برآمدات بڑھانے کیلئے بھرپور اقدامت کئے جائیں: پرویز حنیف

     برآمدات بڑھانے کیلئے بھرپور اقدامت کئے جائیں: پرویز حنیف

  

 لاہور(سٹی رپورٹر)کارپٹ ٹریننگ انسٹی ٹیوٹ کے چیئر پرسن و سابق صدر لاہور چیمبرآف کامرس اینڈ انڈسٹری پرویز حنیف نے کہا ہے کہ برآمدات میں اضافے کے لئے حکومتی پالیسی میں بہت سے سقم موجود ہیں،ریسرچ اور سٹڈی نہ ہونے کی وجہ سے بہت سے ممالک کی مارکیٹیں ابھی تک ہماری نظروں سے اوجھل ہیں  جنہیں تک رسائی کیلئے پیشرفت نا گزیر ہے،برآمدات کے فروغ کیلئے چین سمیت دیگر ممالک کے ساتھ بینکنگ چینل کو فروغ دیا جائے۔اپنے دفتر میں کارپٹ مینو فیکچررز اورایکسپورٹرز کے وفد سے ملاقات کے دوران گفتگو کرتے ہوئے پرویز حنیف نے کہا کہ بیرون ممالک سفارتخانے پاکستانی مصنوعات کی تشہیر، مارکیٹنگ اور برآمدات میں اضافے کے لئے غیر معمولی کردار ادا کرسکتے ہیں لیکن بد قسمتی سے ان کیلئے باضابطہ کوئی پالیسی تشکیل دے کر اہداف مقررنہیں کئے جاتے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کے ہاتھ سے بنے قالینوں کی برآمدات کیلئے چین ایک بڑی مارکیٹ ثابت ہو سکتا ہے اس لئے اس جانب توجہ مرکوز کی جائے۔ انہوں نے کہا کہ ہاتھ سے بنے قالینوں اور دوسری مصنوعات کی برآمدات میں فرق ہے۔

،ہاتھ سے بنے قالینوں کا شمار ایسی مصنوعات ہے  جس کیلئے ہمیں دوسرے ممالک کے لوگوں کو اپنے معیار اور ڈیزائن کے ذریعے راغب کرنا ہے اس لئے اس کا ڈسپلے ہونا اہمیت رکھتا ہے۔ متعلقہ ادارے اپنی ویب سائٹس پر اس کا الگ سے پویلین بنائیں اور بیرون ممالک ائیر پورٹس پر اور بڑے مالزمیں بھی اس کے لئے اس کے لئے پویلین حاصل کئے جائیں۔پرویز حنیف نے کہا کہ  حالیہ 6سے7سالوں میں ہاتھ سے بنے قالینوں کی برآمدات میں غیر معمولی کمی تشویش کاباعث ہے اس لئے حکومت سے مطالبہ ہے اس صنعت کے مسائل حل کئے جائیں تاکہ دنیا میں پاکستان کی منفرد پہچان بر قرار رہ سکے۔

مزید :

کامرس -