دیوالیہ پولیس نے ’گڈے‘ کو نوکری پر رکھ لیا

دیوالیہ پولیس نے ’گڈے‘ کو نوکری پر رکھ لیا
دیوالیہ پولیس نے ’گڈے‘ کو نوکری پر رکھ لیا
کیپشن: Gudda

  

سان فرانسسکو (نیوز ڈیسک) امریکہ میں ٹریفک پولیس نے پیسے بچانے کیلئے چوکوں میں پلاسٹ کے سپاہی بٹھانے شروع کردئیے ہیں تاکہ ڈرائیور انہیں اصلی سمجھ کر تیز رفتاری سے باز رہیں۔ ریاست اوکلاہوما کی ٹریفک پولیس کا کہنا ہے کہ ان کیلئے یہ ممکن نہیں کہ ہر جگہ اپنے سپاہی کھڑے کریں لہٰذا انہوں نے پلاسٹک کا سپاہی بنا کر اسے پولیس کی گاڑی میں بٹھا کر ایک مصروف شاہرہ کے کنارے کھڑا کردیا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ تجربہ بہت کامیاب رہا اور ڈرائیوروں نے واقعی تیز رفتاری سے پرہیز کیا۔ ”پلاسٹک پوپو“ نامی اس نقلی سپاہی کا کام ویسے تو بالکل ٹھیک چل رہا تھا لیکن ایک دن ایک شرابی ڈرائیور نے اپنی تیز رفتار گاڑی اس کی گاڑی سے ٹکرادی جس سے پوپو کی گاڑی تباہ ہوگئی اور وہ خود کئی فٹ دور جاگرا۔ پولیس اس کیلئے نئی گاڑی کا بندوبست کررہی ہے تاکہ وہ ڈیوٹی پر واپس جاسکے۔ پوپو کی کامیابی کے بعد پولیس دیگر جگہوں پر بھی نقلی سپاہیوں کو متعین کرنے کے متعلق سوچ رہی ہے۔ بھارت میں بھی اسی طرح کا تجربہ کیا گیا ہے۔ جہاں بنگلور شہر کے چوکوں میں گتے کے بنے ہوئے سپاہی کھڑے کئے گئے۔ حکام کا کہنا ہے ڈرائیور دور سے انہیں اصلی سمجھ کر گاڑیاں آہستہ کرلیتے ہیں لیکن اگر بارش ہوجائے تو یہ سپاہی فوراً وہیں ڈھیر ہوجاتے ہیں۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -