سرکاری کتابیں دکانوں پرفروخت ہونیکا انکشاف، تحقیقات شروع

   سرکاری کتابیں دکانوں پرفروخت ہونیکا انکشاف، تحقیقات شروع

  

اوچ شریف(نمائندہ پاکستان)وچشریف میں پڑھا لکھا پنجاب کا خواب شرمندہ تعبیر ہونا مشکل ہوگیا، اسکولوں میں طلبا کے لیے فراہم کی جانے والی مفت کتابیں بک اسٹالز پر فروخت ہونے کا انکشاف، خریداری کرنے والے شہری نے میڈیا کو بلا لیا، میڈیا نمائندوں نے تمام ثبوت اور شواہد محکمہ تعلیم بہاول پور کے ضلعی افسر کو بجھوا دیے، سی ای او بہاول پور ایجوکیشن کا نوٹس لیکر، ڈپٹی ایجوکیشن آفیسر کو تحقیقات کر کے بک ڈپو کے مالک کے خلاف کاروائی کا حکم دے دیا  تفصیلات کے مطابق اوچشریف شہر میں پڑھا لکھا پنجاب کا خواب شرمندہ تعبیر ہونے کی بجائے (بقیہ نمبر7صفحہ6پر)

ناکام ہونے کے خدشات پیدا ہو گئے ہیں جہاں پر حکومت کی جانب سے اسکولوں کے طلبا کے لیے فراہم کی جانے والی مفت سرکاری کتابیں بک اسٹالز پر فروخت ہونے کا انکشاف ہوا ہے گزشتہ روز اوچ گیلانی میں شمس محل روڈ پر موجود بسم اللہ بک سینٹر کے مالک عارف نے دوسری کلاس کی مفت ملنے والی سرکاری کتابیں تین سو روپے میں مقامی شہری شاہد علی کو فروخت کیں تو شہری نے میڈیا کو بلا لیا میڈیا نمائندوں نے موقع پر تمام ثبوت اور شواہد سی ای او ایجوکیشن بہاول پور ظہور چوہان کو بجھواتے ہوئے مطلع کر دیا جنہوں نے فوری نوٹس لیتے ہوئے ڈپٹی ایجوکیشن آفیسر احمد پور شرقیہ کو بک ڈپو کے مالک کے خلاف تحقیقات کر کے کاروائی کا حکم دے دیا جس پر اے ای او صادق بھٹی نے اپنی مدعیت میں مفت ملنے والی سرکاری کتابیں فروخت کرنے والے بسم اللہ بک اسٹال کے مالک عارف کے خلاف قانونی کاروائی کے لیے تحریر جمع کرا دی ہے۔

سرکاری کتابیں 

مزید :

ملتان صفحہ آخر -