"پٹرول کی لال بتی آن ہونے پر 2 ہزار کا پٹرول ڈلوایا، پمپ سے باہر نکلا تو بتی پھر بھی لال تھی" اقرار الحسن نے اپنا دکھ بیان کردیا

"پٹرول کی لال بتی آن ہونے پر 2 ہزار کا پٹرول ڈلوایا، پمپ سے باہر نکلا تو بتی ...
سورس: Instagram

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان میں پٹرولیم مصںوعات کی قیمتیں بے انتہا بڑھنے پر ہر طبقے کے لوگ متاثر ہو رہے ہیں جن میں اینکر پرسن اقرار الحسن بھی شامل ہیں جنہوں نے اس حوالے سے اپنا تجربہ شیئر کیا ہے۔

انہوں نے ٹوئٹر پر لکھا "ابھی گاڑی کی پٹرول کی لال بتی آن ہوئی۔ اگلے ہی پٹرول پمپ پر گاڑی روکی، کارڈ دے کر کہا پانچ ہزار کا پٹرول ڈال دیں، بتایا گیا کارڈ مشین خراب ہے۔ جیب میں دو ہزار تھے، کہا اچھا ان دو ہزار کا ڈال دیں۔ پٹرول پمپ سے نکلا ہوں۔ پٹرول کی لال بتی اب بھی جل رہی ہے   “ن” اللہ تہانوں پُچھے۔"

خیال رہے کہ موجودہ حکومت پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں انتہائی مختصر وقت میں 100 روپے سے زائد کا اضافہ کرچکی ہے جس کے باعث پٹرول تقریباً 250 روپے لٹر ہوگیا ہے۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -