پردیسیوں کی واپسی صوبائی دارالحکومت میں ویرانی کے ڈیرے،ٹریفک بھی معمول سے کم

پردیسیوں کی واپسی صوبائی دارالحکومت میں ویرانی کے ڈیرے،ٹریفک بھی معمول سے کم

  

لاہور (سٹی رپورٹر) عید الفطرکے مو قع پر صوبائی دارالحکومت میں پر دیسیوں کی اپنے علاقوں میں واپسی کے سبب شہر کی سڑکوں پر ٹریفک کا دباؤ کم اور شہر کی مختلف بازاروں بھی ویرانی کے ڈیرے ہیں دوسری جانب شہر میں ریلوے اسٹیشن، بسوں، ویگنوں اور فلائنگ کوچوں کے اڈوں پر مسافروں کا رش بھی اب تک کم نہیں ہوا۔تفصیلات کے مطابق اپنوں میں عید منانے کیلئے پر دیسیوں نے ابھی سے اپنے اپنے علاقوں کا رخ کر نا شروع کر دیاہے جبکہ اس بار عید پر چھٹیوں کی تعداد بھی زیادہ ہے جس کے سبب لوگوں نے اپنے اپنے شہروں کا رخ کر لیا ہے اور شہر بھر میں ٹریفک کا دباؤ کم، مارکیٹیں ویران اورشہر میں متعدد دکانیں بند ہیں۔اس کی ایک وجہ ملازمین کا اپنے اپنے گھروں کی جانب واپس لوٹ جانا ہے اورشہر میں کاروباری اور تمام قسم کی سر گرمیاں عید پر لمبی چھٹیوں کے سبب ایک ہفتے تک متاثر رہیں جبکہ دوسری جانب شہر کے مختلف اڈوں جن میں ریلوے سٹیشن، لاری اڈا، بند روڈ، ٹھوکر نیاز بیگ ٹریمنل سمیت شہر کے دیگر سفری مقامات پر شہریوں کا شدید رش لگا ہوا ہے جبکہ بیشتر مقامات پر مسافروں اور کنڈیکٹروں میں کرایہ زیادہ لینے اور سیٹ نہ ملنے پر جھگڑے بھی عام ہیں۔ اکثر مسافروں کو بسوں کی چھت پر بیٹھ کر یا گرمی کے اس موسم میں شہر کے بیشتر اڈوں پر نہ تو پنکھوں اور بیٹھے کا کوئی انتظام ہے اور نہ ہی پینے کیلئے ٹھنڈے پانی کے کولر مہیا کیے گئے ہیں جس سے مسافروں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ عید پر ایک ہفتے کی چھٹیوں کے سبب لوگوں نے ابھی سے اپنے اپنے گھروں کا رخ کر لیا ہے جبکہ پیڑولیم مصنوعات کی قیمت بڑھنے سے سفری کرایوں میں بھی اضافہ ہوا ہے جس سے شہریوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے۔ اس کے علاوہ شہر کے مختلف بس اڈوں پر سیٹیں بک ہونے کے سبب بلیک میں بھی ٹکٹ بیچے جا رہی ہیں۔جبکہ وزیر اعلی ٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے کرایوں میں اضافہ کا نو ٹس لیتے ہوئے زائد کرائے وصول کرنے والوں کے خلاف سخت کاروائی کے احکامات جاری کیے ہیں۔

پردیسی

اسلام آ با د (آ ئی این پی)عید اپنوں کے سنگ منانے کیلئے پردیسیوں کی واپسی کا سلسلہ جاری ہے، لاہور، کراچی، فیصل آباد سمیت بڑے شہروں میں لاری اڈوں پر رش ہے، کرایوں میں بھی من مانا اضافہ کر دیا گیا۔تفصیلات کے مطا بق کسی کو ٹکٹ کے حصول میں مشکل کا سامنا تو کوئی اوور چارجنگ کی پریشانی سے دوچار ہے، بچے بڑے بزرگ سب اپنے علاقوں میں واپسی کے لئے انتظار گاہوں میں میں ٹرانسپورٹرز کی منت سماجت پر مجبور ہیں،ٹکٹ کی پیشگی یقین دہانی کے باوجود بھی مسافروں کو انتظار کرنا پڑ رہا ہے۔ حکومت پنجاب کی ٹیمیں بس ٹرمینلز پر متحرک تو ہیں مگر ٹرانسپورٹرز بھی اپنا کام دکھا رہے ہیں۔ وفاقی دارالحکومت اور جڑواں شہر راولپنڈی میں روزگار کے مقیم افراد کی اکثریت ہفتہ اور اتوار کو اپنے اپنے علاقوں کو روانہ ہو چکی ہے، کیونکہ وفاقی دارالحکومت میں ہفتہ اتوار کے ساتھ پیر کی رخصت لے کر سرکاری ملازمین لمبی چھٹی پر چلے گئے ہیں۔ پیرودھائی، کراچی کمپنی اور فیض آباد کے بڑے بس اڈوں پر گاڑیاں موجود ہیں تاہم مسافروں کی تعداد انتہائی کم ہے۔

پردیسی/روانگی

مزید :

علاقائی -