خیبرپختونخوا میں وینٹی لیٹرز کی کتنی کمی ہے؟صوبائی حکومت نے واضح اعلان کر دیا 

خیبرپختونخوا میں وینٹی لیٹرز کی کتنی کمی ہے؟صوبائی حکومت نے واضح اعلان کر ...
خیبرپختونخوا میں وینٹی لیٹرز کی کتنی کمی ہے؟صوبائی حکومت نے واضح اعلان کر دیا 

  

پشاور (ڈیلی پاکستان آن لائن)خیبرپختونخواحکومت کے مشیر  اجمل وزیر نے کہا ہے کہ جہاں ایس او پیز پر عمل نہیں ہو گا وہاں ایکشن ہو گا،سماجی دوری پر عمل نہ ہوا تو مزید نقصانات ہو سکتے ہیں،خیبرپختونخوا میں وینٹی لیٹرز کی کوئی کمی نہیں ہے،خیبرپختونخوا میں کورونا مریضوں کے لیے 5473 بیڈز مختص ہیں،صوبے میں کل 533 آئی سی یو بیڈز ہیں جبکہ کورونا مریضوں کیلئے مختص وینٹی لیٹرز کی تعداد 508 ہے۔

تفصیلات کے مطابق پشاور میں میڈیا بریفنگ میں اجمل وزیر نے کہا کہ ذخیرہ اندوزوں کے ساتھ کسی قسم کی نرمی نہیں برتی جائیگی، ذخیرہ اندوزی کا قلع قمع کرنے کے لئے آرڈنینس کا قیام بھی عمل میں لیا گیا ہے جس میں ذخیرہ اندوزی کرنے والوں کے خلاف سخت سزائیں مقرر کی گئی ہے۔اجمل وزیر کا کہنا تھا کہ پیٹرول کی مصنوعی قلت پیدا کرنے والوں کے خلاف سخت ایکشن لیا جارہا ہے،صوبہ بھر میں کئی پٹرول پمپس سیل کئے گئے ہیں مزید کارروائی بھی جاری ہے۔ انہوں نے کہا کہ تمام اضلاع میں انتظامیہ پیٹرول کی مصنوعی قلت پیدا کرنے والوں اور مقررہ ریٹ سے زیادہ پیٹرول فروخت کرنے والوں کے خلاف ایکشن میں ہے۔اجمل وزیر کا کہنا تھا کہ عمران خان کا ویژن ہے کہ کورونا سے لوگوں کو بچانا ہے، معیشیت کو رواں دواں رکھنے کے لیئے کاروبار کی اجازت دی گئی، ایس او پیز پر عمل درآمد کے حوالے سے اضلاع کی انتظامیہ کو احکامات جاری کئے گئے ہیں، جہاں ایس او پیز پر عمل نہیں ہو گا وہاں ایکشن ہو گا ،سماجی دوری پر عمل نہ ہوا کہ کورونا وبا سے مزید نقصانات پیدا ہو سکتے ہیں۔

مزید :

علاقائی -خیبرپختون خواہ -پشاور -کورونا وائرس -