سمارٹ لاک ڈاؤن مثبت،نتائج بہترین،این سی او سی کی کارکردگی نے قوم کا سر فخر سے بلند کر دیا:وزیر اعظم،مویشی منڈیاں شہر سے 2کلو میٹر دور کھلی جگہ پر لگائی جائیں،پنجاب میں ایس او پیز جاری

سمارٹ لاک ڈاؤن مثبت،نتائج بہترین،این سی او سی کی کارکردگی نے قوم کا سر فخر ...

  

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر، مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) وزیراعظم عمران خان نے ایک مرتبہ پھر کہا ہے کہ ملک میں سمارٹ لاک ڈاؤن کے بہترین نتائج مل رہے ہیں۔تفصیلا ت کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے ہفتہ کو نیشنل کمانڈاینڈ آپریشن کے قیام کے سو روز پورے ہونے پر اس کا دورہ کیا،وزیر اعظم کی زیر صدارت نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) میں کورونا کی صورتحال پر اجلاس ہوا جس میں وفاقی وزراء، معاونین خصوصی اور آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سمیت اعلیٰ عسکری حکام بھی شریک ہوئے۔اجلاس میں نیشنل ڈیزاسٹر منیجمنٹ اتھارٹی(این ڈی ایم اے) اور محکمہ صحت کے حکام نے کورونا کی تازہ صورتحال پر بریفنگ دی۔اس موقع پر وزیراعظم کو نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کی 100 روزہ کارکردگی رپورٹ بھی پیش کی گئی۔وزیراعظم کو ملک میں سمارٹ لاک ڈاؤن کے نتائج پر بھی بریفنگ دی گئی، جس پر ان کا کہنا تھا سمارٹ لاک ڈاؤن کے بہترین نتائج موصول ہو رہے ہیں۔ وزیراعظم عمران خان نے نیشنل کمانڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) کی کارکردگی پر خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہاہے کہ این سی او سی کو اس وقت بنایاگیا جب قوم کو مشکل وقت میں رہنمائی درکار تھی،این سی او سی نے مشکل وقت میں قوم کی رہنمائی کی اور اپنی اہمیت کوثابت کیا۔اجلاس میں صوبوں نے بھی ویڈیو لنک کے ذریعے نمائندگی کی۔وزیر اعظم کو کورونا وائر س کی موجودہ صورتحال اور اسکے پھیلاؤ کے حوالے سے تفصیلی بریف کیا گیا۔ وفاقی وزیر منصوبہ بندی و ترقی اسدعمراوراین سی اوسی حکام وزیراعظم کوبریفنگ دی۔ وزیر اعظم کو بتایا گیا کہ کس طرح طے پاکستان کی سمارٹ لاک ڈاؤن حکمت عملی نتیجہ خیز ثابت ہوئی ہے جس سے وباء پر قابو پانے کیساتھ ساتھ غریب او رپسماندہ طبقے کے مسائل حل کرنے میں مدد ملی۔اجلاس کو بتایا گیا کہ آئی ایم ایف کے عالمی اقتصادی منظرنامہ میں پاکستان 30ممالک کے گروپ کی درجہ بندی میں منفی 0.4سے 1.1تک پہنچ گیا ہے۔19جولائی تا 20 مئی خطے کے دیگر ممالک کے مقابلے میں پاکستانی بر آمدات زیادہ بہتری رہی ہیں۔اس موقع پر وزیراعظم عمران خان نے کہاکہ نیشنل کمانڈاینڈآپریشن سنٹر نے قوم کا سرفخر سے بلند کردیا۔وزیراعظم نے ایس او پیز کے بعد نئی صورتحال میں خود ڈھالنے اور ایک قوم بن کر چیلنج کا مقابلہ کرنے پر عوام کی تعریف کی۔انہوں نے کورونا وائرس کیخلاف فرنٹ لائن پر لڑنیوالے ڈاکٹرز،پیرامیڈیکل سٹاف،ایمرجنسی ورکرز کو خراج تحسین پیش کیا۔ وائرس کے پھیلاؤ میں کمی کا ذکر کرتے ہوئے وزیر اعظم نے ایس او پیز پر سختی سے عملدرآمد یقینی بنانے کی ہدایات جاری کیں اورکہا کہ سمارٹ لاک ڈاؤن پر عملدرآمد کرانے اور عوام میں کورونا وائرس کے حوالے سے آگاہی پیدا کیلئے تمام ضروری انتظامی اقدامات بروئے کار لائے جائیں تاکہ خاص طور پر عیدالاضحی کے دوران وباء کو پھیلنے سے روکا جاسکے۔ وزیر اعظم نے آزادکشمیر،گلگت بلتستان سمیت چاروں صوبوں میں ہیلتھ کئیر ورکرز،ایمرجنسی ورکرز اور انتظامی ٹیموں کے کردار اور خدمات کا بھی اعتراف کیا اور انہیں سراہا۔انکا کہنا تھاملک میں سمارٹ لاک ڈاؤن کے مثبت اثرات سامنے آنے لگے، ملک میں صحتمند افراد کی تعداد کورونا وائرس کے مریضوں سے بھی زیادہ ہو گئی۔ گزشتہ 24گھنٹوں کے دوران 11471 افراد نے وباء کو شکست دی۔این سی او سی کے 100 دن مکمل ہونے پر وزیر اعظم عمران خان نے مختلف محکموں، تنظیموں کی اہمیت کو تسلیم کرتے ہو ئے کہا کہ یہ ادارے کوروناپر قابو پانے کیلئے جاری کوششوں میں انتھک محنت کر رہے ہیں۔کورونا وبا کیخلاف کوششوں میں ڈاکٹروں، نرسوں، پیرامیڈکس، لیب ٹیکنیشنز، پولیس، ڈسٹرکٹ ایڈمنسٹریشن، ہنگامی جواب دہندگان، رورل سپورٹ پروگرامز نیٹ ورک، آئی ٹی پروفیشنلز، سمیت مختلف وزارتوں، تمام صوبوں، اے جے کے، جی بی اور آئی سی ٹی کے نمائندے شامل ہیں۔

