لیڈی ڈاکٹرز اور نرسوں کے ہاسٹلوں میں مردوں کے داخلے پر پابندی

لیڈی ڈاکٹرز اور نرسوں کے ہاسٹلوں میں مردوں کے داخلے پر پابندی

  

                                    لاہور( صبغت اللہ چودھری)محکمہ صحت نے صوبائی دارالحکومت میں واقع تمام ہسپتالوں کے نرسنگ اور لیڈی ڈاکٹرز کے ہوسٹلوں میں مردوں کے ہر قسم کے داخلے پر مکمل طور پر پابندی عائد کر دی ہے، جس کا مقصد لیڈیز ہوسٹلوں کے اندر مردوں کا مکمل طور پر صفایا کرنا ہے، قبل ازیں ان ہوسٹلوں میں کیفے ٹیریاز، کنٹینیں ، پبلک کال آفسزاور میس سمیت اسی قسم کی دوسری خدمات مرد ٹھیکیدار فراہم کر رہے تھے، جن کے بارے میں ہوسٹلوں میں رہائش پذیر خواتین کے تحفظات تھے کہ کنٹینوں پر درجنوں کے حساب سے مرد رکھے گئے ہیں جو سر شام ہی اپنے دیگر دوستوں کو بھی ان کنٹینوں پر بلا کر مجمع لگائے رکھتے ہیں جس سے خواتین کیلئے مخصوص جگہ کا مقصد ختم ہو جاتا ہے، جبکہ یہ بھی شکایت تھی کہ مرد ٹھیکیدار کنٹینوں پر من مانی قیمتیں بھی وصول کرتے ہیں اور ناقص اور غیر معیاری کھانے پینے کی اشیاءفراہم کرتے ہیں، اس سلسلے میں ان شکایات پر محکمہ صحت نے سخت نوٹس لیا ہے اور آئندہ کیلئے نئی حکمت عملی کے تحت نوٹیفکیشن جاری کر دیا ہے، اس نوٹیفکیشن کے مطابق آئندہ لاہور میں کسی بھی ہسپتال ، میڈیکل کالج یا میڈیکل یونیورسٹی، یا کسی بھی محکمہ صحت کے ادارے جہاں خواتین کے ہاسٹل قائم ہونگے، نرسنگ ہاسٹل یا نرسنگ سکول ہونگے ان مقامات کے اندر کنٹین ، کیفے ٹیریا، یا میس کوئی مرد ٹھیکیدار نہیں چلا سکے گا اور نہ ہی کسی ہسپتال کا میڈیکل سپرنٹنڈنٹ ، نرسنگ پرنسپل، نرسنگ سپرنٹنڈنٹ، پرنسل یا وائس چانسلرخواتین کے ہاسٹل کے اندر کنٹین یا میس کا ٹھیکہ کسی مرد کو دے سکے ۔ نوٹیفکیشن میں مزید کہا گیا ہے کہ ایسے خواتین ہاسٹلز جہاں کنٹینیں اور میس قائم ہیں جن کے ٹھیکے مرد چلا رہے ہیں ان کے ٹھیکے فی الفور منسوخ کر دیئے جائیں اور ان مقامات کے ٹھیکے نئے سرے سے خواتین کو دیئے جائیں۔جس کیلئے اخبارات میں باقاعدہ طور پر اخبارات میں تشہیر کر کے ٹینڈر طلب کئے جائیںنوٹیفکیشن میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ خواتین کو ٹھیکہ دیتے وقت اس سے سیکیورٹی بانڈ لے لیا جائے کہ وہ ٹھیکہ حاصل کرنے کے بعد کنٹین، میس یا کیفے ٹیریا کے اندر شیف سمیت تمام سٹاف خواتین پر مشتمل ہوگااس پر تمام ہسپتالوںکے میڈیکل سپرنٹنڈنٹس ، میڈیکل کالجز کے پرنسپلز ، سکول آف نرسز کی پرنسپلز اور ہسپتالوں کی نرسنگ سپرنٹنڈنٹس کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ اس نوٹیفکیشن پر دو ہفتوں میں من و عن عملدرآمد یقینی بنائیں۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -