مہنگائی‘ بے روزگاری‘ جماعت اسلامی کے شہر شہر مظاہرے 

مہنگائی‘ بے روزگاری‘ جماعت اسلامی کے شہر شہر مظاہرے 

  

ملتان، مظفر گڑھ، ڈیرہ، بہاولپور، خانپور (سپیشل رپورٹر، بیورو رپورٹ، تحصیل رپورٹر، نمائندہ پاکستان، ڈسٹرکٹ رپورٹر)جماعت اسلامی ملتان کے زیر اہتمام مہنگائی بیروزگاری بدامنی اور سودی نظام معیشت کے خلاف امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق کی اپیل پر احتجاجی مظاہرہ کا انعقاد کیا گیا مظاہرہ کی قیادت نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان لیاقت بلوچ،سیکرٹری جنرل جماعت اسلامی جنوبی پنجاب صہیب عمار صدیقی، امیر جماعت اسلامی ملتان ڈاکٹر صفدر ہاشمی نے کی۔مظاہرہ اور میڈیا کے نمائندوں سے خطاب کرتے ہوئے لیاقت بلوچ نے کہا کہ موجودہ حکومت کا تین سالہ دور حکومت نے عوام کی مشکلات میں اضافہ کیا۔ملک پر مسلط مٹھی بھر طبقہ پورے ملک کو لوٹ رہا ہے۔ موجودہ حکمران مافیاز کی سرپرستی اور عوام کو خوار کر رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ پی پی اور ن لیگ ناکام ہوچکی ہیں۔ سودی نظام معیشت نے ملکی معیشت کو مفلوج کر دیا ہے۔مہنگائی بے روزگاری سے تمام طبقات پریشان ہیں۔عمران خان کی لچھہ دار تقریروں سے عوام کے مسائل حل نہیں ہونگے۔آئی ایم ایف اور ورلڈ بنک  کے قرضوں تلے دبا کر موجودہ اور سابقہ حکمرانوں نے  عوام کو قرضوں کے بوجھ تلے دبا دیا۔پیٹرول،گیس،بجلی کی قیمتوں میں اضافہ سے عوام پریشان ہیں آٹا چینی اور روز مرہ اشیاء کی ضرورت کی اشیاء بھی عوام کی پہنچ سے دور ہیں۔نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان لیاقت بلوچ نے کہا کہ جماعت اسلامی نے حکومت کی موجودہ پالیسیوں کے خلاف تحریک کا اعلان کردیا ہے عمران خان کی حکومت آج ناکام ہوچکی ہے۔بڑھتی ہوئی لوڈ شیڈنگ نے عوام کا جینا محال کر رکھا ہے۔اسٹیل مل پی آئی اے سمیت دیگر اداروں کی نجکاری کی جارہی ہے۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ ریلوے کی تباہی کی ذمہ دار موجودہ اور سابقہ تمام حکمرانوں ہیں۔اس موقع پر صہیب عمار صدیقی امیر جماعت اسلامی ملتان ڈاکٹر صفدر ہاشمی،صوبائی سیکرٹری اطلاعات کنور صدیق اور دیگر بھی موجود تھے۔موجودہ حکومت تاریخ کی بد ترین حکومت ہے مہنگائی اور بیروزگاری نے جینا دوبھر کردیا ہے، جماعت اسلامی نے امیر جماعت اسلامی پاکستان جناب سراج الحق صاحب ک کی اپیل پر ملک بھر کی طرح مظفرگڑھ میں مہنگائی بیروز گاری اور سود کے خلاف احتجاجی مظاہرے سے راناعمردرازفاروقی امیر جماعت اسلامی ضلع مظفرگڑھ، پروفیسرافتخاراحمدہاشمی، ارشد محمود لغاری، احمد جمال بلوچ ایڈووکیٹ اور ڈاکٹر حافظ بشیر احمد نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ موجودہ حکومت عوام کو ریلیف دینے میں ناکام ہو چکی ہے اشیائے خوردونوش کی قیمتوں میں اضافے نے جینا محال کردیا ہے عمران