پختون کلچر میں جرگہ سسٹم کو جج کی حیثیت حاصل ہے: عمران شاہد

پختون کلچر میں جرگہ سسٹم کو جج کی حیثیت حاصل ہے: عمران شاہد

  

 بنوں (نمائندہ خصوصی)ڈی پی او بنوں عمران شاہد نے ڈی آر سی بنوں میں منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ پختون کلچر میں جرگہ سسٹم کو جج کی حیثیت حاصل ہے ڈی آر سی بھی پختون جرگہ سسٹم کی ایک کڑی ہے جہاں باہمی رجامندی اور جرگہ سسٹ کے طرز پر عوامی تنازعات کو حل کیا جاتا ہے عوام کو تھانہ کچہریوں کے چکروں سے نجات دلانے کیلئے ڈسٹرکٹ ریزولوشن کونسل کا قیام عمل میں لایا گیا ہے جسکی وجہ سے عوام کو فوری اور گھر کی دہلیز پر سستا انصاف مہیا ہورہا ہے ڈی آر سی نظام پختون روایات کے مطابق ہے اور جرگہ سسٹم آج سے ہزروں سال پہلے کی ہے جو بغیر کسی معاوضے کے تنازعات حل کرتے ہیں ڈی آرسی کو خیبر پختونخوا پولیس نے ایکٹ سیکشن73کے تحت قانونی تحفظ دیا ہے اور اس کے فیصلے عدالتیں تسلیم کررہی ہیں تنازعہ حل کرنے کے بعد دونوں فریقین سے باقاعدہ دستخط لئے جاتے ہیں۔اس موقع پر چیئرمین ڈی آر سی بنوں سکندر خنا نے ڈی پی او بنوں کو وائس چیئرمین ملک شیروز خان ودیگر ممبران کی موجودگی میں بریگنگ دی اور کہا کہ تنازعات حل کونسل وکلاء،ریٹائرڈ پولیس آفسران اور محکمہ مال کے ریٹائرڈ ملازمین پر مشتمل ہے ڈی آر سی بنوں کا قیام 2014کو عمل میں لایا گیا ہے اور گذشتہ چھ ماہ کے دوران ڈی آر سی بنوں نے مختلف نوعیت کے310تنازعات بلا امتیاز حل کئے ہیں جن میں اراضی کے حوالے سے 108،مکانات کے حوالے سے24دکانات کے حوالے سے8گاڑیوں کے حوالے سے4رقم لین دین کے حوالے سے118پاسپورٹ ویزہ کے حوالے سے ایک،گھریلو تنازعات کے حوالے سے16اور26متفقر تنازعات حل کئے گئے ہیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -