کے ٹی ایچ ہسپتال میں شہریوں سے موبائل فونز چوری کرنے والا ملزم گرفتار

کے ٹی ایچ ہسپتال میں شہریوں سے موبائل فونز چوری کرنے والا ملزم گرفتار

  

پشاور(کرائم رپورٹر)کیپٹل سٹی پولیس پشاور نے کے ٹی ایچ ہسپتال میں زیر علاج مریضوں کے تیمارداروں سے موبائل فون چوری کرنے والے ملزم کو گرفتار کر لیا، گرفتار ملزم نے ابتدائی تفتیش کے دوران ہسپتال آنے والے افراد سے موبائل فونز چوری کرنے کے متعدد وارداتوں میں ملوث ہونے کا اعتراف کر لیا ہے جس کے قبضے سے 8 عدد مسروقہ موبائل فونز برآمد کرلیا گیا ہے، ملزم کے خلاف مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کر دی گئی ہے جس کے دوران ملزم سے مزید اہم اور سنسنی خیز انکشافات کی توقع کی جا رہی ہے تفصیلات کے مطابق مدعی نقیب اللہ ولد تاج اکبر سکنہ باڑہ نے تھانہ یونیورسٹی ٹاؤن پولیس کو رپورٹ درج کراتے ہوئے بتایا کہ وہ ہسپتال میں زیر علاج مریض کی عیادت اور تیمارداری کی غرض سے کے ٹی ایچ ہسپتال آیا تھا کہ ہسپتال میں کسی نا معلوم ملزمان نے اس سے قیمتی موبائل فون چوری کر لیا جس کی رپورٹ پر مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کر دی گئی ایس پی کینٹ تصور اقبال نے ہسپتال میں شہری سے موبائل فون چوری کرنے کے واقعہ کا سختی سے نوٹس لیتے ہوئے ڈی ایس پی ٹاؤن مختیار علی کی سربراہی میں ایس ایچ او تھانہ ٹاؤن محمد اسفاق خان پر مشتمل خصوصی ٹیم تشکیل دے کر ملوث ملزمان کو جلد از جلد ٹریس کرکے گرفتار کرنے کا ٹاسک حوالہ کیاڈی ایس پی مختیار علی کی سربراہی میں ایس ایچ او محمد اشفاق نے جدید سائنسی خطوط پر تفتیش جاری رکھتے ہوئے متعدد مشکوک افراد کا ڈیٹا اکٹھا کرنے کیساتھ ساتھ متعدد مشتبہ افراد کو بھی پولیس تحویل میں لے کر ان کے بیانات قلمبند کئے، اسی طرح ملوث ملزم کا سراغ لگانے کی خاطر ہسپتال میں لگے سی سی ٹی وی کیمروں کی فوٹیج بھی حاصل کی گئی جس کے دوران واردات میں ملوث اصل ملزم کا سراغ لگا کر گزشتہ روز کامیاب کاروائی کے دوران محمد جمیل ولد گل نبی سکنہ باصر باغ روڈ کو گرفتار کر لیا، گرفتار ملزم نے ابتدائی تفتیش کے دوران موبائل چوری کے متعدد وارداتوں میں ملوث ہونے کا اعتراف کر لیا ہے جن کے قبضے سے 8 عدد مسروقہ موبائل فونز بھی برآمد کر لئے گئے ملزم سے تفتیش جاری ہے

مزید :

پشاورصفحہ آخر -