وزیراعظم

لاہور،کراچی(خبر نگار، سٹاف رپورٹر،نیوز ایجنسیاں)پنجاب حکومت نے کورونا وائرس کے پیش نظر عید الاضحی پر مویشی منڈیوں کیلئے ایس او پیز جاری کردیے،محکمہ صحت پنجاب نے منڈی آنیوالے ہر فرد پر ماسک اور گلوز کا استعمال لازمی قرار دیا ہے۔ سیکرٹری صحت نے ہدایت کی ہے کہ مویشی منڈیاں کھلی جگہ اور شہر سے کم از کم 2 کلو میٹر دور لگائی جائیں۔ سیکر ٹر ی صحت کے مطابق باڑے، انتظامی دفاتر اور میڈیکل کیمپ کھلے، داخلی اور خارجی راستے الگ الگ رکھے جائیں جبکہ ایک گاڑی میں 2 افراد کو آنے کی اجازت ہوگی۔محکمہ صحت پنجاب کے مطابق منڈی میں بچوں، بزرگوں اوربیمار افراد کے داخلے پر پابندی ہوگی۔دوسری طرف عید الاضحی سے قبل لاہور شہر میں چودہ مویشی منڈیوں کی تیاریاں مکمل کرلی گئی ہیں اور ان کے قیام کیلئے اراضی کی نشاندہی کا عمل مکمل کرلیا گیا ہے تمام منڈیاں شہری آبادی سے دس سے پینتالیس کلو میٹر فاصلے پر لگیں گی۔ میٹروپولیٹن کارپوریشن نے کمشنر لاہور و ایڈمنسٹریٹر ایم سی ایل کو فہرست ارسال کردی۔تفصیلات کے مطابق شہر کی چودہ مویشی منڈیوں میں 13 لاکھ 34ہزار چھوٹے جبکہ 3 لاکھ 15 ہزار بڑے جانوروں کی گنجائش ہو گی، واہگہ زون میں گیارہ سو کنال پر محیط لکھو ڈیر رنگ کے مقام پر مویشی منڈی لگے گی لکھوڈیرمنڈی میں 24 ہزار 700 چھوٹا جانور جبکہ 99 ہزار بڑے جانوروں کی گنجائش ہو گی۔ نشتر زون میں منڈیاں پرانا کاہنہ فیروزپور روڑ 63 سو کنال اراضی پر ایک لاکھ 41 ہزار جبکہ 5 لاکھ 67 ہزار چھوٹے جانوروں کی گنجائش ہے،پائن ایونیو روڑ پر 700 کنا ل پرمویشی منڈی لگے گی، منڈی میں 65 ہزار چھوٹے جبکہ 16 ہزار بڑے جانوروں کی گنجائش ہوگی۔ فروٹ ویجیٹیبل مارکیٹ کاچھا میں 800 کنال پر مویشی لگے گی جہاں 72 ہزار چھوٹا جانور جبکہ18ہزار جانور لایا جاسکے گا، گلبرگ زون میں ڈی ایچ اے فیز نائن 23 سو کنال پر محیط منڈی لگے ڈی ایچ اے منڈی میں 2لاکھ 7 ہزار چھوٹے جبکہ 51 ہزار 750 بڑے جانوروں کی خریداری ہوسکے، کاہنہ کاچھا روڑ پر 300 کنال اراضی پر مویشی منڈی لگے گی کاہنہ کاچھا روڑ پر لگنے والی منڈی میں 27 ہزار چھوٹے جبکہ 6 ہزار 750 بڑے جانوروں کی خریداری ہوسکے گی۔ادھرشہر قائد کراچی کے ضلع غربی، جنوبی اور ملیر کے بعد ضلع شرقی میں بھی لاک ڈاؤن کی باری آگئی۔ ڈپٹی کمشنر ضلعی شرقی نے 7 یونین کونسلز میں سمارٹ لاک ڈاؤن لگا دیا۔کورونا وائرس کے باعث گلشن اقبال ٹاؤن 6 اور جمشید ٹا ؤن کی ایک یوسی میں سمارٹ لاک ڈاؤن لگا دیا گیا، متاثرہ یوسیز میں ایس او پیز پر سختی سے عمل درآمد کروایا جائے گا۔ میڈیکل اور گروسری سٹور کے علاوہ تمام کاروباری سرگرمیاں معطل رہیں گی۔نوٹیفکیشن کے مطابق متاثرہ علاقوں میں سمارٹ لاک ڈاؤن کا اطلاق آج سے شروع ہے جو 18 جولائی تک جاری رہے گا۔

مویشی منڈیاں

اسلام آباد، لاہور، کراچی، پشاور، مظفر آباد، گلگت بلتستان (سٹاف رپورٹرز،مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں)ملک میں کورونا سے مزید 88 افراد جاں بحق ہوگئے جس کے بعد اموات کی مجموعی تعداد 4680 ہوگئی جبکہ نئے کیسز سامنے آنے کے بعد مریضوں کی تعداد 227254 تک پہنچ گئی۔اب تک پنجاب میں کورونا سے 1844 اور سندھ میں 1501 افراد انتقال کرچکے ہیں جبکہ خیبر پختونخوا میں 1020 افراد جاں بحق ہو چکے ہیں۔اس کے علاوہ اسلام آباد میں 130، بلوچستان میں 123، آزاد کشمیر میں 34 اور گلگت بلتستان میں 28 افراد جاں بحق ہو چکے ہیں۔ بروز ہفتہ ملک بھر سے کورونا کے مزید 3475 کیسز اور 88 ہلاکتیں رپورٹ ہوئیں جن میں سندھ سے 1585 نئے مریض اور 42 اموات، پنجاب سے 1341 کیسز 25 ہلاکتیں، خیبر پختونخوا سے 337 کیسز 18 اموات، اسلام آباد97 کیسز ایک ہلاکت، آزاد کشمیر 54 کیسز ایک ہلاکت، بلوچستان سے 49 کیسز 1 ہلاکت اور گلگت بلتستان سے 12 کیسز سامنے آئے۔پنجاب سے کورونا کے مزید 1341کیسز اور 25 ہلاکتیں سامنے آئیں جن کی تصدیق پی ڈی ایم اے کی جانب سے کی گئی ہے۔صوبائی ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی کے مطابق پنجاب میں کورونا سے متاثرہ مریضوں کی تعداد 80297 اور ہلاکتیں 1844 ہوگئی ہیں۔پنجاب میں اب تک کورونا سے 42584 افراد صحت یاب ہوچکے ہیں۔وفاقی دارالحکومت سے کورونا کے مزید 97 کیسز اور ایک ہلاکت سامنے آئی جس کی تصدیق سرکاری پورٹل پر کی گئی۔پورٹل کے مطابق اسلام آباد میں کیسز کی مجموعی تعداد 13292 اور اموات 130 ہوچکی ہیں۔اسلام آباد میں اب تک کورونا وائرس سے 8610 افراد صحت یاب ہو چکے ہیں۔آزاد کشمیر سے آج کورونا کے مزید 54 کیسز اور ایک ہلاکت سامنے آئی جو سرکاری پورٹل پر رپورٹ کی گئی ہیں۔پورٹل کے مطابق آزاد کشمیر میں کورونا کے کل کیسز کی تعداد 1214 اور اموات کی تعداد 34 ہے۔سرکاری پورٹل کے مطابق آزاد کشمیر میں کورونا سے متاثرہ 686 افراد صحت یاب ہو چکے ہیں۔گلگت بلتستان سے کورونا کے مزید 12 کیسز سامنے آئے ہیں جو سرکاری پورٹل پر رپورٹ کی گئی ہیں۔پورٹل کے مطابق علاقے میں کیسز کی کل تعداد 1536 اور اموات 28 ہوگئی ہیں۔گلگت میں کورونا سے اب تک 1185 افراد صحتیاب بھی ہوچکے ہیں۔سندھ سے ہفتے کو کورونا کے 1585 نئے مریض اور 42 اموات سامنے آئیں جس کی تصدیق وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے کی۔مراد علی شاہ کے مطابق صوبے میں کورونا کے مریضوں کی تعداد 92306 اور ہلاکتیں 1501 ہوگئی ہیں۔وزیراعلیٰ نے بتایا مزید 1480 مریض صحتیاب ہوئے جس سے صحتیاب ہونے والوں کی تعداد 52388 ہوگئی ہے۔خیبر پختونخوا میں ہفتے کو کورونا وائرس سے مزید 18 افراد جاں بحق ہوگئے جس کے بعد صوبے میں ہلاکتوں کی تعداد 1020 ہوگئی۔