نیازی کے بلند بانگ دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے ہیں بیروزگاری کی وجہ سے نوجوان مایوسی کا شکار ہیں اس موقع پر مقررین نے مقامی مسائل کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ مظفرگڑھ میں امن وامان کی صورتحال بدتر ہے چوری ڈکیتی اور منشیات فروشی عروج پر ہے بجلی اور گیس کی غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ نے عوام کا جینا حرام کیا ہوا ہے اس موقع پر ملک سعید ایڈووکیٹ، امین افضل، نعمان چیمہ، رضوان قریشی، سعید لغاری، اور اظہر عباس بھی موجود تھے۔غیراسلامی قانون سازی کسی صورت قبول نہیں مہنگائی و لوڈشیڈنگ نے عوام کا بھرکس نکال دیا۔ان خیالات کااظہار جے یو آ ئی کے سینئر نائب امیر پنجاب مولانا اقبال رشید نے پل ڈاٹ پر مہنگائی اور لوڈشیڈنگ کے خلاف احتجاجی مظاہرہ سے خطاب کرتے ہوئے کیا انھوں نے کہا کہ پاکستان ایک اسلامی ملک ہے آئینِ پاکستان کے مطابق خلافِ قرآن و سنت قانون سازی نہیں کی جاسکتی ایسے کسی بھی قانون کو ہم رد کرتے ہیں ہم پر مہنگائی اور لوڈشیڈنگ کا دوہرا عذاب مسلط ہے حکومت کو عوام سے دشمنی چھوڑ کر اسکی فلاح کی فکر کرنی چاہیے ضلعی سیکرٹری جنرل حافظ انعام اللہ بھٹی نے کہا کہ سلیکٹڈ حکمران ملک وملت کے لیے ماسوائے تکلیف کے اور کچھ نہیں لا رہے ایسے تمام حکومتی اقدامات کی مذمت کرتے ہیں اور انہیں لانے والوں کو توبہ کرنی چاہیے آج بنیادی اشیائے ضروریہ عوامی پہنچ سے دور ہوتی جا رہی ہیں مگر حکمرانوں کو اس کا رتی بھر احساس نہیں ہے کیونکہ وہ عوامی نمائندے نہیں ہیں بلکہ سلیکٹڈ ہیں احتجاجی مظاہرہ میں کثیرتعداد میں جے یو آئی  کے کا رکنوں نے شرکت کرکے حکومتی اقدامات کی قلعی کھول دی۔ احتجاجی مظاہرہ سے تحصیل ڈیرہ کے امیر ڈاکٹر یونس راج،تحصیل امیر تونسہ مولانا امان اللہ قیصرانی چیئرمین یوسی کوٹ قیصرانی،تحصیل امیر کوٹ چھٹہ محمد حسین نے بھی خطاب کیا۔جماعت اسلامی کی ملک میں بڑھتی ہوئی مہنگائی،بے روز گاری اور سود کیخلاف احتجاجی ریلی دفتر جماعت اسلامی سے پریس کلب تک نکالی گئی۔ریلی میں شرکا نے کتبے اور بینرز بھی اٹھائے ہوئے تھے جن پر بے روزگاری، مہنگائی کیخلاف نعرے درج تھے۔ریلی کی قیادت نائب امیر جماعت اسلامی جنوبی پنجاب سید ذیشان اختر۔امیر پی پی 245 نصراللہ ناصر،امیر پی پی 246 خالد بن جلیل نے قیادت کر رہے تھے۔مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے سید ذیشان اختر نے کہا ہے کہ بے روزگاری کے سونامی میں نوجوانوں کی ڈگریاں ردی کا ٹکڑا بن گئیں۔ پی ٹی آئی کی حکومت نے بے روزگاری میں دو سو فیصد اضافہ ہوا۔ لاکھوں نوجوان ڈگریاں اٹھائے روزی کی تلاش میں گھوم رہے ہیں۔ حکومت روزگار کے وسائل پیدا کرنے کی بجائے لنگرخانے کھول رہی ہے۔ پرائیویٹ اور پبلک سیکٹرز بحران کا شکار، تاجر، کسان، مزدور سب مستقبل کے بارے میں پریشان ہیں۔ موجودہ حکمران بے روزگاری و مہنگائی کی ذمہ داری پچھلی حکومتوں پر ڈا ل کر خود خواب خرگوش کے مزے لے رہے ہیں۔گڈ گورننس، اداروں کے استحکام اور کرپشن کے خاتمے کے لیے کچھ نہیں کیا گیا۔ تین سالوں میں حالات ماضی سے بھی بدتر ہو گئے ہیں۔ حکومت نے قرضے نہ لینے کا وعدہ کیا تھا، مگر اس ضمن میں ماضی کے سبھی ریکارڈ توڑ دیے۔ ثابت ہو گیا کہ پی ٹی آئی کے پاس کوئی ویژن نہیں۔ ماضی کی حکومتیں بھی ملک کو مسائل سے دوچار کرنے میں برابرکی ذمہ دارہیں۔ جاگیرداروں اور سرمایہ داروں کا ٹولہ صرف اپنی جیبیں بھررہا ہے، عوام سے کسی کو کوئی غرض نہیں۔ نصراللہ ناصر نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کو اسلامی فلاحی ریاست بنانا جماعت اسلامی کی سیاست مقصد ہے ملک کے 98 فیصد عوام کی حالت میں نہ پہلے کوئی تبدیلی آئی اور نہ پی ٹی آئی کی حکومت کے تین سالوں میں۔ بجلی کی بدترین لوڈشیڈنگ دوبارہ شروع ہو گئی ہے۔ سُود، قرضوں، کرپشن اور حکمرانوں کی بے ہنگم اقتصادی پالیسیوں نے ملک کے اقتصادی نظام کو تباہ کردیا ہے۔ پیداواری لاگت میں بے تحاشا اضافہ ہوگیا ہے۔ عوام کی قوت خرید ختم ہوگئی ہے، بجلی، تیل، گیس کی قیمتوں میں اضافہ اور ٹیکسوں کے ہوشربا اضافہ نے عام آدمی کا کچومر نکال دیا ہے۔ مہنگائی اور بے روزگاری جان لیوا ہے۔ ملک بھر میں لاکھوں نوجوان، تعلیم یافتہ اورہنرمند نوجوان بے روزگاری کے دھکے کھارہے ہیں۔ میڈیکل، انجینئرنگ اور آئی ٹی کے ڈگری ہولڈرز بھی دھکے کھارہے ہیں۔ عمران خان سرکار نے ایک کروڑ نوکریاں دینے کی بجائے ایک کروڑ بیروزگاروں میں اضافہ کردیا ہے۔ مہنگائی اور بے روزگاری سے تنگ عوامی لشکر بے حس، عوام دشمن حکمرانوں کے ایئرکنڈیشنڈ قلعوں کو مسمار کردیں گے۔خان پورمیں امیرجماعت اسلامی پاکستان سراج الحق کی اپیل پرجماعت اسلامی یوتھ کے زیراہتمام مہنگائی اورکرپشن کیخلاف احتجاجی مظاہرہ کیاگیاجس کی قیادت جام زبیراحمدصدرجماعت اسلامی یوتھ خان پور نے کی  اس موقع پرجام زبیراحمدنے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ ریاست مدینہ کے دعویداروں نے عوام کوخودکشی پرمجبورکردیاہے ملک میں مہنگائی کاطوفان ہے اورحکمران بجٹ پرخوشیاں منارہے ہیں کیونکہ یہ بجٹ ان کے آقاؤں آئی ایم ایف کابنایاہوابجٹ ہے جس سے پوری قوم کوبھکاری بنادیاگیاہے۔ انہوں نے کہاکہ ان کے وزراء عیاشیوں میں مصروف ہیں اورعوام کی بھلائی کے دعویدارعوام کی قسمتوں سے کھیل رہے ہیں اوراپنے مغربی آقاؤں کی خوشنودی میں مصروف ہیں، اس موقع پررئیس عاشق امین، عطاالرحمن قریشی، محمد ہاشم، جام شکیل، حافظ مختار، صابرعلی، الماس راحیل، سیدوقاص عدیل۔محمد شاہد، سیف اللہ، غلام حسین، عمرفاروق حافظ عطامحمد، جہانزیب، وزیرعلی،شکیل احمد،عبدالمنان، عبدالسمیع، باقرفہیم، امیرشہر عامراشتیاق چوہدری اورسید محمد ساجدشاہ سیکرٹری جنرل نے خصوصی طورپرشرکت کی۔

مظاہرے

مزید :

صفحہ اول -