شفقت محمود کی وزارات اور فوزیہ سعید کی بطور چیئرمین پی این سی اے تعناتی چیلنج

شفقت محمود کی وزارات اور فوزیہ سعید کی بطور چیئرمین پی این سی اے تعناتی چیلنج

  

اسلام آباد (این این آئی)وفاقی وزیر شفقت محمود کو بطور وزیر برائے قومی تاریخ و ادبی ورثہ کام سے روکنے کی اسلام آباد ہائی کورٹ میں درخواست دائرکر دی گئی، ڈائریکٹر جنرل پاکستان نیشنل کونسل آف آرٹس ڈاکٹر فوزیہ سعید کی تعیناتی بھی چیلنج کر دی گئی،اسلام آباد ہائی کورٹ نے وفاق کو نوٹس جاری کرکے دو ہفتے میں جواب طلب کرلیا۔ ہفتہ کو جسٹس میاں گل حسن اورنگزیب نے درخواست پر تحریری حکم جاری کر دیا۔عدالت نے وفاقی وزیر شفقت محمود، اسٹیبلشمنٹ ڈویژن، سیکرٹری قومی ورثہ،نیب،فوزیہ سعید کو نوٹس جاری کر دیا گیا۔ درخواست میں موقف اختیار کیاگیاکہ ڈاکٹر فوزیہ سعید کی بطور چیئرمین تعیناتی وفاقی وزیر نے کی، وفاقی وزیر کو ایم پی ون سکیل میں تعیناتی کا اختیار نہیں، ڈاکٹر فوزیہ سعید تعیناتی کے لیے وضع کردہ معیار پر پورا نہیں اترتیں۔ ڈاکٹر فوزیہ سعید کی بطور چیئرمین پی این سی اے تعیناتی کالعدم قرار دی جائے، قومی تاریخ و ادبی ورثہ کا ادارہ اٹھارویں ترمیم کے بعد صوبوں کو منتقل ہو چکا ہے۔ استدعا کی گئی کہ قومی تاریخ و ادبی ورثہ کا وفاق کا ادارہ ختم کرکے شفقت محمود کو کام سے روکا جائے۔ چیئرمین پی این سی اے کی غیر قانونی تعیناتی پر شفقت محمود کا کیس نیب کو بھیجا جائے۔ درخواست گزار شہری عبدالطیف قریشی نے جی ایم چوہدری ایڈووکیٹ کے ذریعے درخواست دائر کی۔

تعیناتی چیلنج

مزید :

صفحہ آخر -