میں انسان ہوں مشین نہیں ، آپ اپنی حدود سے تجاوز کر رہے ہیں: رافیل نڈال کی ایمپائر سے توں تکرار

میں انسان ہوں مشین نہیں ، آپ اپنی حدود سے تجاوز کر رہے ہیں: رافیل نڈال کی ...
میں انسان ہوں مشین نہیں ، آپ اپنی حدود سے تجاوز کر رہے ہیں: رافیل نڈال کی ایمپائر سے توں تکرار

  


پیرس (ڈیلی پاکستان آن لائن) ٹینس سٹار رافیل نڈال اور ایمپائر کیرولس رامز کے درمیان میچ کے دوران شدید تلخ کلامی ہوئی ہے، رافیل نڈال نے ایمپائر سے کہا کہ آپ اپنی حدود سے تجاوز کرتے ہوئے مجھے تنگ کر رہے ہیں،میں انسان ہوں مشین نہیں جو آپ کی بلاجواز پابندیوں کی پیروی کروں .

پی پی پی چھوڑنے پر فردوس عاشق اعوان پر تنقید

تفصیلات کے مطابق رافیل نڈال فرنچ اوپن میں گیارویں راﺅنڈ کے کواٹر فائنل میں 6-1اور 6-2سے اپنے ہسپانوی حریف رابر بٹیسٹا آگٹ کے خلاف جیت رہے تھے مگر ایمپائر نے 31سالہ نڈال کو پہلے سیٹ اور پھر تیسر ے سیٹ میں انتہائی سست کھیلنے پر وارننگ دی جس پر رافیل کے صبر کا پیمانہ لبریز ہوا اور انہوں نے ایمپائر کو کہا کہ اگر تم اچھا کھیل چاہتے ہو تو کھلاڑیوں کو سانس لینے دو ہم مشینیں نہیں کہ سوچ نہیں سکتے۔ ایمپائر کے فرائض میں صر ف میچ کا تجزیہ کرنا ہوتا ہے نہ کہ سٹاپ واچ لئے گراﺅنڈ میں گھومنا ، اور کچھ ایمپائر تو ہمیں تجاویز دینے آجاتے ہیں لیکن ہر کسی کا اپنا اپنا انداز ہوتا ہے ۔

’ہم دونوں ایک دوسرے کے جسم سے یہ چیز نکال کر استعمال کرتے ہیں‘ نوجوان لڑکا لڑکی نے ایسا اعلان کردیا کہ جان کر آپ بھی کانپ اٹھیں گے

رافیل نڈال نے اپنے اس رویے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اس کے علاوہ میں کیا کہہ سکتا تھا۔ ایمپائر یک طرفہ ہو کر میری غلطیوں پر نظر رکھنے میں محو تھا ، 14مرتبہ بڑی کامیابیاں حاصل کر نا والے رافیل کا خیا ل ہے کہ کچھ ایمپائر سخت ہوتے ہیں لیکن انہیں بر داشت کیا جاسکتا ہے جب گرینڈ سلام کا انتہائی پرجوش مرحلہ ہوتا ہے۔ اس موقع پر ان کے ہسپانوی حریف نے بھی رافیل نڈال کی حمایت کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں بہت سارے نمبروں تک کھیلنا ہے اور بہت سا ڈاڑنا ہوتا ہے جس میں ایمپائر کے پریشر کی قطعاً کوئی ضرورت نہ ہے ۔

مزید : کھیل