الیکشن کمیشن کے حالیہ اقدامات سے اس کی جانبداری ظاہر ہو گئی، فواد چودھری

الیکشن کمیشن کے حالیہ اقدامات سے اس کی جانبداری ظاہر ہو گئی، فواد چودھری

  

اسلام آباد (این این آئی) سابق وزیر اور پاکستان تحریک انصاف کے رہنما فواد چوہدری نے کہاہے کہ الیکشن کمیشن کے حالیہ اقدامات سے ان کی جانبداری صاف ظاہر ہوگئی، موجودہ الیکشن کمشنر کے ہوتے ہوئے ملک میں صاف و شفاف انتخابات کا انعقاد خواب ہے۔ اپنے بیان میں سابق وزیر نے کہاکہ الیکشن کمیشن آئینی، انتظامی اور عوامی تینوں معیار پر متنازعہ ہو گیا،الیکشن کمیشن جانبدار اور نااہل ترین ادارہ ثابت ہو چکا ہے۔ سابق وزیر نے کہاکہ اگر چیف الیکشن کمشنر کو تھوڑی سی بھی عزت کا پاس ہوتا وہ استعفیٰ دے چکے ہوتے۔ فواد چوہدری نے کہاکہ وطن عزیز میں جب تک کرسی نیچے سے کھینچ نہ لی جائے صاحبان چمٹے رہنا کامیابی سمجھتے ہیں۔ فواد چوہدری نے کہا ہے کہ ایف آئی اے نے عدالت سے درخواست کی ہے شہبازاور حمزہ شہباز کو گرفتار کرنے کی اجازت دی جائے۔ اپنے بیان میں فواد چوہدری نے کہاکہ سپریم کورٹ کے بروقت نوٹس کی وجہ سے یہ ممکن ہوا، عوام عدالتوں سے امید کرتے ہیں کہ عدالتیں انصاف کریں اور قانون نافذ کریں، اربوں روپے کی منی لانڈرنگ کے مجرم پاکستان پر بطورحکمران مسلط ہیں۔  دریں اثناء سابق وزیر اطلاعات و نشریات فوا د چوہدری نے صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے قومی احتساب بیورو (نیب) اور الیکشن ترمیمی بل بغیر منظوری کے واپس بھجوائے جانے پر کہاہے کہ صدر مملکت نے ریاست کے سربراہ ہونے کا حق ادا کیا ہے۔ اپنے بیان میں فواد چوہدری نے کہاکہ موجودہ نظام میں جہاں بلے کو دودہ کی رکھوالی سونپ دی گئی ہے وہاں صدر مملکت کی ذات سے لوگوں کو امیدیں ہیں،جہاں تک ممکن ہو وہ اس بلے کو بھگائیں گے اور صدر یہی کر رہے ہیں۔

فواد چوہدری

مزید :

صفحہ اول -