مظفر گڑھ:مزدوری مانگنے پر اوباشوں کا موٹرسائیکل میکنک پر تشدد

  مظفر گڑھ:مزدوری مانگنے پر اوباشوں کا موٹرسائیکل میکنک پر تشدد

  

مظفرگڑھ (نمائندہ خصوصی، نامہ نگار) مزدوری مانگنا جرم بن گیا، اوباش نوجوان نے ساتھیوں کے ہمراہ موٹر سائیکل مکینک کو مزدوری مانگنے پر لہولہان کردیا(بقیہ نمبر10صفحہ6پر)

، موٹر سائیکل مکینک کو شدید زخمی حالت میں صدر ہسپتال مظفرگڑھ منتقل کردیا گیا، اوباش نوجوان نے علاقے میں غریب افراد پر تشدد اور اسلحہ کی نمائش بھی معمول بنالی۔ تفصیل کے مطابق غریب نوجوان طیب نے تھانہ صدر مظفرگڑھ کے علاقے شریف پنوار میں اپنے گھر کیساتھ موٹر سائیکل ٹھیک کرنے کی دکان بنا رکھی ہے۔ گزشتہ روز علاقے میں بدنام زمانہ اوباش نوجوان مزمل نے موٹر سائیکل مکینک طیب کو مزدوری مانگنے پر اپنے ساتھیوں کے ہمراہ تشدد کا نشانہ بنایا اور جب موٹر سائیکل مکینک طیب اپنے جان بچانے کے لیے اپنے گھر میں داخل ہوا تو اوباش مزمل اپنے ساتھیوں کے ہمراہ موٹر سائیکل مکینک کے گھر میں داخل ہوگیا اور موٹر سائیکل مکینک طیب اور اسکے بھائی شیراز کو تشدد کا نشانہ بناتے ہوئے طیب کے سر میں کلہاڑی مار کر شدید زخمی کردیا جس پر قریبی تھانہ محمود کوٹ پولیس موقع پر پہنچی تو اوباش مزمل اپنے ساتھیوں کے ہمراہ فرار ہوگیا جبکہ شدید زخمی طیب کو ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر ہسپتال مظفرگڑھ منتقل کردیا گیا ہے جہاں ایمرجنسی وارڈ میں تشویشناک حالت میں زیر علاج ہے۔ اوباش نوجوان مزمل نے اپنے علاقے میں گینگ بناکر غریب افراد پر تشدد اور اسلحہ کی نمائش کرنا معمول بنارکھا ہے جبکہ مزمل کا بھائی کچھ روز قبل ناجائز اسلحہ کیساتھ تھانہ محمود کوٹ پولیس نے بھی گرفتار کیا تھا۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -