باجوڑ میں سابق گورنر انجینئر شوکت اللہ خان کی کوششیں بارآور

باجوڑ میں سابق گورنر انجینئر شوکت اللہ خان کی کوششیں بارآور

  

باجوڑ(نمائندہ پاکستان) باجوڑکے گاؤں بدان وڑ ماموند میں سابق گورنر خیبر پختونخواہ انجینئرشوکت اللہ خان کے نگرانی میں دو قبیلوں کا دیرینہ دشمنی ختم ہوگیااور آئندہ کیلئے بھائیوں کی طرح زندگی گزارنے کا اعلان کیا۔یاد رہے کہ مذکورہ دشمنی میں تین افراد قتل اور تین زخمی ہوچکے تھے۔تاہم جرگہ ممبران کے مسلسل کوششوں سے یہ مسئلہ ہمیشہ کیلئے ختم ہوگیا۔ جس میں اہم کردار جرگہ ممبران ملک سلطان زیب،ملک ایاز،ملک معشوق،ملک عبدالعزیز، ملک عزیز بدان،ملک بازمحمد بدان اور ملک حاجی محمد شعیب آف ڈمہ ڈولہ نے ادا کیا۔ میڈیا کو تفصیلات بتاتے ہوئے ملک حاجی محمد شعیب آف ڈمہ ڈولہ نے کہا کہ باچا محمد مرحوم کے بیٹے سلطان اور لعل باچا کے بیٹوں قاسم و خائستہ وغیرہ کے درمیان کافی عرصہ سے دشمنی چلی آرہی تھی۔جس میں پہلے بھی صلح ہوچکا تھا لیکن ایک شخص سلطان کشندہ تھا تاہم جرگہ ممبران کے درخواست پر مخالف فریق نے معاف کردیا۔ اس موقع پر سابق گورنر خیبر پختونخواہ شوکت اللہ خان نے کہا کہ جنگ جھگڑے اور دشمنیاں کسی بھی مسئلے کا حل نہیں ہے لہذا ہمیں چاہئے کہ تمام تنازعات کو باہمی مزاکرات اور جرگوں کے ذریعے حل کریں۔تقریب کے موقع پر مشران نے علاقہ سے تمام تنازعات اور دشمنیاں جرگوں اور بات چیت کے ذریعے ختم کرنے کا عہد کیا۔ تقریب کے شرکاء نے صلح کا خیر مقدم کیا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -