وزیر اعظم نوازشریف اور وزیر داخلہ چوہدری نثار کی ملاقات ، اندرونی کہانی سامنے آگئی

وزیر اعظم نوازشریف اور وزیر داخلہ چوہدری نثار کی ملاقات ، اندرونی کہانی ...
وزیر اعظم نوازشریف اور وزیر داخلہ چوہدری نثار کی ملاقات ، اندرونی کہانی سامنے آگئی

  

لاہور(ما نیٹرنگ ڈیسک )وزیر اعظم نوازشریف اور وزیر داخلہ چوہدری نثار کی رائے ونڈ میں چند گھنٹوں کے دوران تیسری ملاقات ہوئی ہے ،وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف بھی موجود تھے، ملاقات کی اندرونی کہانی سامنے آگئی ہے ۔ ذرائع کے مطابق مسلسل تین ملاقاتوں اور شہبازشریف ،حمزہ شہباز اور مریم نوازکی کوششوں کے باوجود اب تک بعض معاملات پر ڈیڈ لاک برقرار ہے جس کے بعد دونوں رہنماﺅں کے درمیان مفاہمت پیدا کرنے کا ٹاسک وزیر اعلیٰ پنجاب کو دے دیا گیا ہے ۔ ذرائع نے دعویٰ کیا ہے کہ چوہدری نثار علی خان نے اپنی ناراضگی عارضی طور پر ختم کر دی ہے، انہوں نے وزیر اعظم نوازشریف سے کہا کہ مجھے ذاتی طور پر آپ سے کوئی اختلاف نہیں ،آپ کو چھوڑ کر جانے کا  سوچ بھی نہیں سکتا ۔وزیر داخلہ نے کہا کہ جو کچھ بھی ہو حکومت اور پارٹی کے مفاد میں ہونا چاہئے، پارٹی کے لئے میری قربانیوں کو نظر انداز نہیں کیاجاسکتا ۔دوسری طرف وزیر اعظم نوازشریف اب بھی بعض معاملات پر اڑئے ہوئے ہیں لیکن ان کا کہنا تھا کہ اختلاف رائے جمہوریت کا حسن ہے تاہم پارٹی کے اختلافات پارٹی میں ہی حل ہونے چاہئے ۔ملاقات کو طول دینے کے لئے وزیر داخلہ کو افطارپارٹی دے کر روک لیا گیا ہے اور افطاری کے لئے وزیر اعظم کی پسندیدہ ڈش آلو گوشت تیار کی جارہی ہے جبکہ وزیر اعظم نے چوہدری نثار کے لئے ہلکے مصالحے والے کھانے تیار کرنے کی ہدایت کی ہے ۔وزیر اعلیٰ پنجاب بھی معاملے کو ادھورا چھوڑنے کے لئے تیار نہیں ہیں اور مصالحت کے لئے مسلسل کوشاں ہیں ، ذرائع کے مطابق باقی رہ جانے والے بعض معاملات کو بھی کچھ دیر میں حل کر لیا جائے گا۔اس سے قبل جب وزیر اعلیٰ پنجاب چوہدری نثار کو لے کر رائے ونڈ فارم ہاﺅس پہنچتے تووزیراعظم نے آگے بڑھ کر ان کا استقبال کیا ، گلے لگالیا اور شکوہ کرتے ہوئے کہا کہ چوہدری صاحب آپ تو ناراض ہی ہو جاتے ہیں جس کے جواب میں چوہدری نثار علی خان نے کہا کہ میاں صاحب اپنوں سے ہی ناراض ہو ا جاتا ہے ۔

مزید :

لاہور -اہم خبریں -