ڈنمارک کی پاکستان کو توانائی بحران سے نمٹنے کیلئے ہر ممکن تعاون کی پیشکش

ڈنمارک کی پاکستان کو توانائی بحران سے نمٹنے کیلئے ہر ممکن تعاون کی پیشکش

اسلام آباد(آن لائن)پاکستان میں تعینات ڈنمارک کے سفیر اولے تھونکے نے کہا ہے کہ پاکستان توانائی و آبی بحران سے نمٹنے کیلئے ڈینش ٹیکنالوجی وتعاون سے مستفید ہوسکتاہے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے اپنے ایک انٹرویو میں کیا۔ اسلام آباد میں تعینات ڈنمارک کے سفیر اولے تھونکے نے کہا ہے کہ دہشت گردی عالمی مسئلہ ہے اور دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان کا کردار انتہائی اہمیت کا حامل ہے پاکستان میں سرمایہ کاری کیلئے سکیورٹی حالات پہلے سے کافی بہتر ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان اور ڈنمارک کے درمیان تجارتی حجم میں اضافہ کے بے پناہ مواقع ہیں اور دونوں ممالک کے درمیاں بہترین سیاسی سفارتی اقتصادی و تجارتی تعلقات ہیں جبکہ برآمدات اور تجارتی حجم کو 250ملین ڈالر بڑھایا جائے گا۔ ڈنمارک کے سفیر اولے تھونکے نے کہا ہے کہ ڈنمارک اپنی ضروریات سے 50فیصد زائد توانائی پیدا کررہاہے لہٰذاپاکستان کو توانائی کے بحران سے نمٹنے کیلئے ہر ممکن تعاون کیلئے تیار ہیں۔انہوں نے کہا کہ توانائی بحران کو ختم کرنے کیلئے پاکستان کے ساتھ ہیں اس مقصد کیلئے ڈنمارک میں توانائی کے حصول کیلئے ونڈ فارم اور ونڈمل کا استعمال کیا جاتا ہے کیونکہ ڈنمارک کے پاس توانائی حاصل کرنے کیلئے بہترین جدید ٹیکنالوجی موجود ہے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان اس وقت توانائی اور آبی ذخاہر کو محفوظ کرنے کیلئے مسائل سے گزررہاہے۔آبی ذخائر پاکستان کا اہم مسئلہ ہے پانی کو محفوظ کرنے سے متعلق پاکستان کو ڈینش ماڈل سے مستفید ہونا چاہئے جبکہ توانائی کے ساتھ ساتھ آبی بحران سے نمٹنے کیلئے بھی ڈنمارک ٹیکنالوجی سے پاکستان متفید ہوسکتاہے۔ ڈنمارک کے سفیر نے کہا ہے کہ افغانستان میں قیام امن اور استحکام کیلئے پاکستان کا کردار کلیدی ہے لہٰذا افغانستان سمیت دنیا کے اکثر ممالک کو دہشت گردی کے چیلنج کا سامناہے جبکہ عالمی سطح دہشت گردی کے خاتمے کیلئے کوششوں کو مربوط بنایا جائے۔

ڈنمارک/پیشکش

مزید : علاقائی