رکشہ ڈرائیوروں کی احساس پروگرام سے مدد کی جائے،مجید غوری

رکشہ ڈرائیوروں کی احساس پروگرام سے مدد کی جائے،مجید غوری

  

لاہور(پ ر) عوامی رکشہ یونین و عوامی پاسبان کے مرکزی چیئرمین مجیدغوری نے کہا ہے کہ رکشہ ڈرائیوروں کے گھروں میں فاقے ہیں۔احساس پروگرام سے بھرپور مدد کی جائے۔لوڈ شیڈنگ سے گھر میں رہ کر خاندان کی کفالت کرنے والی خواتین بھی بے روزگار ہو گئی ہیں۔ہم نے اس عمران خان کو ووٹ دے کر وزیر اعظم بنایا تھا جو کہتا تھا۔ میری حکومت میں ہر چیز سستی اور غریبوں سے ٹیکس نہیں لیا جائے گا۔ اب تو ساری گنگا ہی الٹی بہہ رہی ہے۔ 

جمعرات کو  8جولائی کو منار پاکستان میں مہنگائی اور لوڈ شیڈنگ کے خلاف احتجاجی کیمپ لگائیں گے۔ جہاں میاں شہباز شریف کو خصوصی طور پر شرکت کی دعوت دیں گے کیونکہ لوڈشیڈنگ کے خلاف کیمپ لگانے کی روایت انہوں نے ڈالی تھی، سراج الحق، بلاول بھٹو،مولانافضل الرحمان، مزدور، وکلاء، ڈاکٹرز، کسان اور تاجر تنظیموں کے نمائندوں کو شرکت کی دعوت دی جائے گی۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز واحدت روڈ پر بہت بڑے احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ جس میں عورتوں اور بچوں کی بہت بڑی تعداد شامل تھی۔ خواتیں گھریلو استعمال کے برتن اٹھا رکھے تھے۔جو مہنگائی، بے روزگاری اور لوڈ شیڈنگ کے خلاف نعرے بازی کر رہے تھے۔مجید غوری کا کہنا تھا کہ گھریلو اخراجات پورے نا ہونے کی وجہ سے خاندانی جھگڑے عام اور طلاقوں کی شرح میں کئی گنا اضافہ ہوچکا ہے۔غریب مزدوروں کی بچیاں شادی عمر کو پہنچ چکی لیکن جہیز نا ہونے کی وجہ گھروں میں بیٹھی کسی مسیحا کی منتظر ہیں۔گورنمنٹ کہتی ہے کہ احساس پروگرام غریبوں کے لئے ہے۔ لیکن غریبوں کو کچھ نہیں مل رہا۔ بے روزگاری کی وجہ سے نوجوان چوری، ڈکیتی، راہ زنی کی وارداتوں میں ملوث ہورہے ہیں۔ تمام رکشہ ڈرائیوروں کو احساس پروگرام میں شامل کیا جائے اور اس کی رقم بھی بڑھائی جائے۔لوڈ شیڈنگ اور بے روزگاری کا خاتمہ اور اشیاء  خوردونوش اور پٹرولیم مصنوعات سستی کی جائیں۔

جاری کردہ عوامی رکشہ یونین پاکستان

03218492273

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -