کے کپتان حسن علی کو عمدہ سنچری بنانے پر میچ کا بہترین کھلاڑی جبکہ کامران غلام کو ٹورنامنٹ کا بہترین بلے باز قرار دیا گیا۔ 

تفصیلات کے مطابق نیشنل سٹیڈیم کراچی میں دفاعی چیمپین سینٹرل پنجاب اور خیبرپختونخواہ کے درمیان کھیلے گئے میچ میں خیبرپختونخواہ کی ٹیم نے ٹاس جیت کر بیٹنگ کرنے کا فیصلہ کیا اور پہلی اننگز میں 300 رنز بنائے۔ کامران غلام نے 76، عادل امین نے 75، اسرار اللہ نے 61 اور ذوہیب خان نے 30 رنز کی اننگز کھیلی۔ 

سینٹرل پنجاب کی جانب سے کپتان حسن علی سب سے کامیاب باﺅلر رہے جنہوں نے 23.5 اوورز میں 62 رنز کے عوض 4 کھلاڑیوں کو پویلین کی راہ دکھائی اور وقاص مقصود نے 3 وکٹیں حاصل کیں جبکہ بلاول اقبال، قاسم اکرم اور احمد صافی عبداللہ نے ایک، ایک کھلاڑی کو آﺅٹ کیا۔ 

خیبرپختونخواہ کی پہلی اننگز کے 300 رنز کے جواب میں سینٹرل پنجاب کی ٹیم اپنی پہلی اننگز میں 257 رنز پر ڈھیر ہو گئی اور یوں خیبرپختونخواہ کو43 رنز کی برتری حاصل ہو گئی۔ سینٹرل پنجاب کے عثمان صلاح الدین 60، قاسم اکرم 60، سعد نسیم 55 اور محمد سعد 26 رنز بنانے میں کامیاب ہوئے۔ 

خیبرپختونخواہ کی جانب سے عرفان اللہ شاہ سب سے کامیاب باﺅلر رہے جنہوں نے 20 اوورز میں 73 رنز کے عوض 4 کھلاڑیوں کو پویلین کی راہ دکھائی اور خالد عثمان نے 3 وکٹیں حاصل کیں جبکہ ارشد اقبال اور ساجد خان نے ایک، ایک کھلاڑی کو آﺅٹ کیا۔ 

خیبرپختونخواہ کی ٹیم نے 43 رنز کی برتری کیساتھ دوسری اننگز کا آغاز کیا اور ٹورنامنٹ کے سب سے بہترین بلے باز کا اعزاز پانے والے کامران غلام کی سنچری کی بدولت 312 رنز بنا کر آﺅٹ ہو گئی، دیگر بلے بازوں میں اسرار اللہ 63 اور خالد عثمان 53 رنز بنا کر نمایاں رہے اور سینٹرل پنجاب کو جیت کیلئے 355 رنز کا ہدف ملا۔ 

سینٹرل پنجاب کی ٹیم نے ہدف کے تعاقب میں اچھا کھیل پیش کیا اور بالخصوص کپتان حسن علی نے آل راﺅنڈر کارکردگی دکھائی اور حیران کن طور پر سنچری جڑ کر میچ برابر تو کر دیا تاہم اپنی ٹیم کو کامیابی نہ دلا سکے۔ انہوں نے 106 رنز بنائے جبکہ دیگر بلے بازوں میں عثمان صلاح الدین 67، محمد اخلاق 48 اور احمد صافی عبداللہ 35 رنز بنا سکے۔ 

خیبرپختونخواہ کی جانب سے ساجد خان نے عمدہ باﺅلنگ کرتے ہوئے 26.3 اوورز میں 86 رنز کے عوض 4 کھلاڑیوں کو پویلین کی راہ دکھائی اور ارشد اقبال نے 3 وکٹیں حاصل کیں جبکہ عرفان اللہ شاہ نے 2 اور ثمین گل نے ایک کھلاڑی کو آﺅٹ کیا۔ 

مزید :

کھیل -