درہ آدم خیل کوئلہ زون کو فوری طور پر کھولا جائے،یوتھ سٹوڈنٹس

درہ آدم خیل کوئلہ زون کو فوری طور پر کھولا جائے،یوتھ سٹوڈنٹس

  

پشاور(سٹی رپورٹر)درہ آدم خیل قوم آخوروال یوتھ اینڈسٹوڈنٹس یونین کے عہدیداروں واراکین نے وزیر اعظم عمران خان اور وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا سے مطالبہ کیا ہے کہ درہ آدم خیل کوئلہ زون کوفوری طورپرکھول دیا جائے اور من پسندلیزہولڈرز، ٹھیکیداروں اورمائنزکی پشت پناہی کاسلسلہ روک دیا جائے اور دس نکاتی معاہدہ پر عمل درآمد یقینی بنایا جائے کیونکہ کوئلہ زون کی بندش سے ہزاروں مزدور بے روزگار ہو چکے ہے وہی حکومت کو بھی کوئلہ ر ائلٹی کی مد میں کرورڑوں روپے کا نقصان ہو رہا ہے۔پشاور پریس کلب میں آخوروال یوتھ اینڈسٹوڈنٹس یونین کے عہدیداران ضیاء اللہ نے دیگر ساتھیوں کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ 23مارچ سے درہ آدم خیل کا کوئلہ زون بند پڑا ہے جسکی وجہ سے بیس ہزار سے زائد مزدور بے روزگار ہو چکے ہیں جبکہ ماہانہ کی بنیاد پر 18کمپنیزاوراقوام درہ کا30کروڑسے ز ائدکانقصان ہورہاہے انہوں نے کہا کہ اقوام درہ آدم خیل کا18کمپنیزاورکوہاٹ انتظامیہ کیساتھ 2017سے10نکاتی معاہدہ قائم ہے جبکہ 18میں سے ایک کمپنی دوستان کول کمپنی معاہدپر عمل درآمدنہیں کرپارہی ہے اور مزکورہ کمپنی نے اثررسوخ کااستعمال کرکے تمام کمپنیزوکئی اقوام کامستقبل داوپرلگادیا ہیں جس پر کوہاٹ انتظامیہ چشم پوشی اختیار کی ہوئی ہے جسکے باعث درہ آدم خیل کے اقوام نہ صرف مالی نقصان کا سامنا ہے بلکہ تعلیم اور صحت بھی متاثر ہونے کا خدشہ ہے اور قوم آخوروال میں بے روزگاری کی شرح بھی تیزی سے بڑھنے لگی تاہم حکومت کو بھی رائلٹی کی مد میں کروڑوں روپے نقصان ہو رہا ہے انہوں نے وزیر اعظم عمران خان اور وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا سے مطالبہ کیا ہے کہ کوئلہ زون کو جلد از جلد کھولا جائے اور من پسندلیزہولڈرز، ٹھیکیداروں اورمائنزکی پشت پناہی کاسلسلہ روک دیا جائے جبکہ دس نکاتی معادہ پر عمل درآمد یقینی بنایا جائے بصورت احتجاج کا دائرہ کار وسیع کیا جائے عہدیداران نے بعد ازاں پشاور پریس کلب کے باہر احتجاجی مظاہرہ کیا اور کوہاٹ انتظامیہ کے خلاف شدید نعہ بازی کی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -