محکمہ ہیلتھ کی غفلت، پنجاب میں کورونا ٹیسٹنگ کٹس کا بحران پیدا ہونے کا خدشہ

محکمہ ہیلتھ کی غفلت، پنجاب میں کورونا ٹیسٹنگ کٹس کا بحران پیدا ہونے کا خدشہ

  

 لاہور (جنرل رپورٹر)پنجاب میں محکمہ پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کی سستی اور غفلت کی وجہ سے صوبے میں کورونا ٹیسٹنگ کا بحران کا خدشہ پیدا ہو گیا ہے۔ محکمہ پرائمری ہیلتھ نے اس سلسلے میں ابھی تک نئی خریداری کے ٹینڈرز ہی فائنل نہیں کیے۔ معلوم ہوا ہے محکمہ صحت نے ایک رٹ پٹیشن کی آڑ میں خریداری کے ٹینڈرز کو روکا ہوا ہے حالانکہ اس سلسلے میں تمام مراحل طے ہو چکے ہیں مگر محکمہ ہیلتھ،کورٹ کیس کی آڑ میں خریداری کو اکتوبر تک لٹکانا چاہتاہے جبکہ دوسری طرف محکمہ کے ذرائع کے مطابق کورونا ٹیسٹنگ کی کٹس محدود تعداد میں موجود ہیں جسے صر ف ایمرجنسی معاملات میں ہی استعمال کیا جا سکتا ہے۔ محکمہ ذرائع کا کہنا ہے کہ کورونا ٹیسٹ کرنے کیلئے کٹس بروقت نہ خریدی گئیں تو  پنجاب بھر میں بڑا بحران پیدا ہو جائے گا۔ محکمہ صحت کے ترجمان کا کہنا ہے ک کورونا وائرس کا ٹیسٹ کرنیوالی کٹس ہرہسپتال میں موجود ہیں ہیں، آئندہ مالی سال کی خریداری کیلئے ٹینڈرز فائنل ہونیوالے ہیں ایک کمپنی نے عدالت سے حکم امتناعی حاصل کر رکھا ہے اسے ختم کرانے کی کوشش کر رہے ہیں اس کے فوری بعد کٹس کی خریداری کا مرحلہ شروع ہو جائے گا، بحران پیدا نہیں ہونے دیں گے۔ دوسری طرف ماہرین کا کہنا ہے کہ کورونا وائرس کی چوتھی لہرآئی تو پنجاب کے پاس ٹیسٹ کیلئے سازوسامان نہیں ہوگا۔

 ٹیسٹنگ کٹس

مزید :

صفحہ اول -