تبدیلی کا نعرہ لگانے والے اب معافیا ں مانگ رہے ہیں،جاوید قصوری

تبدیلی کا نعرہ لگانے والے اب معافیا ں مانگ رہے ہیں،جاوید قصوری

  

لاہور (  نمائندہ خصوصی   )امیر جماعت اسلامی پنجاب وسطی محمد جاوید قصوری نے کہا کہ تبدیلی کا نعرہ لگانے والے آج اپنی ہی حکومت کے خلاف سازش کرنے والوں کے سامنے دوستی کا ہاتھ بڑھا رہے ہیں۔قوم کو خوداری، جرات،بہادری اور غلامی سے نجات کا درس دینے والے امریکہ کے پاؤں پڑ چکے ہیں اور ڈونلڈ لو سے معافیاں مانگ رہے ہیں۔یوں محسوس ہوتا ہے کہ جیسے ان کے غبارے سے بھی ہوا نکل چکی ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز لاہور میں وقاص بٹ کے حلقہ پی پی 170میں انتخابی کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ 

انہوں نے کہا کہ پاکستان کے بائیس کروڑ عوام کو امپورٹڈ حکومت چاہیے اور نہ ہی سلیکٹڈ حکمران چاہییں، انہیں صرف اور صرف محب وطن قیادت کی ضرورت ہے جو ان کے مسائل کو فی الفور حل کرسکے۔موجودہ بحرانوں سے نکالنے کا واحد ریاست نئے انتخابات ہیں۔پاکستان کو 1973ء  کے آئین کے مطابق آگے بڑھنا ہے۔ملک کو قوم کو حقیقی قیادت صرف اور صرف جماعت اسلامی ہی فراہم کر سکتی ہے۔ ملکی حالات دن بدن گھمبیر ہو تے جا رہے ہیں داخلی انتشار اور افراتفری سے ملک کو خانہ جنگی کی طرف دھکیلنے کی سازش ہورہی ہے۔ کچھ عناصر اپنے سیاسی مفادات کی خاطر قومی مفادات کو بھی داؤ پر لگانا چاہتے ہیں۔ ان کی روک تھام کو یقینی بناتے ہوئے منفی سیاست کا خاتمہ نا گزیر ہے۔ پاکستان کی آزادی، خود مختاری اور سلامتی سب کچھ داؤ پر لگ چکا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سیاستدان آپس کی چپقلش کی بجائے عوامی مفادات کو ملحوظ خاطر رکھتے ہوئے کام کریں۔ 1973کے آئین نے تمام اداروں کی آئینی و قانونی حدود کا تعین کردیا ہے۔ ایک دوسرے کی حدود و قیود کا احترام ہونا چاہئے۔ان کے معاملات میں دخل اندازی درست نہیں، اس حوالے سے بالغ نظری کا مظاہرہ کرنا ہوگا۔ محمد جاوید قصوری نے مزید کہا کہ ملک و قوم کی حالت زار کو بدلنے کے لیے چہرے بدلنے کی بجائے فرسودہ نظام کو بدلنا ہوگا۔ پاکستان میں حکمرانوں کی عاقبت نا اندیش پالیسیوں کی بدولت گریجویٹ افراد کی بے روزگاری کی شرح میں 16فیصد تک اضافہ ہوچکا ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -