نواز شریف کی طبیعت ناساز،ادویات کے استعمال پر سنبھل پائے،ذاتی معالج کا انکشاف

نواز شریف کی طبیعت ناساز،ادویات کے استعمال پر سنبھل پائے،ذاتی معالج کا ...

  

لاہور/اسلام آباد(این این آئی،آئی این پی)مسلم لیگ (ن)کے قائد میاں نواز شریف کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان نے کہا ہے کہ نواز شریف کی جیل میں طبیعت خراب ہو گئی جس پر انہوں نے بیرک کے گارڈ کو دروازہ کھولنے کیلئے کہا،ادویات کے استعمال کے بعد بمشکل سنبھل سکے۔ ٹوئٹر پر اپنے بیان میں ڈاکٹر عدنان نے کہا کہ نواز شریف سے جیل میں ملاقات ہوئی اور ان کا طبی معائنہ کیا ہے، صبح چار بجے نواز شریف کی جیل میں طبیعت خراب ہوئی، نواز شریف نے ڈیوٹی پر موجود گارڈ کو سیل کا دروازہ کھولنے کیلئے کہا۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف ادویات کے استعمال کے بعد بمشکل سنبھل سکے، ان کی زندگی خطرے میں ہے، یہ ایک وارننگ ہے۔مسلم لیگ (ن)کی ترجمان مریم اورنگزیب نے میاں نوازشریف کی صحت سے متعلق تشویشناک خبریں مل رہی ہیں اور سابق وزیر اعظم سے ان کی صاحبزادی اور دیگر کی ملاقات پر پابندی کی مذمت کرتے ہوئے کہاہے کہ سلیکٹڈ وزیراعظم سیاسی مخالفین کو ذہنی اذیت اور بد نام کرکے جھکانہیں سکتے۔ ایک بیان میں مریم اور نگزیب نے کہاکہ مریم نواز ہر روز پنجاب حکومت سے اپنے والد کو ملنے کی اجازت مانگ رہی ہیں اور پنجاب حکومت عمران صاحب کو خوش کرنے کیلئے اجازت نہیں دے رہے۔ انہوں نے کہاکہ رمضان المبارک اور عیدالفطر پر پر قوم کے غموں میں اضافے کا باعث بننے والا شخص سیاسی مخالفت میں اندھا ہوچکا ہے۔ انہوں نے مزید کہاکہ میاں نواز شریف اور ان کے ساتھیوں اور کارکنوں کے حوصلے ایسی گری ہوئی حرکتوں اور اوچھے ہتھکنڈوں سے پست نہیں کئے جا سکتے۔دوسری جانب ایک ٹویٹ میں مسلم لیگ(ن)کی نائب صدر مریم نوا ز نے کہا ہے کہ حکمرانوں نے والدسے ملاقات کی اجازت نہیں دی۔ مریم نواز نے کہا کہ میاں والد کی طبیعت پوچھنے کیلئے ملاقات کی اجازت مانگی مگر انکار کر دیا گیا، کہنا صرف یہ تھا کہ یہ جو ہم پہ آج گزر رہی ہے، کل آپ پر بھی گزرے گی، یاد دہانی ضروری ہے کیونکہ مکافات عمل اٹل ہے۔

نوازشریف/صحت

مزید :

صفحہ اول -