سر میں مستقل درداور متلی برین ٹیومرکی علامات ہیں،ڈاکٹر عرفان یوسف

سر میں مستقل درداور متلی برین ٹیومرکی علامات ہیں،ڈاکٹر عرفان یوسف

  

لاہور(پ ر)سرمیں مستقل درد،تھکاوٹ کے مستقل احساس، الٹی یا متلی کی کیفیت، مرگی جیسے دورے،بولنے اور دیکھنے میں مشکلات کی صورت میں ڈاکٹر کے مشورے کے مطابق سی ٹی سکین یا ایم آر آئی سکین ضرور کروالینا چاہیے کیونکہ یہ علامات برین ٹیومر کی بھی ہوسکتی ہیں، ان خیالات کا اظہار ڈاکٹر عرفان یوسف، کنسلٹنٹ نیورو سرجن، شوکت خانم میموریل کینسر ہسپتال ا ور ریسرچ سنٹر نے ورلڈ برین ٹیومر ڈے پر میڈیا سے بات کرتے ہوئے کیا۔ڈاکٹر عرفان یوسف نے بتایا کہ برین ٹیومر یعنی دماغ کا کینسر ہونے کی کوئی مخصوص وجہ نہیں ہوتی لیکن کچھ ایسی وجوہات ہیں جن کی وجہ سے برین ٹیومر ہوسکتا ہے جیسا کہ ریڈی ایشن والی جگہ یا ماحول میں رہنے والے یا کام کرنے والے افراد یا ایسے افراد جن کے خاندان میں موروثی طور پر یہ بیماری پائی جاتی ہو ان کے متاثر ہونے کے امکانات زیادہ ہوتے ہیں۔ڈاکٹر عرفان نے مزید بتایا کہ ٹیومر ایک ایسا مرض ہے جس میں جسم کے کسی بھی حصے کے خلیے از خود بڑھنے لگتے ہیں اور جسم کے نظام کا ان پر سے کنٹرول ختم ہو جاتا ہے۔ برین ٹیومر بھی اسی طرح کی ایک بیماری ہے جس کے انسانی جسم پرمرض کی نوعیت کے اعتبار سے مختلف اقسام کے منفی اثرات مرتب ہو سکتے ہیں۔ ان کی کئی اقسام ہیں جیسا کہ بعض برین ٹیومر سست روی سے بڑھتے ہیں جبکہ کچھ انتہائی تیز رفتاری سے بڑھتے ہیں لیکن چاہے کسی بھی قسم کا ٹیومر ہو اسکی بروقت اور مناسب ٹریٹمنٹ انتہائی ضروری ہے۔ s glioma سب سے زیادہ پایا جانے والا دماغ کاٹیو مر ہے یہ ایک سے چار گریڈ تک کا ہو سکتا ہے اس کی نوعیت اور گریڈ معلوم کرنے کیلئے بائی آپسی کی جاتی ہے اور دیکھا جاتا ہے کہ یہ ٹیومر دماغ سے نکلا ہے یا جسم کے کسی اور حصے سے نکل کر دماغ تک پہنچا ہے اوریہ بے ضرر یعنی بینائن (benign)ہے جسے نکال دیا جائے تو relapsیعنی دوبارہ ہونے کے امکانا ت بہت کم ہوتے ہیں یا نقصان پہنچانے والا یعنی میلگننٹ (malignant) ہے جو کہ اگر کم گریڈ والا ہوتو متوقع زندگی زیادہ جبکہ بڑے گریڈکا ہونے کی صورت میں متوقع زندگی کم ہوسکتی ہے۔دماغ کا سٹرکچر چونکہ بہت نازک ہوتا ہے اس لیے برین ٹیومر کا آپریشن بھی انتہائی پیچیدہ ہوتا ہے جو کہ صرف قابل اور تجربہ کار ڈاکٹرز ہی کر سکتے ہیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -