خطاطی مسلمانوں کا تہذیبی اور ثقافتی ورثہ ہے،عکاشہ ساحل

خطاطی مسلمانوں کا تہذیبی اور ثقافتی ورثہ ہے،عکاشہ ساحل

  

لاہور (پ ر) عکاشہ کیلیگرافی فاؤنڈیشن اور قاسم علی شاہ فاؤنڈیشن کے درمیان خطاطی کے تحفظ، فروغ اور نوجوان نسل کو فن خطاطی سے آراستہ کرنے کیلئے مشترکہ کوششوں پر اتفاق رائے اور اپنے تمام وسائل خطاطی کی فروغ کے لئے وقف کرنے کا عزم۔ وزیر اعظم سے خطاطی کی سرپرستی اور خطاطی کونصاب تعلیم میں شامل کرنے کامطالبہ۔ خطاطی مسلمانوں کا تہذیبی و ثقافتی ورثہ ہے۔ اس لئے اس فن کا تحفظ اور احیا وقت کی اہم ضرورت ہے۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان کے انگلش اور عربی کے معروف خطاط عکاشہ کیلیگرافی فاؤنڈیشن کے چیئر مین عکاشہ ساحل اور ممتاز ماہر تعلیم، دانشور، ٹرینر اور زندگی بدل دینے والی کئی کتابوں کے مصنف قاسم علی شاہ نے کہا کہ خطاطی مسلمانوں کا تہذیبی اورثقافتی ورثہ ہے آج ہمارے حکمرانوں اور اہل علم کی عدم دلچسپی کی وجہ سے یہ فن دم تو ڑ رہا ہے۔

 ضروری ہے کہ ہمارے حکمران اہل علم اور این جی اوز خطاطی کے تحفظ اور فروغ کے لئے کام کریں۔

 انہوں نے کہا کہ خطاطی ایک فن ہی نہیں بلکہ اس کے ساتھ مسلمانوں کا شاندار اور قابل فخر ماضی جڑا ہوا ہے۔ باشعور قومیں اپنے ماضی کو ہمیشہ زندہ رکھتی ہیں۔ قاسم علی شاہ اور عکاشہ ساحل نے حکومت سے یہ مطالبہ بھی کیا کہ خطاطی کی سرپرستی کی جائے اورخطاطی کو نصاب تعلیم کا حصہ بنایا جائے تاکہ ہمارے بچے خطاطی سیکھ سکیں اور دم توڑتا ہوا یہ فن زندہ ہوجائے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -