ممتاز قانون دان سید غفران اللہ شاہ پر بہیمانہ تشدد اور ایف آئی کرنے پر وکلاء سراپا احتجاج

  ممتاز قانون دان سید غفران اللہ شاہ پر بہیمانہ تشدد اور ایف آئی کرنے پر ...

  

       بٹ خیلہ(بیورو رپورٹ)اے اے سی پشاور افتاب عالم خان کے جانب سے صدرکاسپریم کورٹ اف پاکستان کے ممبرممتازقانون دان سیدغفران اللہ شاہ پربہمانہ تشدداوران کے خلاف ایف آئی اردرج کرنے پرمالاکنڈکے وکلاء سراپااحتجاج بن گئے اورعدالتوں سے بائیکاٹ کرکے مطالبہ کیاکہ صوبائی حکومت فوری طورپر اے اے سی پشاورافتاب عالم خان کوفوری طورپرملازمت سے بر طرف کرکے قرارواقعی سزادی جائے ورنہ ہم کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے۔تفصیلات کے مطابق گزشتہ روزپشاورمیں اے اے سی پشاورصدرافتاب عالم خان نے سپریم کورٹ بارکونسل کے ممبرممتازقانون دان سیدغفران اللہ شاہ ایڈوکیٹ پربہمانہ تشددکرکے ان پرکارسرکارمیں مداخلت کرنے کامقدمہ دائرکیاجس کے خلاف کے پی کے بارکونسل کے اپیل پرصوبے کے دوسرے حصوں کے طرح ضلع مالاکنڈبٹ خیلہ کے وکلاء برادری بھی سراپااحتجاج بن گئے اورعدالتوں سے مکمل بائیکاٹ کیا۔اس موقع پرسابق صدرمجیداللہ خان ایڈوکیٹ ینگ لائرفورم کے راہنماکے پی کے بارکونسل کے ممبرمحمدشیرین خان ایڈوکیٹ کے فرزندناصرخان ایڈوکیٹ نے میڈیاسے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ اے اے سی پشاورافتاب عالم خان نے اپنے اختیارات کاناجائزاستعمال کرکے سپریم کورٹ بارکے معززممبرغفران اللہ شاہ ایڈوکیٹ کے ساتھ جورویہ کیاوہ قابل مذمت ہے ہم صوبائی حکومت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ فوری طورپراے اے سی پشاورصدرافتاب عالم کوفوری طورپرملازمت سے برطرف کرکے وکلاء برادری کواحتجاج کرنے پرمجبورنہ کیاجائے انہوں نے دھمکی دی ہے کہ اگرحکومت نے ان کے خلاف کاروائی نہ کی گئی توہم کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -