چین امریکہ سے باوقار تجارتی تعلقات کا خواہاں ہے: امریکی ماہر 

چین امریکہ سے باوقار تجارتی تعلقات کا خواہاں ہے: امریکی ماہر 

  

بیجنگ(آئی این پی)چین امریکہ کے ساتھ با وقار تجارتی تعلقات چاہتا ہے، چین کی جانب سے جاری کیا گیا وائٹ پیپر اس کی واضح مثال ہے، چین نے تجارتی مذاکرات کو جاری رکھنے کا وا ضح اشارہ دیا ہے، چین تجارتی جنگ نہیں چاہتالیکن  خائف بھی نہیں، ضرورت پڑ نے پر تجارتی جنگ لڑ تا بھی جانتا ہے، امریکہ اپنے یک طرفہ پسندی کے رویے کو تبدیل کرے۔ تفصیلات کے مطابق ایک امریکی ماہر کوہن نے شنہوا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا ہے کہ چین امریکا سے باوقار تجارتی تعلقات کی خواہش رکھتا ہے اور یہ ایسی کوئی بات نہیں کہ جس پر اعتراض کیا جا سکے، چین کی جانب سے جو مذاکرات بارے جو وائٹ پیپر شائع کیا ہے اس میں بھی چین نے واض ح اشارہ دیا ہے کہ امریکہ سے تجارتی مذاکرات جاری رہ سکتے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ چین امریکا سے تجارتی جنگ نہیں چاہتا لیکن خوف زدگی کا شکار بھی نہیں ہے۔ وقت اور حالات کے پیش نظر چین امریکا کو بھر پور جواب دے سکتا ہے۔ چئیر مین کوہن فاؤنڈیشن  رابرٹ لارنس کوہن نے کہا کہ میں اس سے اتفاق نہیں کرتا کہ چین کی جانب سے جاری وائٹ پیپر میں امریکا مخالف کوئی مواد ہے۔ میں نے دیکھا ہے وائٹ پیپر میں صرف مریکی یکطرفہ اور تحفظاتی اقدامات کی مذمت کی گئی ہے جب کہ  تجارت مشاورت اور معقول حل کے حصول پر چین کے موقف کی تائید کی گئی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ میرا نقطہ نظر بھی چین کے ہم آہنگ  ہے۔ امریکا چین کے ساتھ  برابری اور وقار کو ٹھیس پہنچائے بغیر مذاکرات کرے گا تو تمام معاملات بتدریج حل ہوتے نظر آئیں گے۔  چین امریکا کے ساتھ بامعنی اور حل طلب مذاکرات کی خواہش رکھتا ہے۔  امریکہ اپنے یک طرفہ خود پسندی کے رویے کو تبدیل کرے۔  پیچھے دیکھنے کی بجائے آگے بڑھتے ہوئے عملی اقدامات اٹھائے جائیں۔

مزید :

عالمی منظر -