تھانے میں بند گاڑیوں کے قیمتی پرزے فروخت کرنیکاانکشاف

   تھانے میں بند گاڑیوں کے قیمتی پرزے فروخت کرنیکاانکشاف

  

ملتان (وقائع نگار) ملتان میں چوری اور ٹمپرڈ شدہ گاڑیوں کو فروخت کرنیکے سکینڈل بارے سابق محرر ممتاز آباد اشفاق ملہی نے تھانے کے مال مقدمہ کے طور پر بند  ٹرک کو بھی غائب کر دیا۔جبکہ تحقیقاتی ٹیم نے مذکورہ ٹرک بھی برآمد کرلیا۔ہیڈ کانسٹیبل کا تھانے میں سے بند گاڑیوں کا قیمتی سامان فروخت کرکے لاکھوں روپے مالیت سے بھینسوں کا بھانے  بنانے کا انکشاف ہوا ہے۔جبکہ سابق ہیڈ کانسٹیبل اور شو روم مالک تاحال پولیس کی گرفت سے آزاد چلے آرہے ہیں۔گرفتار تھانیدار کو کل (منگل) کو جسمانی ریمانڈ ختم ہونے پر عدالت میں پیش کیا جائے گا۔باوثوق ذرائع سے معلوم ہوا ہے تھانہ ممتاز آباد کا سابق محرر اشفاق ملہی نے اپنی سابقہ تعیناتی کے دوران تھانے میں (بقیہ نمبر24صفحہ6پر)

مال مقدمہ کے طور پر بند ٹرک کو غائب کردیا۔کو تھانے کے باہر گیٹ کے ساتھ پارکنگ پر کھڑا تھا۔اشفاق ملہی نے ٹرک کو  سے لیجاتے ہوئے ذرائع میں بند گاڑیوں کے قیمتی پرزہ جات کو بھی چوی کیا۔اور اسکو بھی فروخت کردیا۔اسی طرح مذکورہ پیڈ کانسٹیبل نے ممتاز آباد میں رہ لوٹ مار کی۔اور اسی پیسوں سے کم از کم تیس لاکھ مالیت کی بھینسوں کا بھانہ بھی بنا ڈالا۔بتایا جا رہا ہے کہ اشفاق ملہی نے ٹمپرڈ گاڑیوں خر و فروخت میں تھانیدار ناصر کا برابر کا حصہ دار تھا۔جو اپنے ہی پیٹی بھائیوں کو سستی گاڑیوں کی قمیت کا چکر دیکر گاڑیوں کو انہی کو فروخت کرتا تھا۔ذرائع کے مزید  مطابق  گاڑیوں ٹمپرڈ کا راز تھانہ ممتاز آباد کے ایک کانسٹیبل نے پولیس افسران کو افشاں کیا تھا۔حالانکہ وہ کانسٹیبل بار بار تھانہ  ممتاز آباد میں تعینات ہوتا ہے۔اور ہر ایس ایچ او کا کار خاص کے طور اپنے فرائض سر انجام دیتا ہے۔معلوم ہوا ہے اشفاق ملہی اور شوروم مالک رانا خالد گرفتاری کے خوف سے روپوش پیں۔اور پولیس افسران کو رام کرنے کیلئے ہر حربہ استعمال کیا جارہا ہے۔جبکہ دوسری جانب گرفتار تھانیدار ناصر کو جسمانی ریمانڈ پورا ہونے پر کل(منگل) کو عدالت میں پیش کیا جائے گا۔پولیس کے مطابق اب تک بوگس رجسٹریشن کارڈ سمیت دیگر اہم اشیاء برآمد کرلی جاچکی ہے۔مزید انکشافات متوقع پیں۔

انکشافات

مزید :

ملتان صفحہ آخر -