حکومت فیسیں وصول کرنیوالے سکولز کیخلاف کارروائی کرے،غزل شاہ

حکومت فیسیں وصول کرنیوالے سکولز کیخلاف کارروائی کرے،غزل شاہ

  

لاہور(فلم رپورٹر)معروف اداکارہ و گلوکارہ غزل شاہ نے اپنے ایک بیان میں کہاکہ پرائیویٹ سکولز لاک ڈاؤن کے باوجود فیسیں وصول کررہے ہیں اور نہ دینے والے والدین کو دھمکیاں دی جارہی ہیں کہ اگر فیسیں نہ دی گئیں تو بچو ں کے نام سکول سے خارج کردینگے۔غزل شاہ نے وزیر اعظم پاکستان عمرا ن خان سے اس کا نوٹس لینے کی اپیل کہاکہ کرونا وائرس کی وجہ سے ہو نے والے لاک ڈاؤن سے سکولز بند ہیں اور بچے گھروں میں محصور ہیں مگر پرائیویٹ سکولز مالکان نے ہٹ دھرمی اپنا رکھی ہے۔

اور ہر ماہ فیس وصولی کا نوٹس بھیج رہے ہیں اور جو والدین اس پر احتجاج کررہے ہیں انہیں دھمکیاں دی جارہی ہیں کہ اگر فیسیں جمع نہ کروائیں تو ان کے بچوں کے نام سکول سے خارج کر دئیے جائیں گے۔غزل شاہ کا کہنا تھا کہ عوام لاک ڈاؤن کی وجہ سے بیروزگار ہو چکی ہے تمام تر کاروبار بند ہیں اور بچے سکول بند ہونے کی وجہ سے گھروں میں پڑھ رہے ہیں والدین ان کے مستقبل کی وجہ سے پریشان ہیں اور کاروبار بند ہونے کا الگ نقصان ہورہاہے ایسے حالات میں وہ کیسے سکول کی فیسیں جمع کروائیں جبکہ سکول بند ہیں۔غزل شاہ نے وزیر اعظم سے مطالبہ کرتے ہوئے کہاکہ اعلیٰ سطح پر اس کے بارے میں ایک ٹیم تشکیل دی جائے جو ان پرائیویٹ سکولز کو چیک کریں اور انہیں فیسیں نہ لینے کا پابند بنائیں اور جو سکولز ہٹ دھرمی اور غنڈہ گردی اپنائے ہوئے ہیں انہیں قانون کی گرفت میں لایا جائے۔غزل شاہ نے مذید کہاکہ حکومت کو بیروزگاری میں پسی عوام کو ریلیف دینا چاہیئے تاکہ وہ ان پرائیویٹ سکولز مالکان کی غنڈہ گردی سے بچ سکیں۔

مزید :

کلچر -