2018 میں جس شخص کو جعلی فلائنگ لائسنس کے ذریعے پاکستان کی معیشت کے جہاز پہ کپتان بناکے بٹھایا گیا اسکا لائسنس۔۔۔احسن اقبال نے ایسی بات کہہ دی کہ حکمران جماعت میں  کوئی تصور بھی نہ کر سکےگا

2018 میں جس شخص کو جعلی فلائنگ لائسنس کے ذریعے پاکستان کی معیشت کے جہاز پہ ...
2018 میں جس شخص کو جعلی فلائنگ لائسنس کے ذریعے پاکستان کی معیشت کے جہاز پہ کپتان بناکے بٹھایا گیا اسکا لائسنس۔۔۔احسن اقبال نے ایسی بات کہہ دی کہ حکمران جماعت میں  کوئی تصور بھی نہ کر سکےگا

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان مسلم لیگ (ن) کے رہنما اور سابق وزیر داخلہ احسن اقبال نے کہا ہے کہ جب سے یہ حکومت برسراقتدار آئی ہے اس نے ایک ایک کرکے پاکستان کے ہر صوبے کو تباہی سے دوچار کیا ہے ،2018 میں جس شخص کو جعلی فلائنگ لائسنس کے ذریعے پاکستان کی معیشت کے جہاز پہ کپتان بناکے بٹھایا گیا اسکا لائسنس کینسل ہونا چاہیے.

نجی ٹی وی کے مطابق میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے احسن اقبال نے کہا کہ اس حکومت کی ترجیح تعلیم نہیں بلکہ اپنے مخالفین کے خلاف انتقامی کاروائی ہے ،یہ نفرت حسد انا اور جھوٹ کے علاوہ کوئی پروگرام نہیں رکھتی.انہوں نے کہا کہ آج پاکستان کی ہر یونیورسٹی بدترین مالی خسارے کا شکار ہوچکی ہے، آج پاکستان کی یونیورسٹیاں اپنے پروفیسرز اور سٹاف کی تنخواہیں کم کرنے پہ مجبور ہوگئی ہیں لیکن دوسری طرف وزیروں کی فوج کیلیے تنخواہوں اور مراعات کی کوئی کمی نہیں ہے.انہوں نے کہا کہ ساؤتھ پنجاب میں بہاولپور کی اسلامیہ یونیورسٹی کے اولڈکیمپس کو خالی کرایاجارہاہےتاکہ وہاں پر یہ حکومت کا سیکرٹریٹ قائم کریں،میں اس اقدام کی مذمت کرتا ہوں.احسن اقبال کا کہنا تھا کہ معیشت کی کمزوری سے ہماری دفاعی صلاحیت کے اوپر سوالیہ نشان لگ چکا ہے،دوسری طرف جو عوام کی سیکیورٹی ہےاس پربھی بہت بڑا سوالیہ نشان لگ چکا ہے،2018 میں جس شخص کو جعلی فلائنگ لائسنس کے ذریعے پاکستان کی معیشت کے جہاز پہ کپتان بناکے بٹھایا گیا اسکا لائسنس کینسل ہونا چاہیے.

مزید :

قومی -