چاند رات ‘ بیوٹی پارلرز ‘ ہیئر ڈریسرز شاپس پر رش ‘ چوڑی بازار توجہ کا مرکز

  چاند رات ‘ بیوٹی پارلرز ‘ ہیئر ڈریسرز شاپس پر رش ‘ چوڑی بازار توجہ کا مرکز

  

ملتان (نیوز رپورٹر) عید الفطر کی چاند رات کو شہر بھر مارکیٹوں اور تجارتی مراکز میں واقع چوڑیوں، جیولری کی خریداری بیوٹی پارلرز پر خواتین کا اڑدھام اپنے عروج پر ہے جہاں خواتین اور بچیوں کا چوڑیوں اور جیولری کی خریداری میں جوش و خروش پایا جارہا ہے وہیں بیوٹی پارلرز پر بھی خواتین کا اثدھام دیکھا(بقیہ نمبر3صفحہ12پر )

 جارہا ہے جو مردوں کی جیبوں پر سب سے گراں گزر رہا ہے اور عید سیزن کی آڑ میں گرانفروش مافیا نے بھی خود ساختہ نرخ وصول کرنے میں کوئی کسر نہیں اٹھا رکھی شہریوں کی جانب سے عید کی مناسبت سے دیگر اشیائ کی خریداری کے ساتھ ریڈی میڈ گارمنٹس کی دکانوں پر بھی بدستور بچوں کے کپڑوں کی خریداری جاری ہے اسی طرح آرٹیفیشل جیولری، مہندی اور دیدہ زیب رنگوں سے مزین چوڑیوں اور شوز سینڈلز کی خریداری کے لئے مخصوص مارکیٹ میں اس حد تک رش بڑھ چکا ہے کہ تل دھرنے کی گنجائش نہیں رہی عید الفطر کی مناسبت سے ہمارے خطے کی خواتین اور بچیوں کی نئے کپڑوں کے ساتھ مہندی اور جیولری کی خریداری کے ساتھ اب بیوٹی پارلرز کا رواج بھی اب لازم و ملزوم قرار پاگیا ہے تاہم اس وقت شہر کی دو مارکیٹوں کینٹ اور حسین آگاہی کے چوڑی بازاروں، جیولری شاپس، شوز شاپس، ریڈی میڈ گارمنٹس اور بیوٹی پارلرز میں سب سے زیادہ رش دیکھنے کو مل رہا ہے اپوزیشن کے مہنگائی بارے واویلے کے باوجود شہریوں کی خریداری میں جوش و ولولہ و دلچسپی نے اپوزیشن کے مہنگائی مخالف نعرے کے غبارے سے ہوا نکال دی ہے کیونکہ شہر بھر کی مارکیٹوں میں عید کی خریداری زوروں شوروں سے جاری ہے۔

چاند رات

مزید :

ملتان صفحہ آخر -