صوبائی محکمہ صحت کا کہنا ہے کہ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران مزید 337 افراد میں مہلک وائرس کی تشخیص ہوئی ہے جس کے بعد صوبے میں متاثرہ مریضوں کی تعداد 27843 تک پہنچ گئی ہے۔اب تک صوبے میں 16242 افراد کورونا وائرس سے صحت یاب بھی ہو چکے ہیں۔بلوچستان میں ہفتے کو کورونا کے مزید 49کیسز رپورٹ ہوئے جس کے بعد صوبے میں کورونا کے مصدقہ کیسز کی 10766 ہوگئی۔بلوچستان میں کورونا سے مزید ایک شخص ہلاک ہوگیا جس کے بعد جاں بحق ہونیوالے افراد کی تعداد 123 ہوگئی جبکہ صحت یاب ہونیوالوں کی تعداد 5688 ہے۔ادھردنیا بھر میں کورونا وائرس سے چوبیس گھنٹوں میں 27سوسے زائد اموات کے بعد مجموعی ہلاکتوں کی تعداد بڑھ کر 5لاکھ 32ہزار سے تجاوز کر گئی،ایک لاکھ 14ہزارسے زائد نئے کیسز رپورٹ ہونے سے مریضوں کی تعداد بڑھ کر ایک کروڑ12لاکھ 94ہزار سے بھی تجاوز کر گئی۔گزشتہ روز وباء سے میکسیکو میں 670،بھارت میں 610، عراق میں 115،ایران میں 155، روس میں 175، امریکہ میں 195، برازیل میں 170اموات رپورٹ ہوئیں، یورپی ممالک میں بھی مجموعی طور پر ایک ہزار سے زائد نئی اموات رپورٹ ہوئیں تاہم وباء کا زور قدرے کم رہا، تاہم بھارت میں کورونا وائرس قابو سے باہر ہونے لگا جہاں ایک ہی روز میں 23 ہزار سے زائد نئے کیسز سامنے آئے۔بھارتی میڈیا کے مطابق کورونا وائرس کے دوران یہ اب تک دوسری مرتبہ ایک ہی دن میں سب سے زیادہ کیسز کی تعداد ہے اور ملک میں یکم جون سے اب تک کورونا کے 4 لاکھ سے زائد کیسز رپورٹ ہوچکے ہیں۔بھارتی میڈیا کا بتانا ہے گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 22 ہزار 771 نئے کیسز سامنے آنے سے ملک میں کیسز کی کل تعداد 6 لاکھ 48 ہزار سے تجاوز کرگئی ہے جبکہ گزشتہ 24 گھنٹوں میں ہی 442 افراد ہلاک بھی ہوچکے ہیں۔بھارتی وزیر صحت کے مطابق ملک میں کورونا سے ہلاک ہونیوالوں کی تعداد 18600 سے بھی تجاوز کرگئی ہے جبکہ اب تک 3 لاکھ 94 ہزار سے زائد مریض صحتیاب بھی ہوچکے ہیں۔بھارتی وزارت صحت کے مطابق ریاست مہاراشٹرا کورونا سے بری طرح متاثر ہے جہاں کل کیسز کی تعداد تقریباً ایک لاکھ 93 ہزار ہے جبکہ ہلاکتیں 8376 تک جا پہنچی ہے۔بھارتی دارالحکومت نئی دہلی بھی کورونا وائرس کی لپیٹ میں ہے جہاں گزشتہ ہفتے ایک روز کے دوران سب سے زیادہ 3947 کیسز سامنے آئے جس سے صرف دہلی میں کیسز کی تعداد 94000 تک جا پہنچی ہے جبکہ اب تک 2923 افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔بھارتی وزارت صحت کے مطابق گجرات میں ایک روز میں سب سے زیادہ 687 کیسز کے ساتھ کل کیسز 34000 اور ریاست آسام میں ایک روز میں 1900 کیسز کے بعد کل مریضوں کی تعداد 9799 ہوگئی ہے۔بھارتی میڈیا کا بتانا ہے کہ ملک میں بڑی تعداد میں کورونا کیسز سامنے آنے سے بھارت دنیا بھر میں سب سے زائد کیسز والے ممالک میں چوتھے نمبر پر ہے۔

کورونا اموات

مزید :

صفحہ اول -