ایم کیوایم رہنما بابر غوری وطن واپس آتے ہی کراچی ایئر پورٹ پر گرفتار

ایم کیوایم رہنما بابر غوری وطن واپس آتے ہی کراچی ایئر پورٹ پر گرفتار

  

       کراچی (اسٹاف رپورٹر) کئی سال بعد پاکستان واپس آنے والے متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کے رہنما بابر غوری کو کراچی ایئر پورٹ سے گرفتار کرلیا گیا۔نجی ٹی وی کے مطابق بابر غوری کرپشن کے کیسز میں قومی احتساب بیورو (نیب) کو مطلوب تھے جس کے باعث کراچی پہنچتے ہی انہیں ایئر پورٹ سے گرفتار کیا گیا ہے۔ انہیں وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) نے ایئر پورٹ سے گرفتار کرکے پولیس کے حوالے کیا جس کے بعد انہیں نامعلوم مقام پر منتقل کردیا گیا۔خیال رہے کہ بابر غوری 2008 میں بننے والی پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کی حکومت کا حصہ تھے اور انہوں نے حکومت کی اتحادی جماعت کے سینیٹر کی حیثیت سے وفاقی وزیر کا قلم دان سنبھالا تھا۔بابر غوری کو وفاقی وزیر پورٹس اینڈ شپنگ بنایا گیا تھا تاہم 2013 میں مرکز میں پاکستان مسلم لیگ (ن) کی حکومت بنی اور کراچی میں رینجرز نے آپریشن شروع کیا اور بعد ازاں بابرغوری ملک سے باہر چلے گئے، جس کے بعد وہ لوٹ کر دوبارہ پاکستان نہیں آئے تھے۔ چند سال قبل قومی احتساب بیورو نے متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) پاکستان کے رہنما بابر غوری سمیت 3 افراد کو مفرور قرار دینے کے لیے اشتہارات دیے تھے۔گزشتہ ماہ نجی ٹی وی کو انٹرویو دیتے ہوئے بابر غوری نے کہا تھا کہ پاکستان واپسی کا ارادہ مؤخر نہیں کیا جلد واپس آکر کیسز کا سامنا کروں گا۔ عدالت کی اجازت ملنے پر پہلی فلائٹ سے آجاؤں گا، وطن واپسی میں کوئی رکاوٹ ہوئی تو سامناکروں گا۔

 بابر غوری

مزید :

صفحہ اول -