لینڈ ریکارڈ اتھارٹی، ملکیتی حقوق تبدیل کرنے کی کوشش، حکام کانوٹس

 لینڈ ریکارڈ اتھارٹی، ملکیتی حقوق تبدیل کرنے کی کوشش، حکام کانوٹس

  

  ملتان (   نیوز   رپورٹر  ) پنجاب لینڈ ریکارڈ اتھارٹی کا کمپیوٹرائزڈ  نظام بین الاقوامی معیار کے مطابق ہے اور اسمیں ضروری حفاظتی انتظامات موجود ہیں۔(بقیہ نمبر14صفحہ6پر)

 چند روز قبل سسٹم کے ایک یو زر نے کسی اور کے اکاونٹ کے ذریعے سے ملکیتی حقوق تبدیل کرنے کی کوششیں کی، جسکا فوری نوٹس لیتے ہوئے کاروائی کا آاغاز کر دیا گیا ہے۔ جبکہ معاملہ کی تحقیقات کیلے ایک پانچ رکنی انکوائری کمیٹی تشکیل دی گئی ہے۔ کمیٹی میں شامل آئی ٹی،  فنانس اور دیگرماہرین ان وجوہات کا جائزہ لے رہے ہیں جسکی بدولت یہ غیر قانونی کا م ممکن ہوا۔ علاوہ ازیں گزشتہ چھ ماہ میں ہونے والے تمام انتقالات کا قانونی و مالی نقطہ نظر سے جائزہ لیا جائے گا۔ جبکہ کسی بھی قانون شکنی کی صورت میں ذمہ داران کا تعین کرکے تادیبی کاروائی عمل میں لائی جائے گی۔ مستقل میں ایسے واقعات کی روک تھام کے لیے آئی ٹی شعبہ نے سافٹ وئیر کے سیکورٹی کوڈ کو بائی پاس کیے جانے کی کمزوری کا پتہ لگا کر تمام ممکنہ حفاظتی اقداما ت کیے ہیں۔ کسی بھی غیر متعلقہ یوزر سے ڈیٹا کی رسائی کی کوشش کی فوری تشخیص اور ڈیٹا کے غلط استعمال کی روک تھام کو ممکن بنایا گیاہے۔سافٹ وئیر پر متعد د چیک لگا کر اسکے تمام انٹرنل کنٹرول کو ٹیسٹ اور سکین کیا جارہا ہے۔ جسکی بدولت مزید ایسے واقعات کا تدارک ممکن ہے۔ ٹیکنالوجی ماہرین کا ماننا ہے کہ حساس ڈیٹا کے تمام حفاظتی چیک کے باوجو دانکی خلاف ورزی اور ڈیٹا کا استحصال ممکن ہے۔ اس سلسے میں پرائیوٹ نیٹ ورک نسبتاکم اور انٹرنیٹ کے ذریعے میسر ڈیٹا پر ایسے خدشات بڑھ جاتے ہیں۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -