امریکہ بھر میں یوم آزادی کاجشن محتاط طریقے سے منایا گیا، وائٹ ہاؤس کی تقریب میں ایک ہزار مہمانوں کی شرکت

  امریکہ بھر میں یوم آزادی کاجشن محتاط طریقے سے منایا گیا، وائٹ ہاؤس کی ...

  

 واشنگٹن (اظہر زمان، خصوصی رپورٹ) امریکہ بھر میں 4جولائی اتوار کے روز یوم آزادی کا جشن محتاً طریقے سے منایا گیا۔ اس سلسلے میں سب سے بڑی دعوت وائٹ ہاؤس کے جنوبی لان میں ہوئی جس میں ایک ہزار مہمانوں نے شرکت کی۔ وائٹ ہاؤس کے مطابق صدر بائیڈن کے اقتدار سنبھالنے کے پانچ ماہ بعد پہلی مرتبہ اتنی بڑی سرکاری تقریب منعقد ہوئی ہے۔ جو دراصل ”کووڈ19-“ کو کنٹرول کرنے پر اظہار مسرت ہے۔ اس وقت امریکہ میں کرونا وائرس خاتمے کے قریب ہے جہاں اب بھی اوسطاً دوسو کے قریب روزانہ اموات ہو رہی ہیں۔ اس ضیافت کے بعدواشنگٹن ڈی سی کے نیشنل مال پر روایتی انداز میں آتش بازی کا سب سے بڑا مظاہرہ ہوا اور جشن آزادی کی  پریڈ ہوئی۔ ملک کے عام شہروں اور قصبوں میں عام شہریوں نے اس چھٹی کے روز خاندان اور دوستوں کے ساتھ مل کر دعوتیں کیں اور رات کو آتش بازی کے مظاہرے اور جشن آزادی کی پیریڈوں کو بڑی تعداد میں جمع ہوکر وائٹ ہاؤس کی پریس ترجمان جین ساکی نے بتایا ہے کہ وائٹ ہاؤس میں شرکت کرنے والے تمام مہمانوں کو ویکسین لگ چکی تھی یا ان کا ٹیسٹ منفی  تھا۔ صدر بائیڈن اور خاتون اول جل بائیڈن نے جشن آزادی کی تقریب کی میزبانی کی جس میں نائب صدر کملاہیرس، کابینہ کے ارکان، اعلیٰ فوجی افسران اور ان کے خاندانوں نے شرکت کی۔ سابق صدر ٹرمپ نے بھی چارجولائی کو جشن آزادی کے سلسلے میں فلوریڈا میں ایک دعوت کا اہتمام کیا اور ایک روز قبل ایک ریلی سے خطاب کیا جس میں اس کے ہزاروں حامیوں نے شرکت کی۔ انہوں نے اس موقع پر نیویارک کے پراسیکیوٹرز اور جیوری کی طرف ان کی کمپنی ”ٹرمپ آرگنائزیشن“ اور کمپنی کے فنانشل آفیسر ایلن ویسل برگ پرفرد جرم عائد کرنے کی مذمت کی اور الزامات کو تسلیم کرنے سے انکار کردیا۔

امریکہ جشن

مزید :

صفحہ اول -