موبائل فون تاجروں کی جانب سے چارجر اور بیٹری پر 4 سو فیصد ٹیکس مسترد

موبائل فون تاجروں کی جانب سے چارجر اور بیٹری پر 4 سو فیصد ٹیکس مسترد

  

پشاور(سٹی رپورٹر)موبائل فون کے کاروبارسے وابستہ تاجروں نے موبائل اسیسریز(موبائل فون چاجر-بیٹری-ہنڈفری -وغیرہ)پرلگنے والے چارسوفیصدٹیکس کویکسرمستردکر دیاانہوں نے حکومت سے فوری طورپرمذکورہ ٹیکس کوواپس لیتے ہوئے نئے بجٹ میں تاجروں کوریلیف دینے کامطالبہ کیاہے اسی سلسلے میں گزشتہ روزانجمن ٹائم سنٹراورتاجراتحادخیبرپختونخواکامشترکہ اجلاس ہواجس کی صدارت مجیب الرحمن سمیت صوبہ بھرسے آئے ہوئے تاجروں اوردیگرصدورنے شرکت کی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ حکومت نے کورونااورلاک ڈان سے متاثرہ تاجروں پراب ٹیکس کی صورت میں نیاعذاب مسلط کردیاہے اورموبائل اسیسریز کے سامان پرپورے چارسوفیصدٹیکس لاگوکردیاگیاہے جوکہ متاثرہ تاجروں کے زخموں پرنمک چھڑکنے کے مترادف ہے انکامزیدکہناتھاکہ حکومت تاجروں کے ریلیف دینے کی بجائے انہیں مزیدمالی طورپربدحال کرنے پرتلی ہوئی ہے جسکی وجہ سے ملک بھرکے تاجروں میں شدیدبے چینی اورغم وغصہ پایاجاتاہے انہوں نے کہاکہ حکومت فوری طورپرمذکورہ ٹیکس کے فیصلے پرنظرثانی کرے اورتاجروں کوریلیف دینے کیلئے مثبت اقدامات اٹھائے جائیں انہوں نے وزیراعظم عمران خان سے یہ بھی مطالبہ کرتے ہوئے کہاکہ وہ ملک بھرکے تمام پارلیمنٹرین اورسرکاری ملازمین کی ایک ماہ کی تنخواہ کوروناوائرس فنڈمیں ڈالیں اوریہ کہ ان پیسوں سے ہسپتالوں میں زیرعلاج کوروناکے مریضوں کااحسن طریقے سے علاج کیاجائے کیونکہ کوروناکے مریض ہسپتالوں میں بے یارومددگارپڑے ہوئے ہیں اورانہیں کوئی سہولیات میسر نہیں ہیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -