بھارت میں مسلمانوں کیساتھ عیسائی، سکھ اور تمام اقلیتں ظلم کا شکار ہیں: چوہدری سرور

بھارت میں مسلمانوں کیساتھ عیسائی، سکھ اور تمام اقلیتں ظلم کا شکار ہیں: ...

  

لاہور(لیڈی رپورٹر) بھارت کے موجودہ وزیراعظم نریندرا مودی کی پہچان مسلمان دشمنی اور انتہا پسندی ہے۔ہندوتوا کی علمبردار بھارت کی موجودہ قیادت کو اگر فاشسٹ قرار دیا جائے تو ہرگز مبالغہ نہ ہو گا۔ بھارت کے حالیہ اقدامات نے علاقائی امن کو سنگین خطرات سے دوچار کر دیا ہے۔ اگر عالمی برادری نے مودی سرکار کی فسطائیت پر مبنی ان پالیسیوں پر مزید آنکھیں بند کئے رکھیں تو یہ پورا خطہ جنگ کی آ گ میں جلنے لگے گا۔ پاکستان کی مسلّح افواج اپنی مادر وطن کے چپے چپے کا دفاع کرنے کی خاطر ہمہ وقت مستعد اور 1965ء کی پاک بھارت جنگ کی تاریخ دہرانے کیلئے بے قرار ہیں۔ ان خیالات کا اظہار مقررین نے نظریہئ پاکستان ٹرسٹ کے زیر اہتمام ”مودی کا جنگی جنون اور خطے کا امن“کے عنوان سے منعقدہ آن لائن فکری نشست کے دوران کیا۔ گورنر پنجاب چودھری محمد سرور نے اپنے خطاب میں کہا کہ آج ہم بہت ہی مشکل ترین وقت سے گزر رہے ہیں،پوری دنیا کورونا کی لپیٹ میں ہے لیکن اس کورونا نے نریندر مودی کے مائنڈ اور آر ایس ایس کے فلسفے کو تبدیل نہیں کیا۔ انڈین حکومت دنیا کی واحد حکومت ہے کہ ان حالات میں بھی ظلم و بربریت سے باز نہیں آ رہی۔مقبوضہ کشمیر میں مسلمانوں کے خلاف ظلم وستم کا بازار گرم ہے۔ لاک ڈاؤن سے دنیا تباہی کی طرف جا رہی ہے تو آج ہمیں احساس کرنا چاہے کہ کشمیری بھائی اور بہنیں کئی مہینوں سے لاک ڈاؤن میں ہیں ان پر کتنا ظلم ہو رہا ہے۔ انڈیا میں اقلیتوں پر جو ظلم ہو رہا ہے ان کی بھی تاریخ میں مثال نہیں ملتی۔ انڈیا میں نہ صرف مسلمان بلکہ عیسائی،سکھ اور دوسری اقلیتوں کو بھی برابری کے حقوق نہیں مل رہے ہیں۔ مجھے اس بات پر بڑا فخر ہے کہ اللہ کے فضل و کرم سے پاکستان میں اقلیتوں کو برابری کے حقوق حاصل ہیں۔بین المذاہب ہم آہنگی پر جتنا کام پاکستان میں ہوا ہے دنیا میں کسی ملک میں نہیں ہوا ہے اور اب امریکہ جیسا ملک بھی یہ کہنے پر مجبور ہے کہ پاکستان میں اقلیتیں محفوظ اور انڈیا میں غیر محفوظ ہیں۔ اب انٹرنیشنل کمیونٹی کو اپنی آنکھیں کھولنی چاہئیں اور آر ایس ایس کے فلسفے کے تحت انڈیا میں اقلیتوں پر جو ظلم ہو رہا ہے اس کے خلاف پوری دنیا کو اب کھڑا ہونا چاہئے۔ انڈیا کا چہرہ یا نریندر مودی کا چہرہ پوری دنیا میں بے نقاب ہو چکا ہے۔سابق صدر مملکت و چیئرمین نظریہئ پاکستان ٹرسٹ محمد رفیق تارڑ نے کہا کہ نریندرمودی کے ہاتھ بھارتی ریاست گجرات کے دو ہزار سے زائد بے قصور مسلمانوں کے خون سے رنگے ہوئے ہیں۔نریندرمودی کے دور وزارت عظمیٰ میں مسلمانوں سمیت بھارت میں بسنے والی تمام اقلیتوں کی زندگی اجیرن ہو گئی ہے‘ بلکہ نچلی ذات کے ہندو جنہیں دلت یا اچھوت کہا جاتا ہے‘ وہ بھی انتہا پسند ہندوؤں کے مظالم سے محفوظ نہیں رہے۔ وہ خود کو جنوب مشرقی ایشیاء کی غالب طاقت سمجھنے کی غلط فہمی میں مبتلا ہو چکا ہے۔ اس کی یہ غلط فہمی ہمارے عظیم دوست چین نے گزشتہ دنوں کسی حد تک لدّاخ کے محاذ پر دُور کر دی ہے مگر اس سے وہ سبق سیکھنے پر تیار نہیں ہے۔ اس موقع پر سابق چیف جسٹس وفاقی شرعی عدالت میاں محبوب احمد،سینئر مسلم لیگی رہنما سینیٹر راجہ ظفر الحق، میاں فاروق الطاف، سینیٹر ولید اقبال،سابق سیکرٹری خارجہ شمشاد احمد خان،قیوم نظامی اور دیگر نے بھی خطاب کیا۔

چوہدری سرور

لاہور(نمائند خصوصی)گور نر پنجاب چوہدری سرور نے کشمیر ی نوجوانوں کے ماورائے عدالت قتل عام پر500سے زائد برطانوی ارا کین پار لیمنٹ کو خط لکھ دیا۔بر طانوی حکومت اور اراکین پار لیمنٹ سے کشمیر یوں کو بھارتی مظالم سے نجات دلانے کیلئے اپنا کردارادا کر نے کا مطالبہ کرتے ہوئے گور نر پنجاب نے کہا کشمیر میں 305دن سے جاری کر فیو بھی انسانی حقوق کا قتل ہے۔دنیا کو سمجھ لینا چاہیے مسئلہ کشمیر حل کئے بغیر اور نر یندر مودی کی موجودگی میں خطے میں امن کا خواب پورا نہیں ہوگا۔وزیر اعظم عمران خان کی قیادت میں پاکستان ہمیشہ امن کی بات کر تاہے اور خطے میں امن کیلئے افواج پاکستان سمیت ہمارے سکیورٹی اداروں اور عوام نے سب سے زیادہ قر بانیاں دی ہیں۔جمعرات کے روز گور نر پنجاب چوہدری سرور نے بر طانوی اراکین پار لیمنٹ کو لکھے جانیوالے اپنے خط میں کہا ہے بھارت کشمیر یوں کی تحر یک آزادی کو دبانے کیلئے بر بر یت کی انتہا کر رہا ہے اور بدقسمتی سے اقوام متحدہ سمیت دیگر عالمی ادارے اس پر خاموش ہیں۔ بھارتی افواج کشمیر میں بے گناہوں کو ماورائے عدالت قتل کررہی ہے اور صرف ایک دن کے دوران کشمیر میں 13سے زائد کشمیر ی نوجوان ماورائے عدالت قتل ہو ئے ہیں جو ظلم کی بدتر ین مثال ہے۔ بر طانوی پار لیمنٹ نے ہمیشہ انسانی حقوق اور کشمیر یوں کیلئے آواز بلند کی ہے اور اب بھی میں بر طانوی اراکین پار لیمنٹ سے مطالبہ کر تاہوں کہ وہ کشمیر یوں پر بڑھتے ہوئے بھارتی مظالم کیخلاف آواز بلند کر یں اور بھارت پر دباؤ ڈالاجائے کہ وہ مسئلہ کشمیر کو اقوام متحدہ کی قرارداوں کے مطابق حل کر ے تاکہ خطے میں امن کا قیام ممکن ہوسکے۔ گورنر پنجاب نے کہا بدقسمتی سے نر یندر مو دی خطے میں امن کا سب سے بڑا دشمن بن چکا ہے اور وہ دہشت گرد آرایس ایس کے غنڈوں کے ذریعے بھارت میں مسلمانوں سمیت دیگر اقلیتوں کو نشانہ بنا رہا ہے، کشمیر میں بھی آرایس ایس کے غنڈوں کو آباد کیا جارہا ہے تاکہ کشمیر یوں کو اقلیت میں تبدیل کیا جاسکے۔ بھارت کے یہ تمام منصوبے بنیادی انسانی حقوق کے بھی خلاف ہیں اسلئے وقت آچکا ہے کہ بر طانوی حکومت اور اکین پارلیمنٹ نر یندر مودی کے ان منصوبوں کا نوٹس لیں او ر کشمیریوں کو بھارت کے ان مظالم سے فوری طور پر نجات دلائی جائے۔ خطے میں امن کیلئے ضروری ہے کہ نریندر مودی اپنا جنگی جنون اور کشمیر میں کر فیوسمیت دیگر مظالم ختم کر کے کشمیر یوں کو آزادی کا حق دے اور بھارت میں بسنے والے مسلمانوں سمیت تمام اقلیتوں کے جان ومال اور بنیادی حقوق کا تحفظ بھی یقینی بنایا جائے۔ امن اور انسانی حقوق کیلئے کھڑے ہونیوالوں کو تاریخ ہمیشہ دیا رکھے گی۔

چوہدری سرور

مزید :

صفحہ آخر -