سندھ نے وفاقی حکومت کی جانب سے بھجوائے گئے آئی جی کیلئے تینوں نام مسترد کر دیئے

سندھ نے وفاقی حکومت کی جانب سے بھجوائے گئے آئی جی کیلئے تینوں نام مسترد کر ...

  

                         اسلام آباد،کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک) آئی جی سندھ کی تعیناتی پر سندھ حکومت اور وفاق پھر آمنے سامنے آ گئے، سندھ حکومت نے وفاقی حکومت کی جانب سے بھجوائے گئے تینوں نام مسترد کر دیئے۔وفاقی حکومت نے آئی جی سندھ کیلئے تین ناموں کا پینل سندھ حکومت کو بجھوایا تھا جس میں کےپٹن (ر) میر زبیر محمود ، خان بیگ اور رفیق حسین شامل تھے کےپٹن (ر)میر زبیر محمود ڈپٹی ڈائریکٹر ایف آئی اے، سی سی پی او کوئٹہ ، انسپکٹر جنرل کے عہدے پر فائض رہ چکے ہیں جبکہ خان بیگ آئی جی پنجاب کے عہدے پر فائض رہ چکے ہیں۔ رفیق حسین ایڈیشنل آئی جی سندھ کے طور پر ذمہ داریاں انجام دے چکے ہیں۔ سندھ حکومت کا موقف ہے کہ ان کے جانب سے بھیجے گئے واحد نام فیاض لغاری کو ہی آئی جی سندھ کے لیے منتخب کیا جائے،دوسری طرف سندھ کے وزیر اطلاعات و نشریات شرجیل میمن نے کہا ہے کہ سندھ میں مرضی کا آئی جی لگانا، سندھ حکومت کا حق ہے، وفاق فیصلے مسلط کرنے کی کوشش نہ کرے۔ نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے شرجیل میمن نے کہا کہ سندھ میں آئی جی کی تعیناتی کیلئے وفاق نے تین نام بھیجے تھے جنہیں مسترد کر دیا گیا ہے، پنجاب میں وہاں کی حکومت کی ایماءپر ایک گھنٹے میں آئی جی تعینات ہو جاتا ہے، سندھ میں مرضی کا آئی جی لگانا ہمارا حق ہے۔ انہوں نے کہا کہ وفاق فیصلے مسلط نہ کرے اور محاذ آرائی کرنے کے بجائے سنجیدگی کا مظاہرہ کرے۔

مزید :

صفحہ اول -