نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی میں ہندوتواکے اثرات پرعالمی کانفرنس کل ہو گی

نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی میں ہندوتواکے اثرات پرعالمی کانفرنس کل ہو گی

  

اسلام آ باد(آئی این پی)نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی اسلام آ باد بھارت میں ہندوتوا کے فروغ اور اس کے علاقائی سلامتی پر اثرات کے حوالے سے 6جولائی سے 7جولائی تک دو روزہ اعلی سطح کی عالمی کانفرنس کا انعقاد کیا جا رہا ہے اس دو روزہ کانفرنس کا افتتاح صدر مملکت ڈاکڑ عارف علوی کریں گے۔کانفرنس میں دنیا کی معروف یونیورسٹیوں اور تھنک ٹینکس سے بین لاقوا می امور کے سکالرز اور ماہرین ہندتوا کے فروغ اور علاقائی سلامتی پر اس کے اثرات کے حوالے سے تحقیقاتی مقالہ جات پیش کریں گے  کانفرنس کا اہم مقصد عالمی سطح پر دائیں بازو کی انتہاپسندی کے فروغ اور جنوبی ایشیا میں موجود اس کی مختلف شکلوں کا جائزہ لینا ہے اور یہ دیکھنا ہے کہ بنیاد پرستی کی اس نئی شکل جس کوہندوتوا کہا جاتا ہے کے علاقائی سلامتی پر کیا اثرات مرتب ہوتے ہیں۔بھارت میں ہندوتوا کے تحت بڑھتی ہوئی انتہا پسندی پر غور علاقائی سلامتی کے جائزے کے لئے ناگزیر ہے۔کانفرنس میں بین لاقوامی تعقات اور امور کے ممتاز سکالرز اور ماہرین بشمول یونیورسٹی آ ف میری لینڈ امریکہ سے پروفیسر آرائی کروگلانسکی، چنگخوا یونیورسٹی چین سے پروفیسر شیئے چا، نائف عرب یونیورسٹی آ ف سیکورٹی اسٹڈیز سے پروفیسر میزان بن اسلم، تہران یونیورسٹی سے اومد بیبیلیان، نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی سے ڈاکٹر لبنی عابد علی اور امریکہ کے ووڈرو ولسن سنٹر سے پروفیسر مائیکل کوگلمین اور چین کی سیچوان یونیورسٹی سے پروفیسر چھیو یانگ خوئی سمیت جنوبی ایشیا کے امور کے ماہرین اپنے تحقیقاتی مقالہ جات پیش کریں گے۔

کانفرنس

مزید :

صفحہ آخر -