ورلڈ کپ،شاہینوں کا سفر تمام!

ورلڈ کپ،شاہینوں کا سفر تمام!

بڑے بڑے دعوؤں اور یقین دہانیوں کے ساتھ ورلڈکپ مقابلوں کے لئے جو سفر شروع ہوا تھا پاکستان کے شاہینوں نے آخری میچ کھیلنے سے قبل ہی اسے ختم کر دیا ہے اور اپنی نالائقی کی قسمت دوسری ٹیموں کی ہار چیت سے وابستہ کرنے کا انجام بھی ہو گیا کہ بھارت نے انگلینڈ سے جیتا ہوا میچ جیتنے کی کوشش نہ کی اور نیوزی لینڈ نے قسمت یاوری میں ساتھ نہ دیا اور انگلینڈ ہی سے ہار گئے۔ یوں انگلینڈ سیمی فائنل میں تیسرا ملک بن گیا۔ نیوزی لینڈ کو یوں خطرہ نہیں کہ کم پوائنٹس کے باوجود اس کی پوزیشن پاکستان سے بہتر ہے کہ نیوزی لینڈ کی بیٹنگ اوسط مثبت اور کہیں زیادہ ہے۔ پاکستان کو اسے عبور کرنے کے لئے بنگلہ دیش کو جتنے واضح فرق سے ہرانا مقصود ہے وہ ممکن نہیں، اس لئے پاکستان کی ٹیم آج (جمعہ) بنگلہ دیش کے خلاف میچ عالمی کپ کے قواعد پورا کرنے ہی کے لئے کھیلے گی ورنہ جیت کر بھی نیوزی لینڈ کی بیٹنگ اوسط کا مقابلہ نہیں ہو گا اگرچہ پوائنٹ برابر ہو جائیں گے۔ابھی یہ میچ باقی اور ٹیم کی واپسی بھی ہونا ہے۔ مایوس پاکستانی شائقین نے تنقیدکا سلسلہ شروع کر دیا ہے۔ سوشل میڈیا پر تو کھلاڑیوں کو گن گن کر کوسنے دیئے جا رہے ہیں۔ اس سلسلے میں پاکستانیوں کو صبر کرنا ہو گا اور یہ دیکھنا ہو گا کہ پورے کھیل کا تجزیہ کرنے کے بعد پاکستان کرکٹ بورڈ کیا فیصلے کرتا ہے کیونکہ اب تو ورلڈکپ 2023ء میں ہونا ہے، تب تک پھر تیاری کے نام پر وہ سب ہوگا جو پہلے ہوتا رہا ہے۔ہمارے نزدیک اس عالمی کپ کے کھیل میں پاکستان کرکٹ ٹیم کے کرتا دھرتا حضرات اپنے دعوؤں پر پورے نہیں اتر سکے۔ اور صرف یہی فائدہ ہوا کہ کھلاڑیوں کی اچھی اور بری کارکردگی سامنے آئی اور اس پر غور بھی کیا جا سکتا ہے۔بہتر ہوگا کہ پاکستان کرکٹ بورڈ ٹھنڈے دل سے غور کرے، سازش اور پرچی سسٹم کی مکمل حوصلہ شکنی کرکے ”میرٹ“ کو رواج دے کہ کھیل میں جان پڑے لیکن افسوس کا مقام ہے کہ یہاں نئے تجربے شروع کر دیئے گئے ڈیپارٹمنٹل کرکٹ ختم کرکے کھلاڑیوں کو بے روزگار کر دیا گیا، اب یا تو ریجنز مالدار لوگوں کے پاس گروی رکھ دیں یا پھر دوسری صورت میں صرف اشرافیہ کی اولاد ہی کھیل سکے گی کہ نچلے درمیانہ درجہ سے نوجوان محکموں کے باعث ابھرتے تھے کہ ان کو روزگار بھی مل جاتا تھا، اب یہ ممکن نہ ہوگا۔ قوم منتظر رہے گی کہ بورڈ کیا کارروائی کرتا ہے بہرحال کوچ پارٹی اور کپتان تو فارغ ہونے کے لائق ہی ہیں۔

مزید : رائے /اداریہ