لاس اینجلس میں ایک خواجہ سراءکی شرمناک حرکت، ہنگامے پھوٹ پڑے

 لاس اینجلس میں ایک خواجہ سراءکی شرمناک حرکت، ہنگامے پھوٹ پڑے
 لاس اینجلس میں ایک خواجہ سراءکی شرمناک حرکت، ہنگامے پھوٹ پڑے

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکی شہر لاس اینجلس میں ایک خواجہ سراءکی شرمناک حرکت کے باعث ہنگامے پھوٹ پڑے۔

 میل آن لائن کے مطابق یہ خواجہ سراءایک ’سپا‘ میں بھاپ سے غسل کرنے والے کمرے میں تھا۔ یہ کمرہ خواتین کے لیے مختص تھا جس میں خواتین اپنے ساتھ اپنے بچوں کو لیجا سکتی ہیں۔ یہ خواجہ سراءکمرے میں برہنہ ہو گیا ۔ ایک خاتون نے اس واقعے پر مبنی ویڈیو سوشل میڈیا پر پوسٹ کر دی جس پر خواجہ سراءکی اس حرکت کے خلاف احتجاج شروع ہو گیا اور لوگ مطالبہ کرنے لگے کہ ’صرف خواتین‘ والے سپا میں خواجہ سراﺅں کا داخلہ بند کیا جائے۔

رپورٹ کے مطابق ان مظاہرین کے ساتھ ہی گزشتہ دنوں برعکس سوچ رکھنے والے گروپ کے لوگ خواجہ سراﺅں کے ساتھ اظہار یکجہتی کے لیے سڑکوں پر نکل آئے اور دونوں گروپوں کے درمیان جھڑپیں شروع ہو گئیں جو اب تک ہنگاموں کا روپ دھار چکی ہیں۔ ان ہنگاموں میں ایک صحافی کو بھی وحشیانہ تشدد کا نشانہ بنایا جا چکا ہے۔ کہا جا رہا ہے کہ خواجہ سراﺅں کے حق میں نکلنے والے لوگ ’انٹیفا‘ (Antifa)نامی تنظیم کے کارندے ہیں جن کا مقصد ہی ہنگامہ خیزی ہے۔ گزشتہ سال سیاہ فام شہری جارج فلائیڈ کی پولیس کے ہاتھوں ہلاکت کے پھوٹنے والے ہنگاموں کا الزام بھی اسی تنظیم کے سر ڈالا گیا تھا۔شہر سے کئی ویڈیوز سامنے آ رہی ہیں جن میں دونوں طرف کے لوگ ایک دوسرے پر حملہ آور ہوتے ہیں اور ایک دوسرے کو تشدد کا نشانہ بنارہے ہوتے ہیں۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -بین الاقوامی -